پاکستانتازہ ترین

پشاور:اسکولزمیں پھردہشتگردی کاخطرہ،کینٹ کےتمام اسکولزبند

پشاور (مانیٹرنگ سیل) پشاور صدر میں دہشت گردی کے خطرے نے اسکول بچوں اور والدین کی دوڑیں لگوادیں، سیکیورٹی خدشات کے باعث کینٹ کے تمام اسکولز بند کردیئے گئے، جب کہ ان کی سیکیورٹی بھی بڑھا دی گئی ہے۔ پشاور میں ایک بار پھر دہشت گردی کے خطرے کی گھنٹی بجا دی گئی، ہفتے کو تخریب کاری کی اطلاعات ملنے پر کینٹ کے تمام اسکولز فوری طور پر بند کردیئے گئے ہیں۔ اسکولز میں بے وقت چھٹی ملنے پر بچے خوفزدہ اور حیران تو والدین بھی پریشان ہوگئے۔ دہشت گردی کے خطرات کی اطلاعات ملنے پر سیکیورٹی فورسز اور قانون نافذ کرنے والے ادارے بھی حرکت میں آگئے، اسکولوں کی سیکیورٹی بھی بڑھا دی گئی ہے اور گشت میں بھی اضافہ کر دیا گیا ہے۔ شہر میں افواہوں نے جلتی پر تیل کا کام دیا تو دیگر تمام اسکول بھی بند کر دیئے گئے، جس کا نوٹس ناظم اعلیٰ نے لیتے ہوئے تحقیقات کا حکم دیدیا۔ واضح رہے کہ ہفتہ کے روز صبح نو بجے پشاور میں افواہ پھیلی کہ شہر کے اسکولوں میں دہشت گرد گھس آئے ہیں، جس کی وجہ سے شہر بھر میں خوف و ہراس پھیل گیا، والدین پریشانی کے عالم میں اسکولوں کو پہنچے اور اسکول انتظامیہ نے وقت سے پہلے اسکولوں میں چھٹی کرادی، جس پر ضلع ناظم پشاور محمد عاصم خان نے خوف و ہراس پھیلانے اور بچوں کی ایک دن ضائع ہونے پر سخت تشویش اور برہمی ا ور ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے ای ڈی ا و ایجوکیشن سے افواہ پھیلانے اور وقت سے پہلے اسکول کے طلبہ کو چھٹی دینے والوں اور ذمہ داروں کے خلاف کارروائی کا فیصلہ کرتے ہوئے ای ڈی او ایجوکیشن سے 24 گھنٹوں میں رپورٹ طلب کرلی۔ حکام کی جانب سے والدین سے اپیل کی گئی ہے کہ وہ پیر کے دن معمول کے مطابق ا پنے بچوں کو اسکول بھیجیں۔یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ پشاور کے آرمی پبلک اسکول پر دہشت گردوں کے حملے کی یاد اور خوف خیبرپختونخوا سمیت ملک کے ہر شہری کے ذہنوں پر نقش ہے، جب کہ  آرمی پبلک اسکول پر حملے سے قبل اور بعد میں بھی ملک بھر میں اسکولوں کو نشانہ بنایا جاتا رہا ہے۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker