تازہ ترینعلاقائی

ٹیکسلا:سکول کے راستے پر کھڑا ہونے سے منع کرنے پرقتل کی لرزہ خیزواردات

ٹیکسلا(ڈاکٹر سید صابر علی /نامہ نگار)ٹیکسلا کے نواحی علاقہ حطار گاؤں میں قتل کی لرزہ خیزواردات ،سکول کے راستے پر کھڑا ہونے سے منع کرنے پر نوجوان نے طیش میں آکر دسویں کلاس کی طالبہ کو سکول جاتے ہوئے فائرنگ کر کے ہلاک کر دیا، پولیس تھانہ حطار نے چھ گھنٹوں میں ملزم کو آلہ قتل سمیت گرفتار کر کے قتل کا مقدمہ درج کرلیا ،،تفصیلات کے مطابق (ع) دختر امجدجو کہ گورنمنٹ گرلز سیکنڈری سکول میں کلاس دہم کی طالبہ تھی منگل کے روز گھر سے سکول جارہی تھی کہ راستے میں عدنان ولد اسلم نے اسے روکا اور لڑکیوں سے الگ کر کے فائرنگ شروع کردی جس سے طالبہ موقع پر دم توڑ گئی ، ایس ایچ او تھانہ حطار عزیر خان نے مطابق مقتول طالبہ کے والد نے چند روز قبل عدنان کو سکول کے راستے میں کھڑے ہونے سے منع کیا تھا ، پولیس نے والد امجد کی مدعیت میں ملزم عدنان کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کرلیا،گولیوں کا نشانہ بنے والی معصوم طالبہ کی عمر 14 سال تھی،بتایا جاتا ہے کہ سکول جاتے وقت مقتولہ (ع) کے ساتھ گاؤں کی اور بھی بچیاں تھیں مگر ملزم نے اسے پہلے الگ کیااور ہاتھ پکڑ کر سائٹ پر لے گیا جبکہ بعد ازاں گولیوں سے اسکا جسم چھلنی کردیا ، مذکورہ واقعہ کے بعد علاقہ میں خوف ہراس پھیل گیا اور بچیوں نے چیخ و پکار شروع کردی مگر سنگدل ملزم کو رتی بھر رحم نہ آیا،ملزم کے خلاف تھانہ حطار میں زیر دفعہ 302 کے تحت مقدمہ درج کرلیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں  شوال کا چاند دیکھنے کیلئے مرکزی رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس 4 جون کو ہوگا

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker