کھیل

ویسٹ فیلڈ نے کنیریا کو اسپاٹ فکسنگ کی وجہ قرار دیدیا ویسٹ فیلڈ نے کنیریا کو اسپاٹ فکسنگ کی وجہ قرار دیدیا

لندن : ایسکس کاؤنٹی کے سابق کرکٹر مرون ویسٹ فیلڈ نے دانش کنیریا کو اسپاٹ فکسنگ کی وجہ قرار دے دیا۔برطانوی عدالت نے اسپاٹ فکسنگ کیس میں ویسٹ فیلڈ کو چار ماہ قید کی سزا سنادی۔مارون ویسٹ فیلڈ نے لندن کی عدالت میں اعتراف کیاکہ اسپاٹ فکسنگ میں دانش کنیریا نے ان کی رہنمائی کی۔دانش کنیریا کے دوست ارون بھاٹیا کی وجہ سے ڈیل ہوئی تھی۔ عدالت کوبتایا گیا کہ دوہزار آٹھ میں آئی سی سی نے دانش کنیریا کو بھاٹیا کے حوالے سے تنبیہ کی تھی۔ دوہزاردس میں پولیس نیویسٹ فیلڈ کیساتھ کنیریا کوبھی حراست میں لیا تھا لیکن انہیں کوئی چارج لگائے بغیرچھوڑدیا گیا تھا۔ ویسٹ فیلڈ نے اعتراف کیاکہ ڈرہم کے خلاف میچ میں بارہ رنز کے عوض انہیں چھ ہزار پاؤنڈزدئیے گئے تھے۔ انہوں نے کہا کہ کرکٹ جیسے کھیل کی ساکھ خراب کرنے پر وہ شرمندہ ہیں۔ وکیل استغاثہ نے کہا کہ دانش کنیریا کے خلاف ان کے پاس ٹھوس شواہد نہیں ہیں جبکہ وکیل صفائی نے کہاکہ ویسٹ فیلڈاورپاکستانی کرکٹرزکے اسپاٹ فکسنگ کیس میں فرق ہے۔ جج اینتھونی مورس نے سماعت کے بعد کہا کہ مرون ویسٹ فیلڈ تم نے اسپاٹ فکسنگ کی ہے اس لئے جیل تو جاناہوگا، جج نے ویسٹ فیلڈ کو چار ماہ قید کی سزا سنائی۔ جج کا کہنا تھا کہ اسپاٹ فکسنگ کھیل کو تباہ کررہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ برطانوی کرکٹر کو دو ماہ قید جیل میں کاٹنا ہوگی، جس کے بعد ضمانت ہوسکتی ہے۔ جج نے دانش کنیریا پر مرون ویسٹ فیلڈ کا موٴقف تسلیم کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ دانش کنیریا کا اسپاٹ فکسنگ معاملہ طے کرانے میں اہم کردار رہا۔ ویسٹ فیلڈ پر ستمبر دوہزار نومیں ڈرہم کے خلاف ون ڈے میچ میں جان بوجھ کر خراب بالنگ کا الزام تھا۔ ویسٹ فیلڈ نے گزشتہ ماہ اولڈ بیلی میں ہونے والی سماعت کے دوران اسپاٹ فکسنگ کا اعتراف کیا تھا۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker