تازہ ترینعلاقائی

ڈسکہ:وکلاء کواعتماد میں لیئےبغیرعدالتیں نئےجوڈیشل کمپلیکس میں منتقل کرنے پروکلاء کااحتجاج

daska pic 18-02-13ڈسکہ(نامہ نگار)وکلاء کو اعتماد میں لیئے بغیر عدالتیں نئے جوڈیشل کمپلیکس میں منتقل کرنے پرڈسکہ بارکے وکلاء کا بھر پوراحتجاج ،نعرہ بازی ،غیر معینہ مدت کے لیئے ہڑتال کا اعلان ،پنجاب بار کونسل ،سمبڑیال بار ،پسرور بار اور سیالکوٹ بار کا ڈسکہ بار کے وکلاء سے اظہار یکجہتی تفصیلات کے مطابق ڈسکہ میں نئے تعمیر ہو نے والے جوڈیشنل کمپلیکس میں عدالتیں منتقل کر نے کے لیئے عدالتی اہلکاروں نے ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج سیالکوٹ کے حکم پرسامان منتقل کر نا شروع کر دیا جس پرڈسکہ بار کے وکلاء نے شدید احتجاج کر تے ہو ئے عدالتوں کا بائیکاٹ کیا وکلاء نے احتجاجا سیالکوٹ گوجرانوالہ روڈ کئی گھنٹے بند رکھی جس پر ٹریفک کا نظام بری طرح متاثر ہوا جس کے بعد وکلاء نے نئے جوڈیشل کمپلیکس کا گھیراؤ کیا اس موقع پر کسی بھی ناخوشگوار واقعہ سے نمٹنے کے لیئے پولیس کی بھری نفری بھی موجود تھی اس موقع پر وکلاء سے ممبران پنجاب بار کونسل امجد باجوہ ایڈووکیٹ،ثاقب اکرم گوندل ایڈووکیٹ،سعید بھٹہ ایڈووکیٹ ،عامر منیر باگڑی ایڈووکیٹ،صدر بار سیالکوٹ ملک مشتاق ایڈووکیٹ،صدر بار سمبڑیال رانا قیصر اختر ایڈووکیٹ،جنرل سیکرٹری سمبڑیال بارشہزاد نجمی ایڈووکیٹ،سابق صدور بار ڈسکہ محمد انور مغل ایڈووکیٹ،نسیم الحسن میتلا ایڈووکیٹ،نذیر احمد ڈھلوں ایڈووکیٹ،لطیف غنی میؤ ایڈووکیٹ،جمیل چوہدری ایڈووکیٹ،چوہدری فقیر سائیں ایڈووکیٹ،جنرل سیکرٹری بار ڈسکہ میاں ناصرایڈووکیٹ،محمد عمران بٹ ایڈووکیٹ،پی ایل ایف کے رہنما ناصر بٹ نے خطاب کر تے ہو ئے ججز صاحبان کے اس رویے کی بھر پور مذمت کی انہوں نے کہا کہ وکلاء کے چیمبر ابھی تک نامکمل ہیں جن میں بنیادی سہولیات بجلی ،واش روم وغیرہ نہیں ہیں اس طرح وکلاء اور سائلین کو شدید دشواری کا سامنا کر نا پڑے گا انہوں نے مطالبہ کیا کہ جب تک وکلاء کے چیمبرز مکمل نہیں ہو تے جب تک عدالتیں پرانی جگہ پر ہی منتقل کی جائیں انہوں نے کہا کہ پرانی جگہ پر عدالتوں کی منتقلی تک ہڑتال کی جائے گی اور وکلاء عدالتوں میں پیش نہ ہو ں گے اس ضمن میں ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈسیشن جج ڈسکہ ظفر اقبال تارڑ نے کہا کہ کورٹ روم بوسیدہ ہو چکے ہیں محکمہ بلڈنگ انہیں خطرناک قرار دے چکی ہے بوجہ بارش کئی کورٹ رومز کی چھتیں ٹپک رہی ہیں یہاں پر عدالتی فرائض سرانجام دیناممکن نہ رہا ہے لہذا جج صاحبان ،عدالتی عملہ ،فاضل ممبران بار اور سائلین کی سیفٹی کے پیش نظر اور عوامی مفاد کی وجہ سے عدالتیں نئے جو ڈیشل کمپلیکس میں منتقل کی گئی ہیں وکلاء اور سائلین وہاں پر پیش ہوں۔

یہ بھی پڑھیں  اوکاڑہ : حکمرانوں کی پالیسیاں سرمایہ داروں کا مستقبل روشن اورغریبو ں کے مستقبل کو تاریک کر نے کے گرد گھومتی ہیں

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker