تازہ ترینعلاقائی

ڈسکہ :مزدوری مانگنےپربااثربیورو کریٹ نےمحنت کش کوجھوٹےمقدمہ میں پھنسوادیا

ڈسکہ (نامہ نگار)مزدوری مانگنے پر بااثربیورو کریٹ نے محنت کش کو جھوٹے مقدمہ میں پھنسوادیادوران تفتیش پولیس کے روایتی تشدد سے محنت کش ہلاک واقعات کے مطابق ڈسکہ کے نواحی موضع کنڈن سیان کا رہائشی 35سالہ سعادت علی محنت مزدوری کے سلسلہ میں اسلام آباد گیا ہوا تھا جہاں وہ واسا کے بااثر بیورو کریٹ مجاہد پرویز کھوکھرکی کوٹھی میں تقریبا ایک ماہ سے پائپ فٹنگ کا کام کر رہا تھا جس کی 18ہزار رو پے مزدوری مانگنے پر بااثر بیورو کریٹ نے تھانہ سبز منڈی اسلام آباد کے اے ایس آئی گل خان سے ساز باز کر کے غریب محنت کش کے خلاف اغوا کا مقدمہ درج کر وادیا اورپولیس اسے گرفتار کر کے تفتیش کے لئے اے ایس پی آفس، آئی 9اے ایس پی ڈاکٹر خلیل کے پاس لے گئے گذشتہ رات دوران تفتیش پولیس کے بیہیمانہ تشدد سے محنت کش سعادت علی دم توڑ گیا جس کی اطلاع ملتے ہی ورثاء اسلام آباد پہنچ گئے اور پولیس کے خلاف سخت احتجاج کرتے ہو ئے وزیر اعلی پنجاب میاں شہباز شریف سے واسا کے ڈائریکٹر مجاہد پرویزکھوکھر ،اے ایس پی ڈاکٹر خلیل اور اے ایس آئی گل خان کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں  *پنجاب پولیس کی کارکردگی اندراج مقدمات اور تفتیش کے بدلتے انداز*

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker