تازہ ترینعلاقائی

ڈسکہ:5کروڑ کی خطیر رقم سے بچھائی جانے والی پائپ لائن سیوریج سسٹم فلاپ

ڈسکہ(نامہ نگار) پانچ کروڑ کی خطیر رقم سے بچھائی جانے والی پائپ لائن سیوریج سسٹم فلاپ ابلتے گٹروں سے نکلنے والے تعفن شدہ پانی نے گلیوں اور لوگوں کے گھروں کا رخ کر لیاجڑواں سرکاری سکول اور نجی کالج کے سامنے سڑک پر کھڑے پانی نے گندے جوہڑ کی شکل اختیار کر لی ہزاروں طالبات گندے پانی سے گذر کر سکول کالج جانے پر مجبور شکایات کے باوجود کوئی ازالہ نہ ہو سکاوزیر اعلی نوٹس لیں سینکڑوں خواتین و مرد کا مطالبہ تفصیلات کے مطابق حلقہ پی پی 130کے مشہور و معروف گاؤں موضع میترانوالی میں گذشتہ تقریباچار سال قبل پانچ کروڑ سے زائد فنڈز سے گلیوں میں پائپ لائن ڈال کر سیوریج سسٹم کا منصوبہ شروع کیا گیا جو گلیوں کو اکھاڑنے اور گہری کھدائی کر نے کے بعد بند کردیا گیا جس کی بنیادی وجہ بااثر ٹھیکیدار ،بیوروکریٹس اور مقامی نمائندوں کے درمیان کمیشن کا معاملہ طے نہ پاسکنے پر فنڈز کا ریلیز نہ ہو نا تھا گذشتہ سال زیر تکمیل منصوبہ کا ادھورا کام از سر نو شروع کیا گیا جس میں بااثر ٹھیکیدار نے کر پشن کی انتہا کر تے ہو ئے انتہائی ناقص اور غیرمعیاری میٹیریل استعمال کر کے بغیر کسی لیول کے کم چوڑائی والے پائپ بغیر جوڑ لگائے ڈال کر اور مین ہولز کو بغیر پلستر ہی اوپر ریت بجری ڈاک کر بند کر دیا گیا جس کی بنا پر سیوریج کے کم چوڑائی والے پائپوں سے خارج ہو نے والے پانی نے تالاب میں جانے کی بجائے ہولز کے ڈھکنوں سے باہر نکل کر گلیوں اورلوگوں کے گھروں کا رخ کرنا شروع کر دیاگھروں مسجدوں اور سکول کالج کے سامنے کھڑے گندے پانی کے جوہڑ سے راہگیروں، نمازیوں اور طالبات کا گذرنا محال ہو گیا میڈیا کی ٹیم نے جب اس گاؤں کا معائنہ کیا تو میڈیا کے نمائندوں کو دیکھ کر اہل دیہہ پھٹ پڑے اورسینکڑوں خواتین ،بچے اور بوڑھے گھروں سے نکل آئے اور سخت احتجاج کر تے ہوئے ٹھیکیدار اور سیاسی نمائندوں کو برا بھلا کہتے ہو ئے بددعائیں دینے لگے موقع پر موجود سابق کونسلرز مقصود احمد چیمہ ،چوہدری فیض احمد چیمہ ،چوہدری عارف چیمہ ،چوہدری غلام نبی چیمہ محمد اصغر ،چوہدری ریاست علی اور سماجی کارکن راشد ،امانت اور جان محمدچیمہ نے بتایا کہ ہمارے گھروں کے سامنے کھڑے گندے پانی سے اٹھنے والے تعفننے ہمارا ناک میں دم کر رکھا ہے ہمیں سانس لینا دشوار ہو گیا ہے ہمارے گھروں کا پانی پینے کے قابل نہیں رہا ہمیں پینے کے لئے صاف پانی ایک کلومیٹر دور نوکھربرانچ سے لانا پڑ تا ہے جبکہ بااثر ٹھیکیدار کے خلاف متعدد بار محکمہ پبلک ہیلتھ کے افسران بالا شکایت کی لیکن شکایت کے ازالہ کے بجائے الٹا دھمکیاں مل رہی ہیں اہل دیہہ کے سینکڑوں رہائشیوں نے سخت احتجاج کر تے ہو ئے خادم اعلی پنجاب سے جلد ازجلد نوٹس لینے اور کمیشن مافیا کے خلاف کاروائی کا مطالبہ کیا ہے

یہ بھی پڑھیں  تھرپارکر میں قحط سالی کے باعث سینکڑوں بچوں کی ہلاکت حکمرانوں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker