تازہ ترینعلاقائی

سرگودھا:ڈی سی او کی شیعہ کش پالیسیوں کیخلاف کادھرنا دینے کااعلان

سرگودہا ﴿ تحصیل رپورٹر﴾ ضلع سرگودہا کے شیعان حیدر کرار نے انتظامیہ کے ناروائ سلوک اور ڈی سی او کی شیعہ کش پالیسیوں کے خلاف 22جون بروز جمعتہ المبارک احتجاجی مظاہرے اور دھرنا دینے کا اعلان کردیا ۔امام بارگاہ بلاک نمبر7میں ضلعی قومی امور کمیٹی کے سرپرست سید غلام رضا شاہ ‘میجر ﴿ ریٹائرڈ ﴾ سید محمد سبطین بخاری ‘جنرل سیکرٹری راجہ امجد حسین ‘سید ظفر عباس بخاری ‘سید مرتضیٰ شاہ ‘علی عباس باجوہ ایڈووکیٹ اور دیگر نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ڈی سی او سرگودہا یکم محرم سے شیعہ دشمن پالیسیوں پر گامزن ہیں جن کی آشیر باد سے امام بارگاہ فاروق کالونی کی تالہ بندی کرکے اسے سیل کردیا گیا جبکہ ہماری بار بار التجائ کے باوجود انتظامیہ اپنی اس غیر قانونی اقدام سے باز نہیں آئی انہوں نے کہا کہ ڈی پی او سرگودہا ڈاکٹر رضوان ‘ڈی سی او سرگودہا عظمت محمود ایک مذہبی فرقے کی آشیر باد حاصل کرنے کیلئے شیعہ حیدر کرار پر مظالم ڈھا رہے ہیں جس کے باعث شیعہ قوم میں شدید اضطراب پایا جاتا ہے انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت مکمل طور پر کالعدم تنظیموں کی سرپرستی کرتے ہوئے ملت جعفریہ کے حقوق پر ڈاکہ ڈال رہی ہے جس کی تلقین کرتے ہوئے ضلعی انتظامیہ سرگودہا بھی ہمارے خلاف پے در پے وار کررہی ہے انہوں نے کہا کہ یکم محرم سے امام بارگاہ اور مسجد فاروق کالونی کو سیل کردیا گیا جس کا کوئی جواز نہ تھا جبکہ عدالتی فیصلے کے باوجود بھی انتظامیہ اس پر عملدرآمد نہیں کررہی انہوں نے کہا کہ سیکورٹی رسک کا بہانہ بنا کر امام بارگاہ اور مسجد کو سیل کیا گیا جو کسی بھی مذہبی مسلک کی مکمل دل آزاری ہے انہوں نے کہا کہ انتظامیہ جان بوجھ کر ضلع سرگودہا کا امن تباہ کرنے کے درپے ہے جبکہ سرگودہا ایک امن پسند شہریوں کا شہر ہے یہاں کے باسی جو ہرمسالک سے تعلق رکھتے ہیں مگر امن و بھائی چارے کی زندگی گذار رہے ہیں ۔ا نتظامیہ گذشتہ کئی ماہ سے اس فضائ کو خراب کرنے کیلئے مختلف ہتھکنڈے استعمال کررہی ہے ہمارے بار بار احتجاج کے باوجود پنجاب حکومت اور بالخصوص وزیر اعلیٰ پنجاب اس کا نوٹس لینے کی بجائے خاموش بیٹھے تماشہ دیکھ رہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ اگر صورتحال یہی رہی تو یکم جولائی مینار پاکستان میں قرآن و سنت کانفرنس کے موقع پر ملک گیر احتجاج کا اعلان کیا جائے گا جس کی تمام تر ذمہ داری انتظامیہ اور حکومت پر عائد ہوگی ۔انہوں نے کہا کہ یہ ملک قائم کرنے میں اہل تشیع حضرات کا خون بھی شامل ہے مگر کچھ سالوں سے ہماری ان قربانیوں اور امن پسندی کو ہماری کمزوری سمجھ کر اہل تشیع حضرات کا ٹارگٹ کلنگ کے ذریعے قتل عام کیا جارہاہے اور ہماری مذہبی رسومات کو روکنے کیلئے مختلف ہتھکنڈے استعمال کیے جارہے ہیں جوکہ قابل برداشت نہ ہیں لہذا ہم آئی جی پنجاب وزیر اعلیٰ پنجاب سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ ضلعی انتظامیہ کی اس جانبداری کا نوٹس لیتے ہوئے ڈی پی او سرگودہا ڈاکٹر محمد رضوان اور ڈی سی او سرگودہا عظمت محمود کو فی الفور یہاں سے تبدیل کریں اور ہمارے مقدس امام بارگاہ اور مسجد کو ڈی سیل کرکے ہمیں مذہبی آزادی کا حق دیا جائے۔

یہ بھی پڑھیں  ایل او سی پر بلا اشتعال فائرنگ، پاک فوج کے نائب صوبیدار اور سپاہی شہید

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker