تازہ ترینعلاقائی

سیالکوٹ:ماحولیاتی آلو دگی کے پرقابوپانےکیلیےاعوام میں شعو ربیدارکرناہوگا

سیالکوٹ ﴿ بیورو رپورٹ﴾ڈسٹر کٹ کو ارڈینیشن آفیسر سیا لکوٹ زاہد سلیم گو ندل نے کہا ہے کہ ماحولیاتی آلو دگی کے مسئلہ پر قا بو پا نے کے لیے شہر یوں میں شعو ر بیدار کر نے کی اشد ضر وری ہے جس کے بغیر مطلوبہ نتائج حا صل کر نا ممکن نہیں ۔معاشر ے میں بڑ ھتی ہو ئی فضا ئی آلو دگی سے دنیا میں اس تیزی مو سمی تبدیلیاں رونماہو رہی ہے جس سے 2050ئ تک پا نی کی قلت کا مسئلہ اس قدر شدت اختیا ر کر جا ئے گا کہ لو گو ں کو پیٹر ول کی طرح پینے کا صاف پا نی بھی خر یدنا پڑ ئے گا اور پا نی سے نہا نے کا تصور بھی نہیں رہے گا ۔انہو ں نے ان خیا لات کا اظہا ر آج یہا ں ایوان صنعت و تجارت سیالکوٹ کے آڈیٹوریم میں محکمہ تحفظ ما حو لیات اور چیمبر آف کا مر س اینڈ انڈسٹر ی کے اشتر اک سے عالمی یو م تحفظ ما حو لیات کے سلسلہ میں منعقدہ سیمینار سے خطا ب کر تے ہوئے کیا ۔صدر ایوان صنعت تجارت سیا لکوٹ نعیم انور قر یشی ، نائب صدر ظفرجعفری، چیئرمین ٹینری زون سیالکوٹ شیخ نوید، پراجیکٹ ڈائریکٹر واٹر کلینر محمد عاطف اورشیخ اعجاز سونی کے علاوہ ایوان صنعت وتجارت کے اراکین اور عمائدین شہر نے سیمینار میںبڑی تعداد میںشرکت کی۔ ڈسٹر کٹ کو ارڈینیشن آفیسر سیا لکوٹ زاہد سلیم گو ندل نے کہاکہ انہوںنے متعلقہ کے حکام کو ہدایت کی ہے کہ دھواں چھوڑنے والی گاڑیوں پر عائد پابندی پر سختی عملدرآمد کروایاجائے اور ایسی گاڑیوں کو فٹنس سرئٹفیکیٹ جاری نہ کئے جائیں۔ انہوں نے کہاکہ ماحول کو صاف ستھرا رکھنے میں درختوں کی اہمیت سے انکار نہیں کیا جاسکتا اسلئے اشد ضرورت کے بغیر درختوں کی کٹائی سے اجتناب کرنا چاہیئے اور اگر کہیں درخت کاٹنا ناگزیر ہوتو اس کے بدلے میں وہاں شجر کاری کو یقینی بنایا جائے ۔ انہوں نے اس امر پر تشویش کا اظہار کیاکہ بڑھتی ہوئی فضائی آلودگی سے اوزون کی تہہ میں سوراخ بڑھتا جارہا ہے جس سے سورج کی الٹراوائلٹ شعاعیں انسانی زندگی پر منفی اثرات مرتب کررہی ہیں جس سے موذی بیماریوں اضافہ ہورہا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ وزیر اعلیٰ محمد شہباز شریف کی خصوصی ہدایت سے صوبہ پنجاب میں کچن گارڈننگ کے فروغ کیلئے عوام میں شعور اجاگر کیاجارہا ہے تاکہ لوگ اپنے گھروں میں سبزیاں اُگا کر اپنی کچن کی ضروریات میں خود کفیل ہوں اوراس سے ان گھروں کی فضا پر بھی خوشگوار اثرات مرتب ہو سکیں۔ انہوں نے بتایاکہ شہریوں کو بہترین تفریحی سہولیات باہم پہنچانے کیلئے ہیڈ مرالہ کے مقام پر دونوں نہروں کے درمیان خوبصورت پارک کی تعمیر کی منظوری کیلئے ایک منصوبہ تیار کرکے وزیر اعلیٰ کو بھجوا دیاگیا ہے اور توقع ہے کہ اس پارک کی تعمیر کیلئے فنڈز آئندہ بجٹ میں مختص کردیئے جائیں گے۔ سیمینار میں ایک شہری نے شکایت پیش کی کہ سیالکوٹ کے نواحی موضع ملکے کلاں میں ٹینریوں کے آلودہ پانی کی وجہ سے علاقہ کے لوگ اور جانور جان لیوا امراض کا شکار ہورہے ہیں اور اب تک کئی افراد کینسر میںمبتلا ہوکر جان سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں۔جس پر ڈی سی او نے کہاکہ وہ 5جون بروز منگل کو اس گاؤں کا دورہ کرینگے اور علاقے کے عوام کو درپیش مسائل کا جائزہ لے کر انہیں حل کرنے کیلئے ہر ممکن اقدامات کئے جائیں گے۔ڈی سی او سیالکوٹ زاہد سلیم گوندل نے ای ڈی او کمیونٹی ڈویلپمنٹ کو ہدایت کی کہ عالمی یوم تحفظ موحولیات کے سلسلے میں انوار کلب آڈیٹوریم سیالکوٹ میں سیمینار کا انعقاد کریں جس کیلئے ضلعی حکومت انہیں مطلوبہ فنڈز مہیا کرے گی۔ انہوں نے بتایاکہ عالمی یوم تحفظ ماحولیات کے سلسلہ میں ضلعی حکومت کے زیر اہتمام 5جون کو ایک واک کا اہتمام کیا جائے گا جس میں صدر ایوان صنعت و تجارت واراکین، تاجر تنظیموں کے نمائندے ، وکلائ ، صحافی اور سرکاری افسران و ملازمین بھرپور شرکت کرینگے گے اور وہ خود واک کی قیادت کرینگے۔ صدر ایوان صنعت و تجارت سیالکوٹ نعیم انور قریشی نے سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ماحولیاتی آلودگی خاتمہ کیلئے ایوان صنعت وتجارت سیالکوٹ حکومت سے بھرپور تعاون کرے گی ۔ انہوں نے کہاکہ کہ ضلع سیالکوٹ کے صنعت کار اور ایکسپورٹر میں ماحولیاتی آلودگی اور گلوبل وارمنگ کے بارے میں آگاہی پیدا کی جائے گی اور انہوں ماحولیاتی آلودگی کا باعث بننے والے انڈسٹریل ویسٹ کو جدید طریقہ سے ٹھکانے لگانے کا پابند کیا جائے گا۔ چیئرمین ٹینری زون سیالکوٹ شیخ نوید نے کہاکہ ٹینری زون کے قیام کے منصوبے پر تیزی سے کام جاری ہے اور اس منصوبے کے تحت ضلع سیالکوٹ کی 276ٹینریز کو سیالکوٹ ٹینری زون میں شفٹ کردیا جائے گاجبکہ ٹینریر سے خارج ہونے والے کیمیکل زدہ پانی کو واٹر ٹریٹمنٹ /کروم ریکورپلانٹ کے ذریعے صاف کیا جائے گا۔سیمینار سے ڈی او ماحولیات سیالکوٹ جاوید اقبال، اعجاز سونی اور محمد عاطف نے بھی خطاب کیا۔

یہ بھی پڑھیں  سیالکوٹ: چیئرمین قائمہ کمیٹی برائے قانون و انصاف ورکن قومی اسمبلی کا الصبح سبزی و فروٹ منڈی سیالکوٹ کا دورہ

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker