تازہ ترینعلاقائی

ڈیرہ غازیخان: انوکھی پنچایت، انوکھی سزا اور انوکھا قانون

ڈیرہ غازیخان(محمد جیند سے) میں لڑکی کواغوا کرنےوالےملزم کی بجاے پنجایت نے ملزم کی سابقہ 50سالہ بیوی کوگنہگار قراردے کر10لاکھ روپے نقدی جرمانہ تین بیٹیاں ونی اورضلع بدر،نظرآنے کی صورت میں گولی مارنے کاحکم پولیس پنجاتوں کوگرفتار کرنے کی بجاے  خاتون پرمقدمہ درج مظلوم عورت انصاف کےیے دربدر کی ٹھوکرے کھانے پرمجبور ڈیرہ غازیخان کے علاقے جکھڑامام شاہ کے رہایشی ارشاداحمد نے اپنی بھتیجی صغرابی بی کو اغواء کرکے فروخت  کردیا جس پرعلاقہ میں پنچایت ہوی پنچایت میں تین سوافراد شریک ہوے پنچایت کے سرپنچ حافظ فاروق احمدچنگوانی اورحافظ فاروق علیانی نے فیصلہ کیاکہ ارشاد احمد کی سابقہ بیوی 50سالہ عایشہ مای  کی تین بیٹیاں ونی ،چھ کینال رقبہ اوردس لاکھ روپے نقد چھ ماہ میں ادا اداکرنے کاحکم دیا چھ ماہ کے عرصہ میں عایشہ مای دس لاکھ روپے کاانتظام نہ کرسکی جس کی رنجش پر پنچایت کے سرپنچوں سمیت دوسوافراد نے عایشہ مای کے چھ کنال رقبہ پرقبضہ کرکے گھرکوآگ لگادی اورتین بیٹیوں پانچ سالہ سعیدہ کنول ،چھ سالہ سدرہ کنول اورنوسالہ صایمہ کنول کو اسلحہ کے زور پرزبردستی اٹھاکرلے گیے اورعایشہ مای کودھمکی دی کہ ضلع ڈیرہ غازیخان میں نظرآی تو گولی ماردیں گے عایشہ مای نے پنچایت کے سرپنچوں کے خلاف بذریعہ عدالت تھانہ گدای میں مقدمہ درج کرایاملزم بااثر ہونے کی وجہ سے پولیس نے کسی بھی پنچایت کے سرپنچ کوتاحال گرفتارنہیں کیا پولیس نے آلٹا مظلوم خاتون پرمقدمہ درج کردیا دربدرکی ٹھوکریں کھانے والی مظلوم  عایشہ مای نے وزیراعلی پنجاب سے اپیل کی ہے کہ پنچایت کے ان سرپنچوں کےخلاف کاروای کرکے میری معصوم بیٹیاں بازیاب کرای جایں

یہ بھی پڑھیں  آل گورنمنٹ ٹیچرز ایسوسی ایشن ضلع سبی نے احتجاجی شیڈول کا اعلان کردیا

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker