تازہ ترینعلاقائی

ڈیرہ غازیخان:پنجاب کے15 اضلاع میں خواتین پرگھریلو تشدد کی شرح خوفناک حد تک زیادہ ہے

dgkhanڈیرہ غازیخان(جنید ملک سے)ڈیر ہ غازیخان سمیت پنجاب کے 15 اضلاع میں خواتین پر گھریلو تشدد کی شرح خوفناک حد تک زیادہ ہے خودکشی کے واقعات روکنے کیلئے سماجی رویوں میں تبدیلی کی ضرورت ہے اور اس مقصد کیلئے 10 دسمبر تک 16 روزہ آگاہی پروگرام کا انعقاد کیاجارہا ہے . مقررین نے اس خیالات کااظہار یوتھ فرنٹ پاکستان کے زیراہتمام گورنمنٹ یونیورسٹی آف ایجوکیشن ڈیرہ غازیخان میں خواتین کے حقوق کے استحصال کے موضوع پر منعقدہ آگاہی سیمینار میں کیا . رکن قومی اسمبلی مسز شہناز سلیم نے مہمان خصوصی کی حیثیت سے خطاب کرتے ہوئے کیا کہ خواتین کے حقوق کیلئے لفاظی تو بہت کی جاتی ہے مگر قول و فعل میں تضاد کی وجہ سے مطلوبہ مقاصد حاصل نہیں ہو پاتے . ایم پی اے نجمہ ارشد نے کہاکہ حکومت پنجاب نے خواتین کے تحفظ کیلئے قانون کی منظوری کے ساتھ ساتھ معاشرہ میں باعزت مقام دلانے کیلئے قابل ستائش اقدامات کیے ہیں جس کے مثبت نتائج سامنے آر ہے ہیں . پرنسپل پروفیسر محمد امین الدین نے کہاکہ تعلیم سے ہی فرسودہ رسوم و روایات کا خاتمہ کیاجاسکتا ہے . بچیوں کی کم عمری کی شادی ، قرآن سے شادی ، جبری ، وٹہ سٹہ اور کاروکاری جیسی رسومات کے خاتمہ کیلئے تعلیم کو عام کرنا ہو گا . یوتھ فرنٹ پاکستان کی نسرین کاظمی ، شان محمود سمیت ڈاکٹر مقبول گیلانی، شگفتہ کنول ، سلمی ، فضل دستی ، ارسلان اسلم ، نجمہ اور دیگر نے اپنے خطاب میں کہاکہ این جی اوز نے ہر پلیٹ فارم سے خواتین کے حقوق کے تحفظ کیلئے آواز بلند کی ہے تاہم خواتین کا استحصال روکنے کیلئے گھر کے سربراہ کے رویے میں تبدیلی کی ضرورت ہے . سیمینار میں تلاوت اور نعت کی سعادت بالترتیب مسرت شاہین اور ارم اسلم نے حاصل کی .

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button