علاقائی

ڈھرکی: رنکل کماری کے مسلمان ھونے پر ھندو برداری سراپا احتجاج

ڈہرکی (نامہ نگار) رنکل کماری کے مسلمان ھونے پر ھندو برداری سراپا احتجاج اور قومی شاھرا چار گھنٹے تک بند کر دی اور ٹا ٹر جلا کر احتجاج کیا ۔ رنکل کماری کے مسلمان ھونے پر مسلمانرں میں خوشی کی لھر دوڑ گی، مٹھائیاں تقسیم کی گئی۔رنیکل کا مسلمان نام فریال بی بی رکھا گیا ۔فریال بی بی نے سیشن جج کی عدالت میں بتایا کہ میں مسلما ن ھوگئی ھوں اور نوید شاہ سے شادی کرلی ھے۔دوسری طرف ھندو برادری نے الزام لگایا کے لڑکی کو زبردستی اغوا کیا گیا اور گن پوائنٹ پر مسلمان کیا گیا جس پر ھندو برادی نے سکھر ھائی کورٹ مین پٹیشن فائل کی۔مگرسکھر ھائی کورٹ نے معملا سنگین ھونے کی بنا پر کیس کراچی ھائی کورٹ منتقل کر دیا ۔12 مارچ کو کراچی ھائی کورٹ نے لڑکی کو دارلامان بھیج دیا اور لڑکی کو 26 مارچ کوسپریم کورٹ میں پیش کرنا کا حکم دیا گیا ھے ۔لڑکی کے شوھر نے الزام لگا یا کہ لڑکی کو ھراساں کیا جا رھا ھےاس لیے لڑکی کواس کے شوھر کے حوالے کیا جائے اور تحفظ فراھم کیا جائے ۔ضلع گھوٹکی کے مختلف شھروں میں احتجاج جاری ھے ۔ادھر پی پی کے ایم این اے میا ں عبد الحق عرف میاں مٹھو نے بتایا میرے خلا ف ایک پرو پگنڈہ کیا جا رھا ھے۔کیونکہ لڑکی کا ماموں راج کمار میرے سیاسی مخالف کا منشی ھے۔ انھوں نے مزید بتایا کا ھندو برادری لڑکی کو واپس کرانے کے لیے پانی کی طرح پیسے بہا رھے ھین۔ اس معاملے مین ڈھرکی میں APC بلوائی جس میں قرداد پاس کی گئی کہ لڑکی مسلما ن ھو گئی ھے اور اس کو نوید شاہ کے حوالے کیا جائے

یہ بھی پڑھیں  چونیاں:رمضان المبارک میں عمرہ کے نام پر فراڈ

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker