تازہ ترینعلاقائی

ڈنگہ:طالبات200 ،واش روم کی سہولت ناپید

dingaڈنگہ (محمد بلال احمد بٹ ) طالبات 200 ، واش روم کی سہولت ناپید ، نکاسی آب ناقص منصوبہ بندی کی وجہ سے ناممکن ، تعمیر کے وقت ہی لیول تقریباً 4 فٹ نیچا رکھا گیا ،ناقص تعمیر ، فرش میں جگہ جگہ دراڑیں ، محکمہ کی طرف سے پنکھوں اور پینے کے پانی کی سہولت کی عدم فراہمی ، شدید گرمی میں سکول کربلا کا منظر پیش کرنے لگا ۔ حلقہ پی پی 113 ہمارا خواب ۔۔۔۔۔پڑھا لکھا پنجاب ، آئیے دیکھئے ہم فروغ تعلیم کے لیے کیسے کوشاں ہیں ۔ شہنشاہِ تعمیرات ، سر سید ثانی ، ایم پی اے ڈنگہ کی رہائش گاہ سے چند سو گز دور گورنمنٹ پرائمری سکول محلہ نبی پورہ مسائل کا گڑھ بن گیا ۔ تقریباً 20 سال تک کرایہ کی عمارتوں میں چلنے والے گرلز پرائمری سکول محلہ نبی پورہ کی 2011 میں تقریباً 28 لاکھ روپے کی لاگت سے تعمیر ہونے والی عمارت 2 سال میں ہی ہڑپہ کا منظر پیش کرنے لگی ، تعمیر کے وقت ہی ناقص منصوبہ بندی اور پیسے بچانے کی وجہ سے لیول مین گلی سے تقریباً 4 فٹ نیچا رکھا گیا ۔ جس کی وجہ سے نکاسی آب تقریباً ناممکن ہو گئی اور سکول انتظامیہ کو ایک حوض بنوا کر نکاسی آب کا انتظام کرنا پڑا ۔واش روم موجود ہونے کے باوجود نکاسی آب کا انتظام نہ ہونے کی وجہ سے معصوم طالبات کو کھیتوں میں رفع حاجت کے لیے بھیجا جاتا ہے اور اساتذہ کو بھی شدید مشکلات کا سامنا ہے ۔ پہلے دن سے ہی سکول میں پینے کے پانی کی فراہمی کا مناسب انتظام نہیں اور سکول میں لگائی گئی موٹر عرصہ قبل چوری ہو چکی ہے ۔ 200 سے زائد طالبات اپنی مدد آپ کے تحت لگائے گئے نلکے سے پانی پینے پر مجبور ہیں ۔ محکمہ تعلیم کی طرف سے سکول انتظامیہ کو پنکھوں کی عدم فراہمی کی وجہ سے سکول انتظامیہ اپنی مدد آپ کے تحت خیراتی اداروں کی طرح پنکھے لگوانے پر مجبور ہو گئی ۔ 2 سال کی قلیل مدت میں 28 لاکھ روپے کی لاگت سے تعمیر ہونے والی بلڈنگ جگہ جگہ سے توڑ پھوڑ کا شکار ہو گئی ۔ کمروں کے فرش بیٹھ گئے ۔ دیواروں میں جگہ جگہ دراڑیں پڑ گئیں ۔ 3 کمروں میں 200 سے زائد طالبات کو شدید گرمی اور لوڈ شیڈنگ کے دوران بھیڑ بکریوں کی طرح گھسا کر درس و تدریس کی جا رہی ہے ۔ فرنیچر کی شدید قلت کی وجہ سے 70 فیصد سے زائد طالبات شدید گرمی میں تپتے فرش پر بیٹھ کر تعلیم حاصل کرنے پر مجبور ہیں ۔ سکول انتظامیہ کی طرف سے ذمہ دار حکام اور عوامی نمائندگان کی بار بار توجہ اور درخواستوں کے باوجود تا حال صورتحال جیسی کی تیسی ہے ۔ اور محکمہ تعلیم کے اربابِ اختیار اور عوامی نمائندوں کی پر اسرار خاموشی معنی خیز ہے ۔تعلیم اور صحت کے شعبوں میں خدمت کے بلندو بانگ دعوے کرنے والوں کو معصوم بچیوں کی حالت زار پر ترس نہ آیا ۔ ڈنگہ کے سماجی حلقوں اور والدین نے محکمہ تعلیم اور عوامی نمائندگان کی اس بے حسی اور غیر ذمہ دارانہ رویے پر شدید احتجاج کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ پنجاب سے فل فور نوٹس لینے کی استدعا کی ہے ۔

یہ بھی پڑھیں  ڈسکہ:محرم الحرام میں بہترین سیکورٹی انتظامات پرمولانا محمد ایوب خانSHOکو شیلڈ دے رہے ہیں

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker