شہ سرخیاں
بنیادی صفحہ / پاکستان / پشین:گزشتہ دنوں اغوا ہونیوالے مغوی ڈاکٹروں کی باذیابی کے لئےاظہارتشکرجلسہ

پشین:گزشتہ دنوں اغوا ہونیوالے مغوی ڈاکٹروں کی باذیابی کے لئےاظہارتشکرجلسہ

پشین﴿بیوروچیف /ملک سعداللہ جان ترین﴾پشین سے گزشتہ دنوں پہلے اغوائ ہونیوالے مغوی ڈاکٹروں کی باعزت باذیابی پر پیرا میڈیکل اسٹاف فیڈریشن اور قبائلی جرگے سمیت پشین کے مختلف سیاسی جماعتوں و سرکاری تنظیموں کا مشترکہ اظہار تشکر جلسہ ہوا جسکی صدارت سابق ایم پی اے حاجی سردار مصطفی خان ترین نے کی جلسے سے مقررین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پشین میں کوئی ایک شخص بھی محفوظ نہیں اپنی ماو’ں بہنوں اور بچیوں کی عزت و آبرو محفوظ رکھنے کیلئے جانوں کا نذرانہ پیش کرسکتے ہیں اغوائ ہونیوالے بی آر ایس پی اہلکاروں کی باذیابی تک چین سے نہیں بیٹیں گے کھوکھلے نعروں اور جھوٹے وعدوں سے نہیں عملی کاموں سے عوامی تحفظ برقرار رکھا جائیگا پشین کے پرامن ماحول کو خراب کرنے میں بیرونی قوتیں ملوث ہیں علاقے سے بندوق کلچر کا خاتمہ اولین شرط ہے اغوائ کاروں کے ہاتھوں ذخمی ہونیوالے لیویز محافظوں کی اعلیٰ سطح طبی معائنہ کرکے ان کی داد رسی کیلئے نقد انعامات اور فوری ترقی دی جائیںپشین میں آباد تمام قبائل عوام دشمن عناصر کیخلاف صف اول دستے کا کردار ادا کرتے ہوئے متحد ہوجائے تاکہ اولس کی تحفظ یقینی و ممکن ہوسکیں پشین کے امن کو ایک سازش کے تحت خراب کیا جارہا ہے علاقے میں اغوائ برائے تاوان کی وارداتیں عام ہوچکی ہیں پشین ایک پرامن علاقہ ہے جس کے امن وامان کی خرابی کا کسی کو اجازت نہیں دی جائیگی اغوائ کاروں کے ساتھ ڈٹ کر مقابلہ کرنے پر ڈپٹی کمشنر عبدالمنصور کاکڑ اے سی حبیب اللہ موسیٰ خیل اور ڈی پی او اسد ناصر داد کے مستحق ہے جہنوں نے جان پر کھیلتے ہوئے اغوائ کاروں کی گرفت سے لیڈی ڈاکٹر سمیت چار افراد کو باذیاب کرایا جلسے سے جمعیت علمائ اسلام کے مولوی داد گل پا کستان پیپلز پارٹی کے صوبائی رہنما سید طور آغا ترین قومی موومنٹ کے صوبائی صدر حیات اللہ ترین پشتونخوا میپ کے صوبائی رہنماوں عیسیٰ روشان لیاقت علی آغاعوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی رہنما اصغر علی ترین جمعیت علمائ اسلام نظریاتی کے امیر مولوی حبیب اللہ آغا پیرا میڈیکل اسٹاف فیڈریشن کے ضلعی صدر فضل الرحمان کاکڑ متحدہ ملازمین اتحاد کے چئیرمین گل محمد قبائلی رہنما حاجی شاہجہان کاکڑ اور دیگر سیاسی مذہبی سماجی رہنماوں نے بھی خطاب کیا انہوں نے کہا کہ پشین جیسے پرامن علاقے میں کوئی ایک شخص بھی محفوظ نہیں آئے روز ایک نہ ایک عوامی مسئلہ جنم لیتا ہے کبھی بجلی لوڈشیڈنگ کبھی پانی قلت اور اب بڑھتی ہوئی بدامنی لاقانونیت اور اغوائ برائے تاوان کی وارداتوں میں اضافے نے رہی سہی کسر پوری کردی انہوں نے کہا کہ مغوی ڈاکٹروں کی باحفاظت باذیابی کا سہرا میڈیا انتظامیہ اور سیاسی رہنماوں کے سر جاتا ہے جہنوں نے عوام دشمن عناصر کیخلاف کسی بھی پرواہ کئے بغیر مغویوں کو باذیاب کرایا جو قابل داد ہیں انہوں نے کہا پشین ہم سب کا مشترکہ گھر ہے جسکی حفاظت اولین ذمہ داری ہے پشین میں آباد تمام قبائل آپس میں اتحاد واتفاق پیدا کرتے ہوئے ظالموں کیخلاف اٹھ کھڑے ہوں انہوں نے کہا کہ ڈاکووں کے ساتھ فائرنگ مقابلے میں ذخمی ہونیوالے لیویز اہلکاروں کی فوری اعلیٰ سطح طبی امداد دیکر ترقی و انعامات سے نوازیں تاکہ لوگوں کا دیرینہ مطالبہ حل ہوسکیں علاقے میں بدامنی ،لاقانونیت پر قابو پانے کا سہرا ڈپٹی کمشنر پشین عبدالمنصور کاکڑ اورد دیگر انتظامی آفیسران کے سر جاتا ہے انہوں نے کہا کہ لیویز و پولیس عوامی تحفظ کو برقرار رکھنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑیں گی انہوں نے گورنر بلوچستان اور وزیر اعلیٰ سے مطالبہ کیا کہ وہ پشین سے اغوائ ہونیوالے بی آر ایس پی نامی این جی اوز کے چھ اہلکاروں کی باذیابی یقینی بناکر پشین کو امن کا گہوارہ بنائیں ۔۔

یہ بھی پڑھیں  دفاع پاکستان کونسل کا لانگ مارچ اسلام آباد پہنچ گیا