تازہ ترینعلاقائی

دوڑ: تعلقہ مونسپل دوڑمیں گذشتہ سالوں سے لاکھوں روپے کی مالی بدعنوانیوں کاانکشاف

دوڑ﴿نامہ نگار﴾ تفصیلات کے مطابق گذشتہ چند سالوں کے دوران ٹی ایم اے دوڑ میں مبینہ طور پر لاکھوں روپوں کی مالی بدعنوانیوں۔اور گھپلوںکا انکشاف ہوا ہے۔دوڑ کے ایک شہری ظفر اقبال کی جانب سے نیب اور دیگر اداروں کو ارسال کردہ درخواستوں میں الزام عائد کیا گیا ہے کہ ٹی ایم اے دوڑ میں بدعنوان افسران کی ملی بھگت سے ریکارڈ میں جعلی ترقیاتی کام اور خریداری دکھاکر لاکھوں روپے ہڑپ کئے گئے ہیں۔ ظفر اقبال نے بتایا کہ تحصیل مونسپل دوڑ میں گذشتہ چند سالوں کے دوران بڑے پیمانے پر کرپشن ہوئی ہے۔ھینڈ پمپوں کی تقسیم کے نام پر بجٹ مالی سال09۔ 2008 میں8556372 روپے کے اخراجات۔مالی سا ل10۔2009میں کوئی رقم خرچ نہیں کی گئی۔جبکہ مالی سال11۔2010 کے بجٹ میں پینتالیس لاکھ روپے کے اخراجات ظاہر کئے گئے اگر نلکوں کی تقسیم کی تحقیقات کی جائے تو لاکھوں روپے کی کرپشن کا انکشاب ہوگا انتظار گاہ کی تعمیر کے نام پربجٹ 09۔2008میں 122760روپے کے اخراجات ۔بجٹ10۔2009 میںکوئی خرچ نہیں اور بجٹ11۔2010میں دس لاکھ روپے کے اخراجات ظاہر کرکے بڑے پیمانے پر خرد برد کی گئی ۔بجٹ ما لی سال 11۔2010 میںپبلک لیٹرین کی تعمیر کے نام پر پچیس لاکھ روپے کے اخراجات ظاہر کرکے ایک بھی پبلک لیٹرین تعمیر نہیں کی گئی اور بھاری رقم ہڑپ کرلی گئی۔سائونڈ سسٹم کے نام پر بجٹ10۔2009 میں ڈیڑھ لاکھ روپے کے اخرجات ظاہر کئے گئے جبکہ ٹی ایم اے میںکوئی ایسا سسٹم نہیں ہے۔سیوریج کی تبدیلی کی مد میں بجٹ09۔2008 میں  5940500روپے ۔بجٹ10۔2009میں17856000روپے اورمالی سال 11۔2010کے بجٹ میں 24500000روپے ۔رواں سال31752000 روپے کے اخراجات ظاہر کرکے بڑے پیمانے پر رقم خرد بر کی گئی۔بجٹ 11۔2010میں پارک اور باغات کی تعمیر ومرمت کے نام پر دو لاکھ روپے کے اخراجات ظاہر کرکے رقم ہڑپ کی گئی کیونکہ دوڑ میں کوئی پارک وباغ ہی نہیںہے۔واٹر ورکس اور ڈسپوزل ورکس کے نام پر بجٹ10۔2009 میں994070روپے۔بجٹ11۔2010میںتیس لاکھ روپے اور بجٹ2012۔2011میںچالیس لاکھ روپے کے اخراجات ظاہر کرکے رقم کا ایک بڑا حصہ ہڑپ کرلیا گیا۔فائر بریگیڈ اسٹیشن کی تعمیر کے لئے زمین کی خریداری کی مد میں گذشتہ اور موجودہ مالی سال میں بیس۔بیس لاکھ روپے کے اخراجات۔جبکہ تعمیر کے لئے گذشتہ سال پچیس لاکھ اور اس سال دس لاکھ روپے کے اخراجات ظاہر کرکے اس میں خرد برد کی گئی۔جبکہ ٹی ایم اے کے پاس فائر بریگیڈ کی ایک گاڑی ہے۔زمین کی بھرائی کے نام پر گذشتہ سال تیس لاکھ روپے اور موجودہ مالی سال میںبیس لاکھ روپے کے اخراجات دکھاکر بڑے پیمانے پر خردبرد کی گئی۔۔معلوم ہوا ہے کہ مذکورہ شہری کی درخواست پر نیب نے تحقیقات شروع کردی ہے۔

یہ بھی پڑھیں  ٹیکسلا:ماہ رمضان میں مستحق افراد ہماری توجہ کے متقاضی ہوتے ہیں،اشتیاق احمد

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker