تازہ ترینعلاقائی

ٹیکسلا:پولیس کا منشیات فروشوں کے اڈے پر چھاپہ، دہشتگردی کیلئے استعمال ہونے والا آتشین اسلحہ اورڈیٹونیٹرز قبضہ میں لیکر ملزمان کے خلاف مقدمات درج

ٹیکسلا (نامہ نگار) پولیس کا منشیات فروشوں کے اڈے پر چھاپہ ، دہشتگردی کے لئے استعمال ہونے والا آتشین اسلحہ اور ڈیٹو نیٹرز قبضہ میں لیکر ملزمان کے خلاف مقدمات درج کر لئے گئے،تفصیلات کے مطابق بدنام زمانہ منشیات فروشوں کے خلاف پولیس کا کریک ڈاون جاری ،اقدام قتل ، دہشتگردی سمیت متعدد سنگین دفعات کے تحت مقدمات کا اندراج کرلیا گیا، گرفتار پانچ ملزمان کا دہشتگردی عدالت راولپنڈی سے مزید دو روزہ ریمانڈحاصل کرلیا گیا ، دوران تفتیش ملزمان کے انکشاف پر اڈے پر چھاپہ مار کر دہشتگردی میں استعمال ہونے والا دھماکہ خیز مواد بھی برآمد کرلیا گیا، قبل ازیں بھی گروہ کے سرغنہ کامران ولد زرشاد کے خلاف اغواء برائے تاوان ، قتل ، اقدام قتل ، زنا بالجبر ،پولیس پارٹی پر فائرنگ سمیت بیس سے زائد مقدمات تھانہ واہ کینٹ اور تھانہ ٹیکسلا میں درج ہیں،تفصیلات کے مطابق ملک آباد واہ کینٹ میں دو روز قبل بدنامہ زمانہ منشیات فروشوں نے رات کے وقت پولیس موبائل پر فائرنگ کی جس کے نتیجے میں ملک آباد مارکیٹ کا چوکیدار شیر جنگ ہلاک ہوگیا تھا ،پولیس نے ابتدائی طور پر ملزمان کامران اسکے بھائی طارق کے خلاف زیردفعات 302/353,186/134 کے تحت مقدمات درج کئے ،ڈی ایس پی ٹیکسلا سرکل سلیم خٹک نے بغیر کسی تاخیر کے امروز شام کے وقت مذکورہ منشیات کے اڈے پر پولیس کی بھاری نفری کے ہمراہ چھاپہ مارا جبکہ بارہ گھنٹوں کے اندر گروہ کے سرغنہ کامران ،واصف اقبال،پرویزعلی، شاہین بی بی دختر شمروز خان،محرم ولد مہربان کو گرفتار کیا جبکہ پولیس نے اڈے چھاپہ کے دوران ایک ہزار کپی شراب،تین عدد پسٹل،اور بھاری مقدار میں چرس اور ہیروئن برآمد کی،پولیس نے ملزمان کے خلاف زیر دفعہ 324/353/186/ ، 3/4حد منشیات ،پولیس نے گرفتار ملزمان کو دہشتگردی کورٹ میں پیش کیا جہاں عدالت نے ملزمان کا دو روزہ جسمانی ریمانڈ دیا، دوران تفتیش ملزمان نے مزید اہم انکشافات کئے جس پر پولیس نے اڈے پر ایک مرتبہ پھر چھاپہ مارا اور بتائے گئے مقام سے زیر زمین دبائے دھماکہ خیز مواد جس میں سو عدد ڈیٹو نیٹر،23 میٹر تار، بارودی مود،دھماکہ خیز اسٹکس برآمد کر لیں،جس پر ملزمان کے خلاف مزید دفعات جس میں ایکسپلوزو ایکٹ 4/5 کے تحت مقدمہ اور 186/149/148/353/324 اور دہشتگردی ایکٹ 7ATA کے تحت مقدمات کا ندارج کیا گیا،ملزمان کا دو روزہ ریمانڈ ختم ہونے پر اتوار کے روز مذکورہ ملزمان کو راولپنڈی کی دہشتگردی کورٹ میں پیش کیا گیا جہاں عدالت نے مزید دو روزہ ریمانڈ دے دیا،یاد رہے کہ گروہ کے سرغنہ کامران ولد زرشاد کے خلاف پہلے ہی متعدد سنگین واردتوں میں چالان ہوچکا ہے، ملزم کی نشاندہی پرپولیس نے زیر زمین دفنائے دھماکہ خیز مواد کو کھود کر برآمد کیا، برآمد ہونے والے دھماکہ خیز مواد پر شاہ انڈسٹری چنیوٹ درج تھا،پولیس نے قبضہ میں لیکر سر بمہر کردیا،ملزمان کے خلاف پولیس آرڈیننس 13(2) A کے تحت بھی مقدمہ درج کیا گیا،پولیس کے مطابق کیس میں مزید اہم سنسنی خیز انکشافات کی توقع ہے،ادہر اہل علاقہ نے پولیس کارکردگی پر اطمنان کا اظہار کرتے ہوئے پولیس کی احسن کارکردی کو سراہا ،تاہم اہل علاقہ کا کہنا ہے کہ پولیس کومنشیات فروشوں کا بڑا نیٹ ورک توڑنے کے لئے جرات اور بہادری کا مظاہرہ کرنا ہوگا ،کیونکہ مذکورہ نیٹ ورک کے تحت ملک آباد ، محبت آباد ، قائد اعظم سٹریٹ ، شاہد آباد ، گلبرگ کالونی ، نواب آباد ، چھاچھی محلہ ، لوسر شرفو ، منیر آباد ، آصف آباد ، ماڈل ٹاون ،ریاست آباد،لالہ رخ ،خان آباد،گلستان کالونی ، محلہ بنی و دیگر مقامات پر انکے کارندے مذموم دھندے میں تاحال مصروف ہیں ،اور جو پولیس کی ہر سرگرمیوں سے انھیں گاہے بگاہے آگاہ بھی کرتے رہتے ہیں قبل ازیں محکمہ پولیس میں بی تیس سے زائد اہلکاروں کی بابت موبائل ڈیٹا کے زریعے اس بات کی تصدیق ہوچکی ہے کہ یہ پولیس اہلکار منشیات فروشوں سے مکمل رابطوں میں تھے جو پولیس کے ہر چھاپے سے بروقت آگاہ کر کے بھاری نذرانہ ملزمان سے وصول کرتے تھے،پولیس سے متعلق سنسنی خیز انکشافات کے بعد واہ کینٹ ٹیکسلا کے تھانوں سے کثیر تعداد میں پولیس اہلکاروں و فسران کو یہاں سے ٹرانسفر کیا گیا،منشایت فروشوں کے بدنامہ زمانہ ڈیرے پر پولیس کا یہ دوسرا ریڈ ہے قبل ازیں بھی پولیس مقابلے کے دوران ملزمان کا ایک ساتھی مارا گیا اور اس مرتبہ پولیس موبائل پر فائرنگ کے نتیجے میں کراس فائرنگ کے دوران ملک آباد مارکیٹ کا بوڑھا چوکیدار ملزمان کی فائرنگ کی بھینٹ چڑھا ،اور ایک اور قیمتی انسانی جان ضائع ہوئی،مزکورہ ایریا میں تاحال منشیات فروش در پردہ مذموم دھندے میں مصروف ہیں،جبکہ چند ایک زیر زمین چلے گئے ہیں،لوگوں کا کہنا تھا کہ پولیس منشیات فروشوں کا مکمل نیٹ ورک توڑنے کے لئے بھرپور کاروائی کرے تاکہ نوجوان نسل جو پہلے ہی تباہی کے دھانے پر پہنچ چکی ہے اس سے محفوظ رہ سکے،جبکہ گروہ میں موجود ڈکیت ، اور چوروں کا بھی قلع قمع ہونا چاہئے

یہ بھی پڑھیں  کبڈی ورلڈ کپ: پاکستان اور بھارت آج فائنل میں مقدمقابل ہونگے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker