پاکستان

منصوراعجازکا نام ای سی ایل میں نہیں‌ڈالا جائیگا: رحمن ملک

منصور اعجاز کا نام ای اسی ایل میں ڈالنے کے بیان پر میمو تحقیقاتی کمیشن نے وزیر داخلہ رحمان ملک کو طلب کیا جو پیش ہوگئے,وزیر داخلہ نے کہا کہ میں نے منصور اعجاز کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کا نہیں‌ کہا.وفاقی وزیر داخلہ رحمان ملک نے میمو کمیشن کے روبرو پیش ہوکر بیان دیا ہے کہ منصور اعجاز کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کے حوالے سے میں نے کوئی بیان نہیں دیا. میرے بیان کو میڈیا میں غلط طور پر شائع کیا گیا ہے. منصور اعجاز کو کمیشن کے احکامات کے مطابق تسلی بخش سکیورٹی فراہم کی جائے گی۔ اگر شواہد کے حوالے سے کوئی شک ہے تو سیکرٹری کمیشن کو بھی ساتھ لگایا جاسکتا ہے تاکہ شواہد محفوظ رہیں۔ حکومت کمیشن کے احکامات کے مطابق فول پروف سکیورٹی دینے کی پابند ہے۔ان کا کہنا تھا کہ منصور اعجاز سے شواہد کے گم ہونے کے حوالے سے ابہام کو دور کرنے کیلئے کمیشن سیکرٹری کمیشن کو بھی منصور اعجاز کے ساتھ لگاسکتا ہے تاکہ شواہد محفوظ رہنے کا یقین رہے۔ اس موقع پر انہوں نے اپنے بیان کے حوالے سے سی ڈیز اور کلپنگ بھی کمیشن کو پیش کی۔ کمیشن سربراہ قاضی فائز عیسیٰ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان کیلئے یہ اچھا تاثر نہیں ہوگا کہ اگر کوئی گواہ بیرون ملک سے یہاں آئے اور اس کو مکمل سکیورٹی نہ فراہم کی جائے جس پر رحمان ملک نے کمیشن کو مکمل یقین دہانی کروائی کہ منصوراعجاز کو ہر قسم کی سکیورٹی فراہم کی جائے گی ۔انہوں نے کمیشن کو تجویز دی کہ جونہی منصور اعجاز ائیر پورٹ پر آئے وہیں کمیشن اجلاس طلب کرلیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ اکرم شیخ اور اٹارنی جنرل مل کر جو سکیورٹی پروگرام بنائیں اس پر مکمل عمل کیا جائے گا میں اپنی وزارت کمیشن کی ڈسپوزل پر دیتا ہوں جس طرح کی مرضی ہو سکیورٹی لے لیں۔ ان کا کہنا تھا کہ نارمل رول آف لاء جو میں نے پڑھا ہے اس کے مطابق ایس ایچ او کے کہنے پر بھی نام ای سی ایل میں ڈالا جاسکتا ہے مگر کمیشن کو یقین دہانی کراتا ہوں کہ منصور اعجاز کا نام ای سی ایل میں نہیں ڈالا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں  عمران خان اگلے ماہ حج کی سعادت حاصل کریں گے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker