پاکستان

ضمنی انتخابات، قومی اور صوبائی اسمبلیوں کی 10 نشستوں پر پولنگ ختم

قومی اسمبلی کے چھ اور صوبائی اسمبلی کے چار حلقوں میں ضمنی انتخابات ہوئے۔ رحیم یار خان کے حلقہ ایک سو پچانوے کے چالیس پولنگ اسٹیشنوں کے نتائج کے مطابق فنکشنل لیگ کے مصطفی محمود 38500 ووٹ لے کر پہلے نمبر پر ہیں ان کے مد مقابل طارق چوہان 3000 ووٹ لیے ہیں۔ ملتان کے حلقہ این اے میں پیپلز پارٹی کے لیاقت ڈوگر کو ن لیگ کے طارق رشید پر معمولی برتری ہے۔ ملتان میں قومی اسمبلی کے حلقہ 148 میں وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی کے صاحبزادے موسیٰ گیلانی اپنے حریف سے برتری لیے ہوئے ہیں.غیر سرکاری نتائج کے مطابق پی ایس 57 بدین ذوالفقار مرزا کے بیٹے حسنین مرزا نے واضح برتری حاصل ہے۔ حسنین مرزا نے 40551 ووٹ حاصل کیے اور ان کے مدمقابل علی بخش نے 3600 ووٹ حاصل کیے اور اسں طرح دوسرے نمبر پر ہیں۔پی پی 44 میانوالی سے ن لیگ کے عادل عبداللہ 41337 ووٹ لے کر کامیاب ہو گئے اور ان کے مدمقابل طارق مسعود کنڈ نے 33175 ووٹ حاصل کیے اور وہ دوسرے نمبر پر ہیں۔

قومی اسمبلی کے چھ اور صوبائی اسمبلی کے چار حلقوں میں ضمنی انتخابات ہوئے۔ رحیم یار خان کے حلقہ ایک سو پچانوے کے چالیس پولنگ اسٹیشنوں کے نتائج کے مطابق فنکشنل لیگ کے مصطفی محمود 38500 ووٹ لے کر پہلے نمبر پر ہیں ان کے مد مقابل طارق چوہان 3000 ووٹ لیے ہیں۔ ملتان کے حلقہ این اے میں پیپلز پارٹی کے لیاقت ڈوگر کو ن لیگ کے طارق رشید پر معمولی برتری ہے۔ ملتان میں قومی اسمبلی کے حلقہ 148 میں وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی کے صاحبزادے موسیٰ گیلانی اپنے حریف سے برتری لیے ہوئے ہیں۔ وہاڑی کے حلقہ این اے 168 کے پولنگ اسٹیشن موضع کھچی میں نتاشا دولتانہ نے 20997 ووٹ جبکہ بلال اکبر بھٹی نے4623 ووٹ لیے۔ پولنگ اسٹیشن بھنڈی سلول سے نتاشا دولتانہ کے 324، جبکہ بلال بھٹی کے 5 ووٹ نکلے۔ بدین کے حلقے پی ایس 57 کے پولنگ اسٹیشن ٹنڈو باغو میں حسنین مرزا واضح برتری لیے ہوئے ہیں۔ مردان میں ٹرن آؤٹ نہ ہونے کے برابر رہا کیونکہ یہاں خواتین کو ووٹ ڈالنے کی اجازت نہیں دی گئی ۔ وزیر اعلی امیر حیدر ہوتی نے بھی ووٹ نہیں ڈالا۔ این اے 140 قصور میں اعظم الدین زاہد، رشید خان اور سردار محمد سرور ڈوگر سمیت پندرہ امیدوارون نے الیکشن میں حصہ لیا۔ ملتان میں این اے 148 میں انیس امیدوار میدان میں ہیں۔ اصل مقابلہ مسلم لیگ (ن) کے عبد الغفار ڈوگر، اور پیپلزپارٹی کی طرف سے وزیر اعظم کے بیٹے علی موسیٰ گیلانی کے درمیان ہوا۔ ملتان میں ہی این اے 149 میں نو امیدوار میدان میں ہیں اور اصل مقابلہ مسلم لیگ (ن) کے طارق رشید اور پیپلزپارٹی کے لیاقت ڈوگر کے درمیان ہوا۔ این اے 168 وہاڑی میں 8 امیدوار مدمقابل تھے۔ یہاں مسلم لیگ (ن) کے بلال علی اکبر بھٹی، پیپلزپارٹی کی نتاشا دولتانہ اور 6 آزاد امیدوار میدان میں ہیں۔ این اے 195 رحیم یار خان میں فنکشنل لیگ کے مخدوم سید مصطفی محمود کا مقابلہ 9 آزاد امیدواروں سے تھا۔ پنجاب اور سندھ اسمبلی کی دو دو نشستوں پر بھی ضمنی الیکشن ہوئے۔ این اے 140 قصور کے 40 پولنگ اسٹیشن کے غیر سرکاری نتائج کے مطابق ملک رشید احمد 9856 ووٹ کے ساتھ پہلے اور عظیم لکھوی 5663 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں. این اے 140 قصور کے 40 پولنگ اسٹیشن کے غیر سرکاری نتائج کے مطابق ملک رشید احمد 9856 ووٹ کے ساتھ پہلے اور عظیم لکھوی 5663 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔ این اے 168 وہاڑی میں پیپلز پارٹی کی نتاشہ دولتانہ اور ن لیگ کے بلال اکبر بھٹی مد مقابل تھے، تاہم غیر سرکاری نتائج کے مطابق نتاشہ دولتانہ نے 70551 اور ان کے مدمقابل ن لیگ کے بلال اکبر بھٹی نے 46316 ووٹ حاصل کئے۔ پپلز پارٹی کی نتاشہ دولتانہ کو این اے 168 میں 24235 ووٹوں کی برتری حاصل ہے۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker