پاکستانتازہ ترین

مسلم لیگ ن سمیت دیگراپوزیشن جماعتوں کی الیکشن کمشن کوقرارداد پیش

election commissionاسلام آباد(بیورو رپورٹ)پاکستان مسلم لیگ ن سمیت دیگر اپوزیشن جماعتوں نے الیکشن کمشن کی مضبوطی کیلئے متفقہ طور پر پاس کردہ قرارداد الیکشن کمشن کے حوالے کی ہے جس میں گورنروں ،تمام آئی جیز پولیس،انٹیلی جنس اداروں اورریڈیو ٹی وی سمیت تمام اداروں کے سربراہوں کو انتخابات کے دوران الیکشن کمیشن آف پاکستان کے روبرو جوابدہ بنانے کا مطالبہ کیا گیا ہے ،اس موقع پر تمام پارٹیوں کے نمائندے موجود تھے،قرارداد کے متن میں کہا گیا ہے کہ ہم سیاسی جماعتوں کے نمائندگان اور پارلیمنٹیرینز،جنہوں نے پارلیمنٹ ہاؤس کے سامنے دھرنا دیا اور الیکشن کمیشن آف پاکستان تک مارچ کی جو کراچی میں دئیے گئے تین دھرنوں کا تسلسل ہے،اس عزم کا اعادہ کرتے ہیں کہ ہم موجودہ الیکشن کمیشن آف پاکستان پر،جس کی اتفاق رائے سے آئین پاکستان کی روشنی میں تشکیل ہوئی ہے،مکمل اور غیر متزلزل اعتماد کا اظہار کرتے ہیں،ایک قرارداد میں کہا گیا ہے کہ ہم غیر آئینی اور غیر سیاسی قوتوں کو ان بدنیتی پر مبنی سازشوں کی بھرپور مذمت کرتے ہیں جن کا مقصد الیکشن کمشن آف پاکستان کو متنازعہ بنانا اور اسے اپنے کردار کی ادائیگی سے روکنا ہے اور آنے والے انتخابات کو التواء کا نشانہ بننانا ہے،ایک اور قرارداد میں کہا گیا کہ ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ الیکشن کمشن آف پاکستان ان امور پر عمل درآمد یقینی بنائے، سپریم کورٹ آف پاکستان کی ہدایات کے مطابق کراچی کے انتخابی حلقوں کی نئی حلقہ بندیاں فوری طور پر مکمل کی جائیں،ووٹرز لسٹ کی گھر گھر تصدیق کا عمل شفاف انداز میں بغیر کسی سیاسی مداخلت کے فوج کی مدد سے فوری طور پر مکمل کیا جائے،تمام گورنرز کو ہدایت کی جائے کہ وہ نگران حکومت کے قائم ہوتے ہی اپنے عہدوں سے مستعفی ہوجائیں یا ہٹا دئیے جائیں،تاکہ غیر جانبدار گورنرز کی تقرری کی جاسکے،تمام وفاقی وصوبائی حکومتوں کے افسران جنکی فہرست منسلک ہے جن میں وفاقی سیکرٹریز داخلہ،کیبنٹ،اسٹبلشمنٹ ،اطلاعات ونشریات اور حزانہ شامل ہیں،نیز صوبائی چیف سیکرٹریز اور آئی جیز پولیس کا تبادلہ نگران وزیراعظم اور وزراء اعلیٰ کے حلف اٹھانے کے دن کر دیا جائے،صوبہ سندھ اور بلوچستان کی صوبائی اسمبلیوں میں لیڈرز آف اپوزیشن کی فوری تقرری کی جائے تاکہ وہ نگران وزراء اعلیٰ کے انتخاب میں اپنا آئینی کردار ادا کرسکیں،جماعت اسلامی جمعیت علماء اسلام(ف)،پاکستان مسلم لیگ(فنگشنل)،پاکستان مسلم لیگ(ن)،پاکستان مسلم لیگ(ہمخیال)،جمعیت علماء اسلام پاکستان،جمہوری وطن پارٹی،عوامی تحریک پاکستان،سنی تحریک، سندھ یونائیٹڈ پارٹی، پختونخواہ عوامی ملی پارٹی،متحدہ قبائل پارٹی اور نیشنل پیپلزپارٹی کے دستخط ہیں،ان جماعتوں نے مطالبہ کیا ہے کہ تمام صوبائی گورنروں،وفاقی اور صوبائی چیف سیکرٹریوں،چیف کمشنر اسلام آباد،وزیراعظم کے خصوصی سیکرٹریوں،سیکرٹری داخلہ،سیکرٹری کابینہ،سیکرٹری اسٹبلشمنٹ ،وفاق اور صوبوں میں سیکرٹریز اطلاعات،سیکرٹری سیفرون،چےئرمین نادرا،ڈی جی آئی بی،ڈپٹی چےئرمین منصوبہ بندی کمیشن،وفاقی سیکرٹری خزانہ،ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل سپیشل برانچ،تمام وزرائے اعلیٰ اور گورنروں کے پرنسپل سیکرٹریز،اٹارنی جنرل اور تمام ایڈووکیٹ جنرلز،ڈی جی ایف آئی اے،پی ٹی وی اور ریڈیو پاکستان کے سربراہوں،امریکہ اور برطانیہ سمیت اہم ملکوں میں سیاسی بنیادوں پر تعینات کئے گئے سفیروں،تمام کنٹریکٹ افسران اور پیمرا ونادرا کے سربراہوں کو براہ راست الیکشن کمیشن کو انتخابی عمل کے دوران جوابدہ ہونا چاہئے۔

یہ بھی پڑھیں  انتخابی ڈیوٹی نہ دینے والے کیخلاف قانونی کارروائی ہوگی ، الیکشن کمیشن

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker