پاکستانتازہ ترین

عام انتخابات شفاف اور قانون کے مطابق قرار، انکوائری کمیشن کی رپورٹ

اسلام آباد (بیورو رپورٹ) انکوائری کميشن نے 2013ء کے انتخابات کو شفاف اور قانون کے مطابق قرار دے ديا، کميشن کو منظم دھاندلی کا بھی کوئی ثبوت نہیں مل سکا، انتخابی بے ضابطگیوں کا ذمہ دار الیکشن کمیشن ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ دھاندلی کے الزامات لگانے والے ثبوت پیش نہیں کرسکے۔بالآخر انکوائری کمیشن کا فيصلہ آگيا، انتخابات ميں منظم دھاندلی کے الزامات مسترد کردیئے گئے، انکوائری کميشن کی رپورٹ نے پی ٹی آئی کے باؤنسر کو نو بال قرار دے ديا۔ انکوائری کميشن رپورٹ کے مطابق 2013ء کے انتخاب شفاف اور قانون کے مطابق تھے، سازش یا منظم دھاندلی کا کوئی ثبوت نہيں ملا، فارم 15 کی گمشدگی سے نتائج پر کوئی فرق نہیں پڑتا۔ انکوائری کميشن کا کہنا ہے کہ بڑے پيمانے پر منظم انداز ميں پولنگ کرائی گئی، کہيں بے ضابطگياں ہوئيں تو اس کا ذمہ اليکشن کميشن ہے، ای سی پی کے ممبران اور عملے میں رابطے کا فقدان پايا گيا، انتخابی عملہ مناسب تربیت یافتہ نہیں تھا، صوبائی الیکشن کمشنر نے اچھا کام کیا۔ چیف جسٹس سپریم کورٹ ناصر الملک کی سربراہی میں قائم 3 رکنی انکوائری کمیشن کی رپورٹ متفقہ ہے، کسی بھی جج کی جانب سے کوئی اختلافی نوٹ نہیں آیا۔ وزارت قانون نے انکوائری کمیشن کی رپورٹ اپنی ویب سائٹ پر جاری کردی۔

یہ بھی پڑھیں  چمکا آمنہؓ کا چاند

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker