پاکستانتازہ ترین

انتخابی دنگل مکمل‘(ن) لیگ 125 نشستوں کیساتھ پہلے نمبر پر

electionاسلام آباد (بیورو رپورٹ) عام انتخابات 2013ء میں مسلم لیگ ن قومی اسمبلی اور پنجاب کے انتخابی نتائج میں125نشستوں کے ساتھ سب سے آگے ہے، ٗ پیپلز پارٹی 32 نشستوں کے ساتھ دوسرے اورتحریک انصاف 31 نشستوں کے ساتھ تیسرے نمبر پرہے ، عوامی عدالت میں بڑے بڑے مہرے پٹ گئے ٗ راجہ پرویز اشرف ٗ قمر زمان کائرہ، منظور وٹو ٗ غلام احمد بلور ٗ فردوش عاشق اعوان ٗ راجہ ریاض ٗ فیصل صالح حیات ٗ پرویز الٰہی، سردار مہتاب‘ اقبال ظفر جھگڑا‘ تہمینہ دولتانہ ،محمود اچکزئی ‘ کو مخالف امیدواروں کے ہاتھوں عبرتناک شکست کا سامناجبکہ نواز شریف ، شہباز شریف، عمران خان ، حنیف عباسی،نبیل گبول،فہمیدہ مرزا ‘ امین فہیم‘ خورشید شاہ‘ نوید قمر کامیاب رہے۔ملک بھر سے موصول ہونے والے غیر حتمی و غیر سرکاری نتائج کے مطابق این اے 1 پشاور سے پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کامیاب ہوئے جبکہ غلام احمد بلور کو شکست ہوئی ۔این اے 2 پشاور سے پاکستان تحریک انصاف کے انجینئر حامد الحق کامیاب ہوئے ۔این اے 3 پشاور سے تحریک انصاف کے ساجد نواز ٗاین اے 4 پشاور سے تحریک انصاف کے گلزار خان ٗاین اے 5 نوشہرہ سے تحریک انصاف کے پرویز خٹک ٗاین اے 6 نوشہرہ سے تحریک انصاف کے سراج احمد خان 54 ہزار 140 ووٹ کے ساتھ کامیاب ہوئے جبکہ مسلم لیگ ن کے سید ذوالفقار علی شاہ باچا 34 ہزار 376 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 10 مردان سے تحریک انصاف کے علی محمد نے کامیابی حاصل کی ۔این اے 15 کرک سے تحریک انصاف کے ناصر خان خٹک 28 ہزار ووٹ کے ساتھ کامیاب، متحدہ دینی محاذ کے مولانا شاہ عبد العزیز 24 ہزار ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 19 ہری پور پاکستان تحریک انصاف کے راجا عامر زمان 81 ہزار ووٹ کے ساتھ کامیاب مسلم لیگ (ن )کے عمر ایوب خان 79 ہزار 100 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 20 مانسہرہ سے مسلم لیگ (ن)کے سردار محمد یوسف 86 ہزار ووٹ کے ساتھ کامیاب، پاکستان تحریک انصاف کے محمد اعظم خان سواتی 49 ہزار 643 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 27 لکی مروت سے جماعت اسلامی (ف)کے مولانا فضل الرحمان 56 ہزار 982 ووٹ کے ساتھ کامیاب، مسلم لیگ(ن)کے سلیم سیف اللہ خان 39 ہزار 292 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 29 سوات سے تحریک انصاف کے مراد سعید 62 ہزار 617 ووٹ لے کر کامیاب قرار جبکہ مسلم لیگ(ن)کے سید محمد علی شاہ باچا لالہ 13 ہزار 989 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 30 سوات سے تحریک انصاف کے سلیم رحمان 43 ہزار 270 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے مسلم لیگ (ن)کے امیر مقام 17 ہزار 310 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 31 شانگلہ سے مسلم لیگ(ن)کے عباد اللہ 21 ہزار 477 ووٹ لے کر کامیاب عوامی نیشنل پارٹی کے سدید الرحمان 14 ہزار 358 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر رہے۔این اے 32 چترال سے آل پاکستان مسلم لیگ کے افتخار الدین 18 ہزار 106 ووٹ لے کر کامیاب پاکستان تحریک انصاف کے عبدالطیف 15 ہزار 066 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر رہے۔این اے 33 اپر دیر: جماعت اسلامی کے صاحبزادہ طارق اللہ کامیاب ہوئے ۔این اے 34 لوئر دیر سے جماعت اسلامی کے صاحبزادہ محمد یعقوب 7 ہزار 655 ووٹ لے کر کامیاب قرار پائے جبکہ تحریک انصاف کے محمد بشیر خان 7 ہزار 596 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے35مالاکنڈ سے پاکستان تحریک انصاف کے جنید اکبر 50 ہزار 532 ووٹ کے ساتھ کامیاب ہوئے جماعت اسلامی(ف)کے محمد سعید 22 ہزار 117 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے44باجوڑ سے مسلم لیگ(ن)کے شہاب الدین کامیاب قرار پائے ۔این اے47قبائلی علاقہ سے تحریک انصاف کے قیصر جمال 9856 ووٹ لے کرکامیاب ہوئے ۔این اے 48 اسلام آباد سے تحریک انصاف کے مخدوم جاوید ہاشمی32ہزار 533 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے مسلم لیگ (ن)انجم عقیل خان 13 ہزار 861 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔ اسی طرح این اے 49 اسلام آباد سے مسلم لیگ (ن)کے طارق فضل چوہدری 94 ہزار 247 ووٹ لے کر کامیاب قرار پائے جبکہ تحریک انصاف کے چوہدری الیاس مہربان 57 ہزار 160 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 51 گوجر خان سے مسلم لیگ (ن)کے جاوید اخلاص کامیاب ہوئے اس حلقے میں سابق وزیراعظم راجہ پرویز اشرف کو عبرتناک شکست کا سامنا کرنا پڑا ۔این اے 55 راولپنڈی سے عوامی مسلم لیگ کے صدر شیخ رشید احمد 56 ہزار 145 ووٹ کے ساتھ کامیاب قرار پائے، مسلم لیگ (ن)ملک شکیل احمد اعوان 40 ہزار 271 لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 60 چکوال سے مسلم لیگ(ن) کے طاہر اقبال ایک لاکھ 11 ہزار 230 ووٹ لے کر کامیاب قرار پائے آزاد امیدوار سردار غلام عباس 78 ہزار 987 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 62 جہلم سے مسلم لیگ(ن)کے چوہدری خادم حسین 105104 ووٹ لے کر کامیاب پاکستان تحریک انصاف چوہدری محمد ثقلین65ہزار 572 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 63 جہلم سے مسلم لیگ(ن)کے راجا اقبال مہدی خان ایک لاکھ 2 ہزار 713 ووٹ لے کر کامیاب تحریک انصاف کے مرزا سعید محود بیگ 37 ہزار 511 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 68 سرگودھا سے مسلم لیگ (ن)کے صدر نواز شریف کامیاب ہوئے ۔این اے 69 خوشاب سے مسلم لیگ (ن)کی سمیرا ملک 80 ہزار 721 ووٹ لے کر کامیاب تحریک انصاف کے عمر اسلم خان 28 ہزار 90 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے71میانوالی تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان 42 ہزار 316 ووٹ کے ساتھ کامیاب مسلم لیگ(ن)عبید اللہ خان شادی خیل 17 ہزار 672 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 76 فیصل آباد سے مسلم لیگ(ن)کے طلال چوہدری کامیاب ہوئے ۔این اے 85 فیصل آباد سے مسلم لیگ(ن)کے محمد اکرم انصاری 124591 ووٹ کے ساتھ کامیاب ہوئے پاکستان تحریک انصاف کے ممتاز اقبال کاہلوں 55 ہزار 215 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 87 جھنگ سے مسلم لیگ (ن) کے غلام محمد لالی 85958 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ۔این اے91جھنگ سے آزاد امیدوار نجف عباس سیال 90 ہزار 728 ووٹ کے ساتھ کامیاب ہوئے جبکہ مسلم لیگ (ن)کے محمد محبوب سلطان 87 ہزار 361 کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 96 گوجرانوالہ سے مسلم لیگ(ن)کے خرم دستگیر 105104 ووٹ لے کر کامیاب، تحریک انصاف کے ایس اے حمید 29 ہزار 942 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے97گوجرانوالہ سے مسلم لیگ(ن)کے چوہدری محمود بشیر ورک کامیاب ہوئے این اے99گوجرانوالہ سے مسلم لیگ(ن)کے رانا عمر نذیر کامیاب ہوئے ۔این اے 100 سیالکوٹ سے مسلم لیگ (ن)کے خواجہ محد آصف 93 ہزار 269 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے تحریک انصاف کے عثمان ڈار 70 ہزار 312 ووٹ لے دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 105 گجرات سے مسلم لیگ(ق)کے چوہدری پرویز الٰہی 75ہزار 017 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے جبکہ مسلم لیگ(ن)کے چوہدری مبشر حسین 64 ہزار 652 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 106 گجرات سے مسلم لیگ(ن)کے چوہدری جعفر اقبال 30 ہزار 79 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے پیپلز پارٹی کے قمر زمان کائرہ 8 زار 848 لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔ اسی طرح این اے 107 گجرات سے مسلم لیگ(ن) کے چوہدری عابد رضا ایک لاکھ 6 ہزار 24 ووٹ کے ساتھ پہلے اور تحریک انصاف کے چوہدری محمد الیاس 33 ہزار 319 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 109 منڈی بہاؤ الدین سے مسلم لیگ(ن)کے ناصر اقبال بوسال 133128 ووٹ لے کر کامیاب جبکہ پیپلز پارٹی کے نذر محمد گوندل 253 ہزار 574 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 111 سیالکوٹ سے مسلم لیگ(ن)کے چوہدری ارمغان سبحانی ایک لاکھ 25 ہزار 782 ووٹ لے کر کامیاب جبکہ پیپلز پارٹی کی فردوس عاشق اعوان کو شکست ہوئی ۔این اے113سیالکوٹ سے مسلم لیگ(ن) کے سید افتخار حسین ایک لاکھ 16 ہزار 831 ووٹ لے کر کامیاب، تحریک انصاف کے مرزا عبدالقیوم 51 ہزار 995 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 116 نارووال سے مسلم لیگ(ن)کے دانیال عزیز چوہدری 91 ہزار ووٹ لے کر کامیاب پی پی پی پی کے محمد طارق انیس41ہزار ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 117 نارووال ‘ مسلم لیگ (ن)کے احسن اقبال کامیاب قرار پائے جبکہ تحریک انصاف کے ابرار الحق کو شکست کا سامنا کرنا پڑا ۔این اے 118 لاہور سے مسلم لیگ(ن)کے محمد ریاض ملک 26 ہزار 544 ووٹ لے کر کامیاب قرار پائے تحریک انصاف کے حامد زمان 11 ہزار 137 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 119 لاہور مسلم لیگ(ن) کے حمزہ شہباز 14 ہزار 564 کامیاب تحریک انصاف کے محمد مدنی 5 ہزار 275 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 120 لاہور سے مسلم لیگ (ن) کے صدر نواز شریف کامیاب ہوئے ۔این اے122لاہور سے مسلم لیگ(ن) کے سردار ایاز صادق 93 ہزار 362 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان 84 ہزار 417 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 123 لاہور سے مسلم لیگ (ن)کے محمد پرویز ملک 126877 ووٹ لے کر کامیاب پاکستان تحریک انصاف کے عاطف چوہدری 40617 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 124 لاہور سے مسلم لیگ(ن)کے شیخ روحیل اصغر کامیاب ہوئے ۔این اے 125 لاہور سے مسلم لیگ(ن)کے خواجہ سعد رفیق ایک لاکھ 6 ہزار ووٹ لے کر کامیاب تحریک انصاف کے حامد خان 74 ہزار ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 126 لاہور سے تحریک انصاف کے شفقت محمود 93 ہزار 513 ووٹوں کے ساتھ کامیاب قرار پائے مسلم لیگ (ن)کے خواجہ محمد حسان 86 ہزار 700 ووٹ کیساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 128 لاہور سے مسلم لیگ(ن)کے محمد افضل کھوکھر 106495 ووٹ لے کر کامیاب، پاکستان تحریک انصاف کے ملک کرامت علی کھوکھر 72227 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے129لاہور سے سابق وزیر اعلی پنجاب اور مسلم لیگ (ن)کے رہنما شہباز شریف 73 ہزار 179 ووٹ لے کر کامیاب، تحریک انصاف کے چوہدری محمد منشاء سندھو 11 ہزار 70 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے130مسلم لیگ(ن) کے سہیل شوکت بٹ کامیاب ہوئے ۔این اے131شیخوپورہ سے مسلم لیگ(ن)رانا افضال حسین 71 ہزار 891 ووٹ لے کر کامیاب قرار پائے آزاد امیدوار عمر آفتاب ڈھلوں 37 ہزار 668 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 132 شیخوپورہ سے مسلم لیگ(ن)کے رانا تنویر حسین 63 ہزار 341 ووٹ لے کر کامیاب قرار پائے پیپلز پارٹی کے سید غیور عباس بخاری 22 ہزار 200 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 139 قصور سے مسلم لیگ(ن)کے وسیم اختر شیخ 41 ہزار 276 ووٹ کے ساتھ کامیاب قرار پائے جبکہ پیپلز پارٹی کے چوہدری منظور احمد 16 ہزار 882 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 140 قصور سے مسلم لیگ(ن)کے ملک رشید احمد خان 34 ہزار 788 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے جبکہ مسلم لیگ(ن)کے عظیم الدین زاہد لکھوی 11 ہزار 336 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 142 قصور سے پاکستان مسلم لیگ (ن)کے رانا محمد حیات خان کامیاب، پاکستان مسلم لیگ (ق)کے سردار طالب حسن نکئی دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 145 اوکاڑہ سے مسلم لیگ(ن)کے سید محمد عاشق حسین شاہ 88 ہزار 133 ووٹ لے کر کامیاب، آزاد امیدوار رانا خضر حیات 32 ہزار 140 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 146 اوکاڑہ ہی سے مسلم لیگ (ن)کے راؤ اجمل کامیاب، پیپلز پارٹی کے منظور وٹو کو شکست ہوئی ۔این اے 147 اوکاڑہ سے مسلم لیگ(ن)کے محمد معین وٹو 64 ہزار 618 ووٹ لے کر کامیاب، پی پی پی پی کے میاں منظور احمد خان وٹو 43 ہزار 386 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 150 ملتان سے تحریک انصاف کے شاہ محمود قریشی 92 ہزار 726 ووٹ لے کر کامیاب، مسلم لیگ(ن)کے رانا محمود الحسن 79 ہزار 663 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 151 ملتان سے مسلم لیگ(ن)کے سکندر حیات خان بوسن 49 ہزار 439 ووٹ لے کر کامیاب، پیپلز پارٹی کے عبد القادر گیلانی 30 ہزار 450 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 152 ملتان سے مسلم لیگ(ن)کے سید جاوید علی شاہ 56 ہزار 336 ووٹ کے ساتھ کامیاب، تحریک انصاف کے محمد ابراہیم خان 45 ہزار 857 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 156 خانیوال سے آزاد امیدوار محمد رضا حیات 78357 ووٹ کے ساتھ کامیاب، مسلم لیگ(ن)کے سید فخر امام 69080 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 153 ملتان سے مسلم لیگ(ن)کے دیوان عاشق حسین بخاری 53 ہزار 545 ووٹ لے کر کامیاب، پیپلز پارٹی کے رانا محمد قاسم نون 42 ہزار 760 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 154 لودھراں سے آزاد امیدور محمد صدیق خان بلوچ 85 ہزار 509 ووٹ لے کر کامیاب، تحریک انصاف کے جہانگیر ترین خان 75 ہزار 374 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 158 خانیوال سے مسلم لیگ (ن)کے اسلم بودلہ 65 ہزار 410 ووٹ لے کر کامیاب، تحریک انصاف کے ظہور حسین قریشی 46 ہزار 263 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 160 ساہیوال سے مسلم لیگ(ن)کے سید عمران شاہ کامیاب ہوئے ۔این اے 170 وہاڑی سے مسلم لیگ (ن)کے سعید احمد خان منیس 80 ہزار 640 ووٹ لے کر کامیاب، تحریک انصاف کے اورنگ خان کھچی 76 ہزار 278 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 174 راجن پور سے مسلم لیگ (ن)کے سردار محمد جعفر خان لغاری 87 ہزار 282 ووٹ لے کر کامیاب، آزاد امیدوار نصر اللہ خان دریشک 55 ہزار 651 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 175 راجن پور سے مسلم لیگ(ن)کے حفیظ الرحمان خان دریشک 57 ہزار 528 ووٹ لے کر کامیاب، آزاد امیدوار میر دوست محمد مزاری 40 ہزار 822 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 176 مظفر گڑھ سے مسلم لیگ(ن)کے ملک سلطان محمود بنجرا 84 ہزار 967 ووٹ لے کر کامیاب، مسلم لیگ (ف)کے ملک غلام مصطفی کھر 72 ہزار 861 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 183 بہاولپور سے مسلم لیگ (ن)کے علی حسن گیلانی 62 ہزار 474 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ۔این اے 186 بہاولپور سے مسلم لیگ (ن)کے میاں ریاض حسین پیرزادہ 65 ہزار 822 ووٹ کے ساتھ کامیاب قرار پائے، مسلم لیگ (ق)کے طارق بشیر چیمہ 50 ہزار 119 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 188 بہاولنگر سے مسلم لیگ(ن)کے محمد اختر خادم 55 ہزار 950 ووٹ کے ساتھ کامیاب، آزاد امیدوار اصغر شاہ 46 ہزار 620 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 189 بہاولنگر سے مسلم لیگ(ن)کے عالم داؤد لالیکا 71 ہزار 600 ووٹ لے کر پہلے، تحریک انصاف کے میاں ممتاز احمد متیانہ 300ہزار 200 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 197 رحیم یار خان سے مسلم لیگ(ن)کے سردار محمد ارشد خان لغاری 80 ہزار 608 ووٹ لے کر پہلے، پی پی پی پی کے مرتضیٰ محمود 66 ہزار 546 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 199 سکھر سے پیپلز پارٹی کے سید خورشید شاہ 72 ہزار 584 ووٹ لے کر کامیاب، فنکشنل لیگ کے فقیر عنایت 27 ہزار 252 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 207 لاڑکانہ سے پیپلز پارٹی کی فریال تالپور 70 ہزار 800 ووٹ لے کر کامیاب پیپلز پارٹی( شہید بھٹو)کی غنوی بھٹو 20 ہزار 430 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہیں۔این اے 211 سے نیشنل پیپلز پارٹی کے امیدوار رئیس غلام مرتضی خان جتوئی56578 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ۔این اے 214 نوابشاہ سے پیپلز پارٹی کے سید غلام مصطفیٰ شاہ کامیاب مسلم لیگ(ن)کے علی اصغر رند دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 218 مٹیاری سے پی پی پی پی کے مخدوم امین فہیم 62605 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے جبکہ مسلم لیگ(ن)کے عبدالرزاق میمن 43 ہزار 700 ووٹ لے کر دوسرے نمبر رہے۔این اے 219 حیدر آباد سے متحدہ قومی موومنٹ کے خالد مقبول صدیقی ایک لاکھ 34 686 ووٹ لے کر کامیاب قرار پائے، جماعت اسلامی کے شوکت علی شیخ 5 ہزار 339 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 220 حیدرآباد سے متحدہ قومی موومنٹ کے سید وسین حسین ایک لاکھ 21 ہزار 236 ووٹ کے ساتھ کامیاب، پیپلز پارٹی کے محمد صغیر قریشی 17 ہزار ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 223 ٹنڈو الہ یار سے پیپلز پارٹی کے عبد الستار بچانی 80 ہزار 200 ووٹ کے ساتھ کامیاب، مسلم لیگ (ن)کی راحیلہ گل مگسی 51 ہزار 500 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہیں۔این اے 224 بدین سے پیپلز پارٹی کے سردار کمال خان چاند 67 ہزار 670 ووٹ لے کر کامیاب، فنکشنل لیگ کے علی اصغر ھالیپوٹو 44 ہزار 900 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 225 بدین سے سپیکر قومی اسمبلی فہمیدہ مرزا کامیاب ہوئیں ۔این اے 228 عمر کوٹ سے پیپلز پارٹی کے نواب محمد یوسف تالپور 62 ہزار 153 ووٹ کے ساتھ کامیاب، تحریک انصاف کے شاہ محمود قریشی 42 ہزار 310 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 234 سانگھڑ سے مسلم لیگ(ف)کے پیر بخش جونیجو 70 ہزار 236 ووٹ کے ساتھ کامیاب، پی پی پی پی کے فدا حسین ڈیرو 52 ہزار 460 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 235 سانگھڑ سے مسلم لیگ(ف) کے صدر الدین شاہ 74032 کے ساتھ کامیاب، پی پی پی پی کی شازیہ مری 61690 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہی۔این اے 236 سانگھڑ سے پی پی پی پی کے روشن الدین جونیجو 85 ہزار 740 ووٹ لے کر کامیاب، مسلم لیگ (ف)کے امام الدین شوقین 69 ہزار 490 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 245 کراچی سے متحدہ قومی موومنٹ کے محمد ریحان ہاشمی 100050 ووٹ لے کر کامیاب، پی پی پی پی کے سردار خان 5 ہزار 600 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 246 کراچی سے متحدہ قومی موومنٹ کے نبیل گبول کامیاب قرار پائے ۔این اے 247 کراچی سے متحدہ قومی موومنٹ کے سفیان یوسف ایک لاکھ 20 ہزار ووٹ کے ساتھ کامیاب، پیپلز پارٹی کے محمد اصغر لال 4 ہزار 723 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 249 کراچی سے متحدہ قومی موومنٹ کے ڈاکٹر فاروق ستار 108000 ووٹ لے کر کامیاب، پیپلز پارٹی کے عبد العزیز میمن 6300 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 253 کراچی سے متحدہ قومی موومنٹ کے عبد الوسیم 2 لاکھ 4 ہزار 365 ووٹ لے کر کامیاب، پیپلز پارٹی کے سید سہیل عابدی 8 ہزار 325 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 258 کراچی سے مسلم لیگ(ن)کے عبدالحکیم بلوچ 47 ہزار 231 ووٹ لے کر کامیاب، پی پی پی پی کے عبدالرزاق راجا 39 ہزار 107 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے261پشین سے پختونخوا ملی عوامی پارٹی کے محمد عیسیٰ روشان 17 ہزار 066 ووٹ لے کر کامیاب، آزاد امیدوار سید فضل محمد آغا ایک ہزار 17 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 263 لورالائی سے جے یو آئی (نظریاتی)کے مولانا امیر زمان 29 ہزار 905 ووٹ لے کر کامیاب، مسلم لیگ(ن)کے سردار محمد یعقوب خان ناصر 23 ہزار 037 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔این اے 268 قلات سے نیشنل پارٹی کے سردار کمال خان بنگلزئی 22 ہزار 500 ووٹ لے کر کامیاب، جمعیت علمائے اسلام(ف)کے مولانا عبد الغفور حیدری 7 ہزار 500 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے اوراین اے 271 خاران سے مسلم لیگ(ن)کے عبد القادر کامیاب قرار پائے ۔ ین اے 23سے آزاد امیدوار سرزمین خان 16766ووٹ لیکر جیت گئے جبکہ جے یو آئی کے محبوب خان نے11867ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے ۔ حلقہ این اے89مسلم لیگ ن کے شیخ محمد اکرم 74324ووٹ لیکر کامیاب ہوئے۔ مولانا محمد احمد لدھیانوی71598ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔ این اے208سے پیپلز پارٹی کے اعجاز احمد جھکرانی 38655لیکر کامیاب ہوئے جبکہ ن لیگ کے الٰہی بخش سومرو 38204دوسرے نمبر پر رہے۔ اس حلقے سے الٰہی بخش سومرو، دربار گنتی کرنے کا مطالبہ کر دیا ہے۔ این اے238سے آزاد امیدوار ایاز شاہ شیرازی 88135ووٹ لے کر جیت گئے جبکہ پیپلز پارٹی کے ارباب امیر الدین77194ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔واضح رہے کہ اب تک کے نتائج کے مطابق راجہ پرویز اشرف ٗ منظور وٹو ٗ غلام احمد بلور ٗ فردوش عاشق اعوان ٗ راجہ ریاض ٗ فیصل صالح حیات ٗ پرویز الٰہی کو مخالف امیدواروں کے ہاتھوں عبرتناک شکست کا سامنا کرنا پڑا ۔غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق سابق وزیر اعظم راجا پرویزاشرف، غلام بلور، منظور وٹو ، فردوس عاشق، راجہ ریاض اور ابرارالحق کو اپنے اپنے حلقوں میں ناکامی کا سامنا کرنا پڑا ہے۔سابق وزیر اعظم راجا پرویز اشرف کو اپنے آبائی حلقے این اے 51 گوجر خان سے راجا پرویزاشرف صرف 3233ووٹ حاصل کرسکے جب کہ ان کے مقابل مسلم لیگ(ن)کے راجا جاوید اخلاص 82ہزارسے زائد ووٹ حاصل کرکے کامیاب قرار پائے۔ این اے 1 پشاور میں پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے سابق وزیر ریلوے اور اے این پی کے مرکزی رہنما غلام احمد بلور کو شکست دی، این اے 146 اوکاڑہ میں پیپلز پارٹی کے منظور وٹو کو مسلم لیگ(ن)کے راؤ اجمل کے ہاتھوں شکست کا سامنا کرنا پڑا، پیپلز پارٹی ہی کی فردوس عاشق اعوان کو این اے 111 سیالکوٹ ٹو سے مسلم لیگ(ن)کے چوہدری ارمغان سبحانی نے شکست دی۔ پی پی 65 فیصل آباد سے پیپلز پارٹی کے رہنما راجا ریاض الیکشن ہار کا منہ دیکھنا پڑا جبکہ پاکستان تحریک انصاف کے رہنما ابرار الحق کو این اے 117 نارووال میں مسلم لیگ (ن)کے احسن اقبال نے شکست دی۔ غیر حتمی نتائج کے مطابق مسلم لیگ (ن) قومی اسمبلی کی 125 نشستیں حاصل کرکے سب سے بڑی پارٹی بن کر ابھری ہے ۔ پاکستان پیپلزپارٹی 35 نشستیں حاصل کرکے دوسرے ‘ پاکستان تحریک انصاف 33 نشستوں کیساتھ تیسرے‘ ایم کیو ایم 15 نشستوں کیساتھ چوتھے نمبر پر ہے۔ جے یو آئی (ف) نے 10 ‘ جماعت اسلامی اور پختونخواہ ملی عوامی پارٹی نے 3‘ 3‘ مسلم لیگ (فنکشنل)‘ مسلم لیگ (ق)‘ نیشنل پارٹی نے2‘2 نشستیں حاصل کی ہیں جبکہ 26آزاد امیدوار بھی انتخابی معرکے میں فتح حاصل کرچکے ہیں۔ خیبر پختونخواہ سے پاکستان تحریک انصاف 33 نشستوں کیساتھ پہلے‘ جمعیت علمائے اسلام (ف) 15 کیساتھ دوسرے اور مسلم لیگ (ن) 12 نشستوں کیساتھ تیسرے نمبر پر ہے۔ جماعت اسلامی‘ اے این پی اور قومی وطن پارٹی جبکہ سندھ سے پیپلز پارٹی نے 69 نشستیں حاصل کیں۔ ایم کیو ایم 21‘ فنکشنل 7 اور 7 آزاد امیدوار بھی کامیاب ہوئے۔ پنجاب اسمبلی میں مسلم لیگ نے 198 نشستوں کیساتھ واضح برتری حاصل کرلی ہے۔ تحریک انصاف 21‘ پیپلزپارٹی نے 6‘ مسلم لیگ (ق) نے 7 اور 7 آزاد امیدواروں نے کامیابی حاصل کی۔ ادھر بلوچستان میں مسلم لیگ (ن) اور محمود اچکزئی کی پختونخواہ ملی عوامی پارٹی نے 8‘8 نشستیں حاصل کی لیکن کوئی بھی جماعت واضح برتری حاصل نہ کرسکی جس کے باعث ایک مرتبہ پھر صوبے میں مخلوط حکومت کا قیام یقینی ہوچکا ہے،تاہم یہ بات ابھی واضح نہیں کہ اس مخلوط حکومت کی قیادت کس کے ہاتھ میں ہوسکتی ہے۔واضح رہے کہ 11مئی ہفتہ کو ملکی تاریخ کے 9ویں عام انتخابات میں ملک بھر میں عوام نے بھرپور جوش وخروش سے حصہ لیا اور عملی طور پر طالبان سمیت دیگر حلقوں کی طرف سے پولنگ سٹیشنوں سے دور رہنے کی دھمکیوں کو مسترد کرتے ہوئے جمہوری عمل میں اپنا بھرپور کردار ادا کیا،جس سے ملک بھر میں ووٹنگ کی شرح تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی،انتخابات میں ابتک کے نتائج کے مطابق مسلم لیگ(ن) کے سربراہ محمد نواز شریف اور پاکستان تحریک انصاف کے چےئرمین عمران خان سمیت کئی رہنما کامیاب ہوگئے ہیں،الیکشن کمیشن کے ابتدائی اندازوں کے مطابق ملک میں ووٹنگ کی شرح 60سے70فیصد رہی ہے،جبکہ قبل ازیں 1970ء کے انتخابات میں ووٹنگ کی شرح سب سے زیادہ56فیصد رہی تھی،عام انتخابات کے موقع پر ملک بھر میں انتہائی سخت حفاظتی انتظامات کئے گئے تھے،جس کے نتیجے میں پنجاب اور خیبرپختونخوا سمیت قبائلی علاقوں میں ماحول مجموعی طور پر پرامن رہا،تاہم کراچی اور بلوچستان میں مختلف پرتشد د واقعات میں 20کے قریب افراد جاں بحق اور متعدد زخمی ہوگئے،کراچی میں 43پولنگ سٹیشنوں پر انتخابات روک دئیے گئے اور وہاں بعد میں پولنگ کرائی جائے گی۔

یہ بھی پڑھیں  اسپیکر قومی اسمبلی کی مزار قائد پرحاضری اورفاتحہ خوانی

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker