تازہ ترینضیغم وارکالم

اسی کاانتظارتھا

حکو مت تھی ، ایک بھا ئی ، وفا ق میں دوسرا صو بے میں ، حکو مت گئی ، با پ وفا ق کے لیے اور بیٹا پنچا ب کے لیے نا مز د ہوا ، با قی کا رکن کچھ بھی نہیں ، کہیں با ہر سے بند ہ لا یا جا تا تو خا ص دوست ہو تا ، عوام کو انتظا ر تھا اس وقت کا ، جیسے خاں صا حب ابھی نئے چہر ے سا منے لا رہے ہیں ، علو ی صا حب جیسے شخص کو صد ر نا مز د کر دیا ، امیر بے چا رے تو منہ چھپا تے رہ جا ئیں گے ،شا عر نے کہا تھا ،
دنیا نہ جا ن اس کو میاں ، دریا کی منجد ھا ر ہے
اوروں کا بیڑا پا ر کر ،تیرا بھی بیڑا پا ر ہے
خاں صا حب کے پو رے پا نچ سا ل ہی امتحان ہیں ، مگر اہم عہد وں کے لیے جن نا موں کو سا منے لا یا گیا ، اس کی امید با قی سیاسی جما عتیں نہیں کر رہی تھیں ، وہ پا رٹیاں ایسا ہی سو چ رہی تھیں جیسے وہ خو د اپنی اپنی باری پر کر تی آ ئی ہیں ، خاں صا حب نے وفا ق کے وز یر جو سا منے لا ئے ان میں کا فی اعتر اضات ہیں ، مگر ان کی کا بنیہ نے آ تے سا تھ عوام کی امنگوں کے مطا بق کچھ بیا ن دیے ہیں اور عا مر لیا قت صا حب نے اسمبلی میں اقدام اٹھا یا اس سے عوام امید سے ہیں کہ ، جس تبد یلی کے نعر ے کو انہوں نے ووٹ دی ویسے کم از کم ہو تا نظر آ رہا ہے ، سو شل میڈ یا پر ایک پو ائنٹ ہی ابھی تک کا فی ہے ، خاں صا حب نے وز یر اعظم کا خلف لیا اور مہما نوں کے لیے اسپیشل کھا نے نہیں بنوا ئے گے ، ایک اور تصو یر بھی سا منے آ ئی ، فو اد چو ہد ری صا حب کی پر یس کا نفر نس اور صحا فیوں کے لیے صرف چا ئے اور بسکٹ ، خاں صا حب کا پہلا عوام سے خطا ب ، عوام نے ان کے ایک ایک لفظ کو سہرایا ہے ، خطا ب کے بعد اعترا ضات اٹھا ئے گے کہ خاں صا حب نے کشمیر کے ایشو پر با ت نہیں کی تو اگلے دن شا ہ محمو د قر یشی صا حب نے عہد لیتے سا تھ ہی اظہا رکیا کہ کشمیر کے ایشو پر با ت کر نے کی ضر ورت ہے اور انڈ یا کو پیغام دیا کے پا کستان مز اکرا ت کر نے کو تیا ر ہے ، بھا رتی کر کٹر سد ھو نے بہت خو ب کہا کہ وہ اپنی سر کا ر کی تو جہ اس طر ف تو جہ دلو ائیں گے کہ اگر پا کتسا ن نے یہ کہا ہے کہ ہم ایک قد م آگے بڑ ھیں تو پا کستا ن دو قد م آ گے بڑ ھے گا ، لہذا جس طر ح کا انداز پا کستا ن اپنا رہا ہے ایسے ہما ری طر ف سے بھی رویہ ہو نا چا ہیے ، خاں صا حب نے ایک صحا فی کے سوال کے جو اب میں کہا کہ اب امر یکہ کو سمجھنا چا ہیے کہ دہشت گر دی کی جنگ میں پا کستان کی کتنی قر با نیا ں ہیں اور اب ہم صرف امن چا ہتے ہیں ۔ خاں صا حب جو اقدا مات اٹھا رہے ہیں ، یا بیان دے رہے ہیں ، اس کے رپلا ئے میں اپو زیشن اور سو شل میڈ یا پر سوالا ت اٹھا ئے جا رہے ہیں ،یہ اچھی روایت بن رہی ہے کہ پھر خاں صا حب کی پا رٹی ان سوالوں کو بہت بہتر انداز میں ہنڈل کر رہی ہے ۔ عوام نے خاں صا حب کے تبد یلی کے نعر ے کو لے کر اس پا رٹی کو ووٹ دی تھی ، تو عوام چا ہیں گے کہ خاں صا حب جس سا دگی اور جس تبد یلی کا اعلان کر تے آ ئے ہیں ، ویسا نظر بھی آ ئے ، اور نئے چہر ے سا منے لا ئے جا ئیں اور اس رو ایت کو تو ڑا جا ئے، جیسے آ ج سے پہلے با قی سیا سی جما عتوں نے صرف اپنے چہتیوں کو نوازا ہے ، عا رف علو ی صا حب کو صد ر کے لیے نا مزد کیا گیا ، قا رئین ، کہیں دہا ئیوں سے ملک میں سیا ست کو نو ٹ کر تے آ ئے ہیں ، کیا کسی سیا سی پا رٹی نے بہت ہی پرا نے کا رکن اور متو سط طبقے کے شخص کو اتنے اہم عہد ے کے لیے نا مز د کیا ہے یا کبھی ایسا کر سکتے ، تو قا رئین کا یہی جو اب ہو گا کہ ایسا کبھی بھی ممکن نہ ہو تا ، پنچا ب میں ڈاکٹر را شد ہ نسیم صا حبہ کی الیکشن کمپین میں کا ر کر دگی کو دیکھتے ہو ئے ان کو مخصوص نشست پر صو با ئی اسمبلی کی سیٹ دی گئی ہے ، اور ان کے پر و فشنل کو دیکھ کر اب صو با ئی صحت کی وزارت بھی سو نپی گئی ہے ، اصل معنوں میں اس کو تبد یل کہتے ہیں ، دو سری جا نب با قی سیا سی جما عتوں نے جو مخصو ص نشستیں با نٹی ہیں وہ صرف اپنے رشتہ داروں اورخاص چا ہنے والوں کو را ضی کیا گیا ہے ، عوام جس تبد یل کے خو اب دیکھتی آ ئی ہے ، اس کی کرنیں نظر آ نا شر وع ہو گئی ہیں ۔
خاں صا حب نے سر عام اعلان میں کہا کہ وز یر اعظم ہاوس میں لمبی لا ئن کا م کر نے والوں کی اور تعد اد بھی بتا ئی اور یہ بھی بتا یا کہ اس ہا وس میں کتنی گا ڑیاں کھڑ ی ہیں ان کو کم کیا جا ئے گا ، کچھ لو گ اس با ت کا بھی اعتر اض اٹھا رہے ہیں کہ آ ج تک دنیا کو یہ نہیں پتا چلا کہ ہما رے اس وز یرا عظم ہا وس میں کیا کیا ہے اور خاں صا حب آ کر پو ری معلومات دنیا کو دے رہے ہیں ، اب اس طر ح کی سو چ پر اکیس تو پوں کی سلا می ہی دی جا سکتی ہے۔
اس سا ری صو رت حال میں زرداری صا حب کی خا مو شی بہت سے سوالات کو جنم دے رہی ہے ، کیا زرداری صا حب اپنے کیسز کو بچا نیکی خا طر کسی بھی تعا ون کی یقین دہا نی کر وا چکے ہیں یا وہ ایسا چا ہ رہے ہیں کہ ان پر نر م ہا تھ رکھا جا ئے ، اگر نر م ہا تھ رکھا گیا تو خاں صا حب کے وہ اعلانا ت جس میں کہا گیا کہ کر پشن جس نے بھی کی اس کے خلا ف سخت کا روائی ہو گی ، اگر ایسا نہ ہو سکا تو خاں صا حب کے لیے سو شل میڈ یا پر بڑا محا ذ کھل جا ئے گا ، سو شل میڈ یا کی پا ور ایسی کہ اب قو می لیول کے چینل کی ضرورت ختم ہو گئی کہ یہ چینل نیوز بنا ئیں گے تو آ واز اٹھے گی، لہذا خاں صا حب کو سوشل میڈ یا سپو رٹ کر سکتا ہے تو غلط اقدا ما ت کے خلا ف یہاں ہی آ واز بلند ہو سکتی ہے ، حکو مت تھی ، ایک بھا ئی ، وفا ق میں دوسرا صو بے میں ، حکو مت گئی ، با پ وفا ق کے لیے اور بیٹا پنچا ب کے لیے نا مز د ہوا ، با قی کا رکن کچھ بھی نہیں ، کہیں با ہر سے بند ہ لا یا جا تا تو خا ص دوست ہو تا ، عوام کو انتظا ر تھا اس وقت کا ، جیسے خاں صا حب ابھی نئے چہر ے سا منے لا رہے ہیں ، علو ی صا حب جیسے شخص کو صد ر نا مز د کر دیا ، امیر بے چا رے تو منہ چھپا تے رہ جا ئیں گے ،شا عر نے کہا تھا ،
دنیا نہ جا ن اس کو میاں ، دریا کی منجد ھا ر ہے
اوروں کا بیڑا پا ر کر ،تیرا بھی بیڑا پا ر ہے

یہ بھی پڑھیں  سپہ سالار امن۔۔۔۔۔۔حضرت محمدﷺ

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker