تازہ ترینعلاقائی

گندم کی امدادی قیمت کا تعین نہ کر پانا حکومت کی نا اہلی ہے، ڈاکٹر بابر رشید،ڈاکٹر لیاقت علی کوثر

اوکاڑہ(محمد مظہررشید چودھری سے ) گندم کی امدادی قیمت کا تعین نہ کر پانا حکومت کی نا اہلی ہے، ڈاکٹر بابر رشید،ڈاکٹر لیاقت علی کوثر ۔تفصیلات کے مطابق امیر جماعت اسلامی ضلع اوکاڑہ ڈاکٹر بابر رشید اور مرکزی شوری کے رکن ڈاکٹر لیاقت علی کوثر نے کہاہے کہ حکومتی کمیٹی برائے تعین قیمت گندم کا اجلاس بغیر کسی فیصلے کے ختم ہونا افسوسناک ہے گندم کی بیجائی کا سیزن سر پر ہے اور کسان اس مہنگائی کے سیلاب میں گندم کی بہتر قیمتوں کے لیے حکومت کی طرف دیکھ رہا ہے موجودہ قیمت 1400 روپے فی چالیس کلو زرعی مداخل اور اخراجات کو بھی پورا نہیں کرتی۔ آٹا اور گندم بنیادی انسانی ضرورتوں میں سے ہے اگر امدادی پیکج نہ دیا گیا تو اس سے گندم کی کاشت نہ صرف متاثر ہو گی بلکہ کسان کے لیے بھی مشکلات کھڑی ہو جائیں گی۔ان خیالات کا اظہار امیر جماعت اسلامی ضلع اوکاڑہ ڈاکٹر بابر رشید مرکزی شوری کے رکن ڈاکٹر لیاقت علی کوثر نے مشترکہ پریس کانفرس کرتےہوئےکیا انہوں نے کہا کہ اوکاڑہ جیسے زرعی ضلع کا کسان بھی حکومتی گومگو پالیسوں کی وجہ سے پریشان ہے۔ پہلے 25 فیصد اضافے کا کہہ کر اجلاس کو بے نتیجہ ختم کر دیا گیا۔ جبکہ 1400 کی موجودہ قیمت میں بیج، کھاد، آب رسانی کے خرچے مشکل سے پورے ہوتے ہیں۔ اگر مناسب رقبے پر گندم کاشت نہ ہو سکی تو قحط کی کیفیت بھی پیدا ہو سکتی ہے۔ حکومت افراط زر اور مہنگائی کنٹرول کرنے کی بجائے اس کا بوجھ کسان پر منتقل کرے تو یہ قابل مذمت ہے۔ پاکستان جیسے زرعی ملک بالخصوص پنجاب میں کسانوں کے لیے حکومتی نہ کوئی سپورٹ موجود ہے اور بظاہر کوئی پلان نظر آ رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی کسانوں نمائندگی کرتی آئی ہے۔ کسانوں کو اب بھی تنہا نہیں چھوڑیں گے۔ اگر دوسرے شعبوں کے ساتھ زراعت بھی تباہ کر دی گئی تو یہ پنجاب کے ساتھ بدترین دشمنی ہو گی۔ ایک سوال کے جواب میں ڈاکٹر بابر رشید نے کہا کہ دو سال اس حکومت نے سوتے ہوئے گزار دیے ہیں، کسی چیز پر کوئی کنٹرول کہیں نظر نہیں آ رہا۔ یا تو عوام کو ریلیف دے یا گھر جائے٭

یہ بھی پڑھیں  ماڈل ایان علی کے خلاف آج بھی فرد جرم عائد نہ کی جا سکی

یہ بھی پڑھیے :

What is your opinion on this news?

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker