پاکستانتازہ ترین

فیصل آباد:حق نواز قتل کیس میں رانا ثناء اللہ ،عابد شیر علی ،ڈی سی او بے گناہ قرار، تحریک انصاف کے کارکنوں کا احتجاج و ریلی

فیصل آباد(بیورو رپورٹ)تحریک انصاف کے کارکن حق نواز کے قتل کیس میں سابق صوبائی وزیر قانون رانا ثناء اللہ خاں ،وفاقی وزیر مملکت پانی وبجلی عابد شیر علی ،ڈی سی او فیصل آباد نور الا مین مینگل سمیت دیگرافراد کو بیگناہ قرار دینے پر تحریک انصاف کے کارکنوں کا پریس کلب کے سامنے احتجاج ،ناؤلٹی پل ‘ سے ضلع کونسل تک احتجاجی ریلی ۔ شرکاء نے پریس کلب کے سامنے زبردست حکومت اور پولیس کے خلاف نعرے بازی کی اور مطالبہ کیا ہے کہ پولیس کے رویہ پر ایکشن لیتے ہوئے رانا ثناء اﷲ خان کے خلاف عدالت میں مقدمہ پیش کیا جائے تاکہ انصاف کا بول بالا ہو سکے ۔ شرکاء نے ہاتھوں میں کتبے اٹھا رکھے تھے جن پر حکومت پالیسیوں ‘ رانا ثناء اﷲ خاں کے خلاف نعرے درج تھے اس موقع پر مرکزی صدر انصاف سٹوڈنٹس فیڈریشن میاں فرخ حبیب سمیت مقامی رہنماؤں نے شر کاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ حق نواز کے اصلی قاتل سابق صوبائی وزیر رانا ثناء اﷲ کو قانون کے کٹہرے میں لانے کے لئے کسی قربانی سے دریغ نہیں کیا جائے گا۔ پولیس نے جانبداری کا مظاہرہ کرکے قانون کا سنگین مزاق اڑا دیا ہے ۔ پولیس نے ثابت کر دیا ہے کہ ان سے انصاف کی کوئی توقع نہیں کی جا سکتی ۔ سانحہ ناؤلٹی پل کے مقدمے سے مرکزی کردار سابق صوبائی وزیر قانون کو چالان سے فارغ کرنا انصاف کے منافی اور کھلا مذاق ہے۔ رانا اویس ‘ میاں وارث ‘ شیخ شاہد جاوید ‘ شہزاد یونس شیخ ‘ لطیف نذر عامر جٹ و دیگر نے کہا کہ تحریک انصاف حق نواز کے قاتلوں اور ان کے سہولت کاروں سے آخری دم تک لڑے گی ۔شہید کا خون ضرور رنگ لائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکمران اور انکے ساتھی خود دہشت گردی ہیں جنہوں نے اسلام آبباد ‘ لاہور ‘ فیصل آباد و دیگر شہروں میں خون کی ہولی کھیل کر ظلم کی انتہائی کر دی ہے ۔رانا ثناء اﷲ خاں کے دہشت گردی تنظیموں کے ساتھ کنکشن جڑے ہوئے ہیں ۔ حکومت جب مخالفین کو دبانا چاہتی ہے تو کرایے کے غنڈے سے کام لے کر قتل و غارت کا بازار گرم کر دیا جاتا ہے ۔ ہم عدالتوں سے ناامید نہیں ہے لیکن پولیس کے کردارادا نے انصاف کو مشکوک بنا دیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ قاتلوں کو پناہ دینا (ن) لیگ حکومت کی پالیسوں میں شامل ہے سانحہ ماڈل ٹاؤن اور سانحہ ناؤلٹی پل کے ماسٹر مائنڈ سابق صوبائی وزیر قانون کو انصاف کے کٹہرے میں تحریک انصاف کے کارکن ضرور لائے گے۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button