پاکستانتازہ ترین

جعلی ڈگری کیس میں سابق صوبائی ممبر کو تین سال قید کی سزا

election commissionجعلی ڈگری(مانیٹرینگ سیل) کیس میں سابق ممبرصوبائی اسمبلی خیبر پختونخوا کو تین سال قید اور پانچ ہزار روپے جرمانے کی سزا سنادی گئی۔ الیکشن کمیشن نے جعلی ڈگری میں ملوث چون سابق ارکان اسمبلی کے ناموں کی فہرست جاری کردی ہے۔جمشید دستی اور ملک یار وارن پر فرد جرم عائد کی جاچلی ہے۔جعلی ڈگری کے پھندے کی زد میں ایک اور شکارسابق ممبر صوبائی اسمبلی خیبر پختونخوا خلیفہ عبدالقیوم کو تین سال قید اور پانچ ہزار جرمانے کی سزاسنادی گئی۔ ڈیرہ اسماعیل خان میں ایڈیشنل سیشن جج حیات خان نے سزا سنائی۔خلیفہ عبدالقیوم کو عدالت کے احاطے سے گرفتار کرلیا گیا۔ سزاپانے والے ممبر ڈیرہ سٹی ون پی کے چونسٹھ سے کامیاب ہوئے تھے۔خلیفہ عبدالقیوم کی مدرسہ کی جمع کرائی گئی سند غیر مستند نکلی۔ الیکشن دوہزار تیرہ کو صاف شفاف بنانے کے لئے الیکشن کمیشن انتہائی مستعدی سے کام لے رہا ہے۔ آئندہ انتخابات میں نااہل اور جعلی اسناد والے امیدواروں کا راستہ روکنے کے لئےچون سابق اراکین اسمبلی کی نام ویب سائٹ پر جاری کردیئے ہیں۔جس میں قومی اسمبلی کے چودہ، پنجاب اسمبلی کے بیس،بلوچستان کے گیارہ، فاٹا کے پانچ اور سندھ اسمبلی چار ارکان شامل ہیں۔گزشتہ روز جمشید دستی اور مل ےار وارن پر بھی فرد جرم عائد کردی گئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں  وہ ٹرینیں کبھی نہیں چلا کرتیں

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker