پاکستانتازہ ترین

فلسطین کواقوام متحدہ میں مبصرکی حیثیت مل گئی،امریکا اسرائیل کی کڑی تنقید

نیویارک (ڈیسک رپورٹر) فلسطین کو اقوام متحدہ میں مبصر ریاست کی حیثییت مل گئی۔ مغربی کنارہ، رملہ سمیت مختلف علاقوں میں جشن منایا گیا اور  لوگوں نے سڑکوں پر رقص اور آتشبازی کی۔ اقوام متحدہ نے فلسطین کو غیر رکن مبصر ملک کا درجہ دے دیا ہے۔ اسرائیل جنرل اسمبلی میں قرارداد کی منظوری پر کفِ افسوس ملتا رہ گیا۔ امریکا نے رائے شماری کو نقصان دہ قرار دیا ہے۔ قرارداد کی منظوری پر رملہ اور غزہ سمیت مختلف شہروں میں فلسطینی عوام جشن منا رہے ہیں۔   اسرائیلی جارحیت کے زیر سایہ علاقوں میں جشن کا سماں اور کیوں نہ ہو فلسطینی عوام کو اپنی ریاست کا سرٹیفکیٹ جو مل گیا ہے۔ رملہ کی سڑکوں پر عوام فلسطینی پرچم اٹھائے نکل آئے۔ مغربی کنارہ میں سیکڑوں افراد نے سیٹیاں اور تالیاں بجائیں تو کئی نعرے لگاکر خوشی کا اظہار کرتے رہے۔ غزہ اور مختلف شہروں بھی لوگوں کی خوشی دیکھنے سے تعلق رکھتی تھی۔ بچوں نے جھنڈے اٹھا رکھے تھے تو خواتین نے بھی رقص کرکے خوشی کا اظہار کیا اور یہ سب جشن اس لئے منایا جارہا ہے کہ انہیں اقوام متحدہ نے  یر مبصر رکن ریاست کا درجہ دے دیا ہے۔ اب فلسطین کو اقوامِ متحدہ کے اداروں میں شمولیت حاصل ہوجائے گی جن میں بین الاقوامی عدالتِ انصاف بھی شامل ہے۔ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں رائے شماری کے دوران ایک سو اڑتیس ملکوں نے فلسطین کی حمایت کی۔ اسرائیل، امریکا اور کینیڈا سمیت نو ملکوں نے مخالفت کی۔ جب کہ اکتالیس ممالک غیر جانبدار رہے۔ ووٹنگ سے پہلے اپنے خطاب میں صدر محمود عباس نے کہا کہ اقوام متحدہ فلسطین کا برتھ سرٹیفکیٹ جاری کرے۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ قرارداد فلسطین اور اسرائیل کو بچانے کا آخری موقع ہے۔ اسرائیلی وزیر اعظم نے محمود عباس کا خطاب توہین آمیز قرار دیا۔ جب کہ امریکی وزیر خارجہ نے قرارداد کی منظوری کو بدقسمتی اور نقصان دہ ٹہرایا۔ عیسائیت کے مرکز ویٹی کن سٹی نے جنرل اسمبلی میں فلسطین کی حمایت کو خوش آئند قرار دیا۔

یہ بھی پڑھیں  وزیراعظم کی زیرصدارت مشرق وسطیٰ کی صورتحال پراجلاس

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker