پاکستانتازہ ترین

عدالت کا فاروق ستار اور عامر خان کو گرفتار کرنے کا حکم

کراچی (نامہ نگار) انسداد دہشت گردی کی عدالت نے ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ ڈاکٹر فاروق ستار کی عدم گرفتاری پر اظہارِ ناراضی کرتے ہوئے فاروق ستار اور عامر خان کو پیر کے روز عدالت میں پیش کرنے کا حکم جاری کردیا۔ تفصیلات کے مطابق انسدادِ دہشت گردی کی عدالت میں 22 اگست کو کی گئی بانی ایم کیو ایم کی متنازع تقریر کیس کی سماعت کے دوران ڈاکٹر فاروق ستار کی عدم گرفتاری پر پولیس کی جانب سے جمع کروائی گئی رپورٹ پر عدم اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے اپنے ریمارکس میں کہا کہ پولیس عوام کو بےوقوف بنانے کا کام کر رہی ہے۔ انسداد دہشت گردی کی عدالت نے کہا کہ حکومت اور پولیس کو مقدمات کی حساسیت کو سمجھنا ہوگا اس لیے ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ ڈاکٹر فاروق ستار رہنما خالف مقبول صدیقی اور رہنما عامر خان کو ہر صورت گرفتار کر کے پیر کو عدالت میں پیش کیا جائے۔ دورانِ سماعت تفتیشی افسر نے عدالت کو بتایا کہ ڈاکٹر فاروق ستار اور دیگر کی گرفتاری کے لیے ضلعی سطح پر ٹیمیں تشکیل دے دی گئی ہیں اور جلد ملزمان کو گرفتار کر کے عدالت میں پیش کردیا جائے گا۔واضح رہے گزشتہ شب سندھ پولیس نے ڈاکٹر فاروق ستار کو شادی ہال سے باہر آتے ہوئے حراست میں لے کر چاکیواڑہ تھانے منتقل کردیا تھا تاہم ایک گھنٹے بعد ہی انہیں رہا کردیا گیا تھا۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
error: Content is Protected!!