پاکستانتازہ ترین

14 مارچ کو فیصل آباد میں پہیہ جام ہڑتال ہو گی۔ صاحبزادہ محمد حامد رضا

فیصل آباد(بیورو رپورٹ)سنی اتحاد کونسل کے چیئرمین صاحبزادہ محمد حامد رضا نے کہا ہے کہ14 مارچ کو فیصل آباد میں پہیہ جام ہڑتال ہو گی۔ رانا ثناء اللہ کے گھر کے باہربھی دھرنا ہو گا ۔رانا ثناء اللہ اور میاں شہباز شریف رات کی تاریکیوں میں کالعد م جماعت کے سربراہ ملک اسحاق سے ملاقاتیں کرتے ہیں ۔اب حکومت سے مذاکرات نہیں ہوں گے۔پنجاب حکومت پولیس سے علماء کی توہین کروا رہی ہے۔احتجاجی تحریک کا آغاز ہو گیا ہے۔14مارچ کو فیصل آباد کو داخلی و خارجی راستوں پر بند کر دیا جائے گا۔نام نہاد ملا اورملک میں فرقہ واریت پھیلانے والا شخص رات کو لوگوں کو قتل کرواتا ہے اور دن کے وقت میڈیا پر بیٹھ کر امن کا درس دیتا ہے۔حکومت ایسے سازشی ملاؤں کے خلاف کاروائی کیوں نہیں کرتی ۔ آج سے پہلے امن کی ذمہ داری ہماری تھی لیکن اب یہ ذمہ داری حکومت اور مقامی انتظامیہ کی ہے۔ محدث اعظم کا پوتا ہوں درود و سلام پر پابندی اور بزرگ علماء کی گرفتاریوں پر خاموش نہیں رہ سکتا۔انتظامیہ جوئے کے اڈے اور شراب نوشی کے ڈیرے چلانے والوں کو پروٹوکول فراہم کررہی ہے جبکہ پنجاب حکومت کالعدم تنظیموں کے سربراہوں کو سرکاری پروٹوکول سے نواز رہی ہے۔پنجاب حکومت بتائے کہ پر امن علماء کا یہی قصور ہے کہ وہ آپریشن ضرب عضب کی حمایت کررہے ہیں۔کیا ہمارا یہی قصور ہے کہ ہم ملک سے طالبان کا خاتمہ چاہتے ہیں ۔ہم ڈنڈے کے زور پر نہیں گنبد خضری کے صدقے اپنے مطالبات منوائیں گے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ شب مساجد سے لاؤڈ سپیکر اتارنے ،اذان کی آواز محدود کرنے اور درود و سلام پر پابندی کے خلاف ضلع کونسل چوک میں ہونے والے دھرنے کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔صاحبزادہ حامد رضا نے کہا کہ آج کا دھرنا حکومت کو خبر دار کرنے کیلئے تھا ۔آج دھرنا ختم کررہے ہیں لیکن ہفتہ کے روز ہونیوالا دھرنا غیر معینہ مدت کیلئے ہوگا۔صاحبزادہ حامد رضا نے کہا کہ تمام تنظیمات اہل سنت میرے ساتھ ہیں۔تمام تنظیمات اہل سنت نے فیصلہ کیا ہے کہ اگلا دھرنا شہر میں مختلف مقامات پر ہو گا اور آٹھوں بازاروں کو بند کیا جائے گا اس سلسلہ میں انجمن تاجران سے مشاورت مکمل ہو چکی ہے۔تاجر برادری اور وکلاء ، سول سوسائٹی دھرنے میں شریک ہوں گی۔صاحبزادہ حامد رضا نے اعلان کیا کہ اگلے دھرنے میں ہمارے ساتھ مائیں ، بہنیں بھی ہوں گی

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button