تازہ ترینعلاقائی

فورٹ عباس‘ نوجوان گیارہ ہزار ولٹ کی برقی تاروں سے لگ کر جاں بحق

ہارون آباد(نامہ نگار) فورٹ عباس روڈ پر 426 سٹاپ کے قریب نوجوان مظہر حسین ولد نزیر احمد گیارہ ہزار ولٹ کی برقی تاروں سے لگ کر جاں بحق ،اس سے قبل بھی ایک شخص مویشوں کو اتارتے ہوئے انہی تاروں سے لگ کر زندگی گنوا بیٹھا ہے ، بنائی گئی 14 فٹ اونچی دیوار سے بالکل قریب برقی تاروں سے ہونے والی ہلاکت کی ذمہ داری کسی پر عائد ہوتی ہے والدہ و باپ کا حکمرانوں سے سوال ۔ فقیروالی سے بارہ کلومیٹر ہائی وئے روڈ پر 26 پھٹہ سٹاپ کے قریب پاک آرمی نے دفاعی مضبوطی کے لیے چودہ فٹ اونچے مٹی کی دیوار کے قریب کچے گھروں کے مکینوں کے مویشی وغیرہ اکثر اس مٹی کے بندھ پر چڑھ جاتے ہیں جن کو اتارنے کے لیے مجبوراً اوپر چڑھنا پڑتا ہے محکمہ واپڈا کے لگائے گئے گیارہ ہزار وولٹ کے پول اس بندھ سے محض چار فٹ اونچے ہیں یہ نوجوان بھی کسی ضروری کام سے اوپر چڑھا تو بجلی کی تاروں سے ٹکرا کر زندگی کی بازی ہار گیا اس موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے نزیر احمد نے بتایا کہ میرے جوان سالہ بیٹے کی موت کا ذمہ دار کون ہے محکمہ واپڈا یا کوئی اورنہ جانے کتنی زندگیوں کے چراغ ان تاروں سے گل ہوں گے ۔

یہ بھی پڑھیں  راولپنڈی:کینسرسےآنکھوں کی بیماری میں مبتلا غریب شہری اپنی داستان سنارہاہے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker