تازہ ترینعلاقائی

10 سالہ لڑکی پر تشددکارازفاش، سوتیلی ماں زیرحراست، بھائی کاوالدہ پرتشددکاالزام

گوجرانوالہ (ڈیسک نیوز) گوجرانوالہ کی دس سالہ ثوبیہ پر بہیمانہ تشدد کے بھید کھلنے لگے ہیں۔ ثوبیہ کے بھائی نے سوتیلی ماں پر مار پیٹ کا الزام لگایا ہے۔پولیس نے نیم بے ہوشی کی حالت میں ملنے والی بچی کے بھائی باپ اور سوتیلی ماں کو حراست میں لے لیا۔ سول اسپتال میں زیرعلاج ثوبیہ اب تک مکمل ہوش میں نہیں آئی۔سول اسپتال گوجرانوالہ میں داخل دس سالہ ثوبيہ جسے نيم بے ہوشي کے عالم ميں گکھڑمنڈی کے قریب سڑک سے اٹھا کر اسپتال پہنچایا گیا تھا۔ ننھی جان کو اس حال تک پہنچانے والوں کا پتا چلنے کی امید پیدا ہوگئی ہے۔ میڈیا کی نشاندہی اور اعلیٰ حکام کے نوٹس پر سرکاری مشینری حرکت میں آگئی اور پولیس نے ثوبیہ کی سوتیلی ماں ناصرہ، باپ لشکر خان اور بھائی حسن کو گکھڑ منڈی کے قریبی علاقے بنگلہ آباد سے حراست میں لے لیا ہے۔ پولیس کے مطابق نو برس کا حسن بھی ثوبیہ کی طرح گھریلو ملازم ہے۔ اس نے بتایا ہے کہ مالکن کے ساتھ ساتھ سوتیلی ماں بھی ثوبیہ پر ظلم کرتی تھی جبکہ مالکن کی تلاش جاری ہے۔ ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ بچی کو نہ صرف بری طرح مارا پيٹا گيا بلکہ جلايا بھی گيا۔ ايک پاؤں کی ہڈی بھی ٹوٹی ہوئی ہے۔ جسم پر پرانی چوٹوں کے نشان بھی ہيں۔ اعلیٰ حکام کی ہدایت پر سی پی او گوجرانوالہ اور دیگر پولیس افسران معاملے کی تفتیش کر رہے ہیں، جب کہ اسپتال میں زیرعلاج ثوبیہ کو چائلڈ پروٹيکشن بيورو کے حکام نے اپنی تحویل میں لے لیا۔

یہ بھی پڑھیں  مشرف کی ایمرجنسی کی حمایت کی تھی : شجاعت

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker