تازہ ترینعلاقائی

لوڈ شیڈنگ سے ہزاروں لوگ مر رہے ہیں مگر ظالم حکمرانوں کے کانوں پرجوں تک نہیں رینگ رہی:حاجی غلام سرور خان

ٹیکسلا (نا مہ نگار)تحریک انصاف کے مرکزی رہنما و ممبر قومی اسمبلی حلقہNA-53 حاجی غلام سرور خان نے کہا ہے کہ بجلی کی خوفناک لوڈ شیڈنگ کی وجہ سے ہزاروں کی تعداد میں لوگ ایڑیاں رگڑ رگڑ کر مر رہے ہیں مگر ہمارے بے حس اور ظالم حکمرانوں کے کانوں پر جوں تک نہیں رینگ رہی اور وہ چین کی بانسری بجا رہے ہیں اور انھوں نے عوام کے سامنے سب اچھا کی رٹ لگائی ہوئی ہے۔ مسلم لیگ (ن) ایک خونی جماعت ہے جس کے ہاتھ ہزاروں بے گناہوں کے خون سے رنگے ہوئے ہیں۔ بجلی کی لوڈ شیڈنگ سے کراچی میں مرنے والے ہزاروں بے گناہ افراد کی قاتل براہ راست مسلم لیگ(ن) کی حکومت ہے جس نے عوام کی زندگیاں بچانے کے لئے کچھ بھی نہیں کیا۔سنگدل حکمرانوں نے انتہائی سنگدلی کا مظاہر کرتے ہوئے موٹرویزاور میٹرو بس جیسے منصوبوں کے لئے تو اربوں روپے رکھے مگر ملک میں نئے ڈیمز بنانے کے لئے نہایت ہی کم رقم رکھی۔ اس وقت پاکستانی عوام کو میٹرو بس اور موٹرے ویز کی ضرورت نہیں بلکہ اس وقت سب سے اہم مسئلہ بجلی کی لوڈشیڈنگ کا خاتمہ ہے جس کے لئے نئے ڈیموں کی تعمیر کی اشد ضرورت ہے جس میں ہمارے موجودہ حکمران بلکل سنجیدہ نہیں ہیں ۔اصل میں موجودہ حکمرانوں کی ترجیحات ہی کچھ اور ہیں۔ وہ صرف اور صرف اپنی ذاتی تجوریاں بھرنے میں مصروف عمل ہیں۔ عوام چاہئے جانے جہنم میں۔ملک سے غربت ختم کرنے کے دعویداروں نے غریبوں کو ہی ختم کرنا شروع کر دیا۔ ان کی پالیساں عوام دشمن ہیں اور ان کی ناقص پالیسوں کی وجہ سے عوام کے مسائل میں دن بدن تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے موجودہ حکومت اپنی ذمہ داریاں ادا کرنے میں مکمل طور پر ناکام ہو چکی ہے اور مسلم لیگ(ن) کی حکومت کو عوام کی فلاح و بہبود کے منصوبوں سے کوئی بھی دلچسپی نہیں ہے جنگلا بس سروس اور شو پیس منصوبوں کے اربوں کھربوں روپے توانائی پر لگتے تو عوام بجلی کی لوڈ شیڈنگ کے ہاتھوں یوں سسک سسک کر نہ مرتے۔ سابقہ حکومت کے دوران خادم اعلی پنجاب ہونے کے دعویدار ہاتھوں میں پنکھا لئے روزانہ مینار پاکستان پر اپنی کابینہ کے ہمراہ ڈیرے ڈال لیتے تھے اوراس کے علاوہ وہ پنجاب میں لوڈ شیڈنگ کے خلاف عوامی احتجاج کی قیادت کرتے تھے آج سابقہ دور سے بجلی کی لوڈ شیڈنگ بھی کئی زیادہ ہو رہی ہے آج وہ آخر بجلی کی اس طویل ترین لوڈ شیڈنگ پر احتجاج کیوں نہیں کر رہے اور وفاق کو ذمہ دار کیوں نہیں ٹھہرا رہے جیسا کہ وہ ماضی میں وفاق کو قصور وار ٹھہراتے رہے ہیں۔ سابقہ الیکشن میں الیکشن کمپین کے دوران تو وہ عوامی جلسوں کے دوران بہت بلند و بانگ دعوے کرتے تھے اگر ہم حکومت میں آگے تو ہم نے بجلی کو لوڈ شیڈنگ کا مسئلہ چھ مہینے میں حل نہ کر دیا تو پھر میرا نام شہباز شریف نہیں۔ اس کے بعد بھی انھوں نے ناجانے عوام کو کتنی تاریخیں دیں ۔ بہتر اب یہی ہے کہ وہ اپنا نیا نام خود ہی تجویز کر لیں۔ اوپر سے سونے پر سہاگا کی ووزیر مملکت پانی و بجلی عابد شیر علی اور وفاقی وزیر خواجہ آصف اور دیگر وزراء کے بیانات عوام کے زخموں پر نمک چھڑکنے کے مترادف ہیں اور ان کے یہ بیانات عوام میں اشتعال بھی پیدا کر رہے ہیں۔ ان کو اخلاقی طور پر اپنی ناکامی کا اعتراف کرتے ہوئے استعفی دے دینا چاہئے۔

یہ بھی پڑھیں  آرمی چیف جنرل راحیل شریف سے چینی وفد کی ملاقات

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker