بین الاقوامیپاکستانتازہ ترین

اللہ کی طرف سے عذاب کامقصد انسان کو اپنی طرف متوجہ کرناہے،خطبہ حج

مکہ مکرمہ(ڈیسک نیوز)مکہ المکرمہ کی مسجد نمرہ میں شیخ عبداللہ بن سلیمان نے خطبہ حج دیتے ہوئے کہا کہ کورونا آزمائش ہے،اللہ کی طرف سے عذاب کامقصد انسان کو اپنی طرف متوجہ کرناہے،اب بھی وقت ہے کہ مسلمان ہر قسم کی بدعت اور خرافات سے دور رہیں۔تفصیلات کے مطابق حج دو ہزار بیس کا روح پرور اجتماع میدان عرفات کی نمرہ مسجد میں جاری ہے،جہاں شیخ عبداللہ بن سلیمان المنیع خطبہ حج  دے رہے ہیں۔شیخ عبداللہ بن سلیمان المنیع نے خطبہ حج دیتے ہوئے کہا کہ سیدھے راستے پر چلنے والے کے لیے ہی نجات ہے،مسلمانوں کو اللہ کی توحید اور وحدانیت کو مضبوطی سے پکڑنا چاہیے کیونکہ نبی کریم نے مسلم امہ کو ایک جسم کی مانند قرار دیا ہے،ہمارا ایمان ہے کہ اللہ ہر چیز کا خالق ہے اس کے سوا کوئی معبود نہیں۔خطبہ حج دیتے ہوئے شیخ عبداللہ بن سلیمان نے کہا کہ تقویٰ اختیار کرنے والے کی ہر تنگ دستی دور کردی جاتی ہے،تقوی سے انسان برائیوں سے بچتا ہے لیکن آج بڑی تعداد میں لوگ اللہ کی بندگی سے غافل نظر آتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ اہل تقویٰ کی صفات میں اولین صبر ہے، اللہ تعالیٰ نے خوشی اور صبر دونوں میں صبر کرنے کا کہا ہے اور صبر پر کار بند رہنے والوں کے لیے خیر کی بشارت ہے، حضور نے اپنی زندگی خیر کے لیے وقف کی۔خطبہ حج دیتے ہوئے شیخ عبداللہ بن سلیمان نے کہا کہ عبادات سے ہی مصیبت سے چھٹکارا ملتا ہے، اللہ ہر چیزکا خالق ہے اس کے سوا کوئی معبود نہیں، مسلمان ہر طرح کی بدعت اور خرافات سے دور رہیں، اللہ کے حکم سے ہی مصیبتیں آتی اور دور ہوتی ہیں۔اُن کا کہنا ہے کہ مشکلات دائمی نہیں اللہ کا فرمان ہے ہر مشکل کے بعد آسانی ہے، اللہ نے سود کو حرام اور جائز منافع کو حلال قرار دیا ہے۔خطبہ حج دیتے ہوئے شیخ عبداللہ بن سلیمان نے کہا کہ عبادات سے ہی مصیبتوں سے چھٹکارا ملتا ہے، کورونا اگر آزمائش ہے تو اللہ کی رحمت کے دروازے بھی کھلے ہیں، ہمارے گناہوں کی وجہ سے اللہ نے ہمیں اس آزمائش میں ڈالا، قرآن میں ہے کہ صبر اور دعا کے ذریعے اللہ کی مدد مانگو، اللہ تعالی تمہارے لیے مشکلات نہیں آسانیاں چاہتا ہے، قرآن میں ہے کہ معمولی مصیبت کا مقصد بڑی مشکل سے چھٹکارا ہے اور ایمان والے ہیں جو مصیبت میں اللہ پر یقین رکھتے ہیں۔شیخ عبداللہ بن سلیمان نے کہا کہ اپنے ماں باپ کے ساتھ حسن سلوک اختیار کریں، اپنی بیویوں کے ساتھ حسن سلوک سے پیش آؤ، اپنے بھائی بہنوں اور رشتہ داروں کا خیال رکھو، رشتہ داروں کے ساتھ صلح رحمی کے ساتھ پیش آؤ، حقداروں کا حق ادا کرو اور سیدھے راستے پر چلنے والے کے لیے ہی نجات ہے

یہ بھی پڑھیے :

What is your opinion on this news?

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker