تازہ ترینحکیم اشرف ثاقبکالم

بصارت اور بصیر ت

دنیا میں ہر انسان کا میا ب ہو نا چاہتا ہے۔ مگر مو جو دہ دورمیں انسانو ں نے کا میا بی حا صل کر نے کے جو طریقے اپنا ئے ہو ئے ہیں۔ اُن سے حقیقی کامیا بی حا صل نہیں کی جا سکتی ۔ دنیا کے اندر جتنے بھی کا میا ب لو گ گزرے ہیں اُنکے پیچھے اُنکی بصارت اور بصیر ت کے دونوں پہلو مو جو د ہیں۔ اللہ تبار ک تعا لیٰ نے انسان کو کمزور پیدا کیا ہے۔ انسان کے مقابلے میں رب ذوالجلال نے بحروبر کے اندر اور با ہر بڑی بڑی مخلو قات کو پیدا کیا، حیوانا ت جما داتر ، نبا تات پیدا کیے جب انسان حیوانات کو دیکھتا ہے۔ تو حیران اور ششدر رہ جا تا ہے۔ شیر کی گرج چیتے کا رعب، ہا تھی کا جسم یہا نتک کہ انسان کتے سے ڈر جا تا ہے۔مگر اُس سمیع و بصیر اللہ نے انسان کو عقل سلیم ،عطائ کی شعور بخشا، جس کی بنا پر اس کی بصارت اور بصیرت میں ایک نو رپیدا ہو ا جس کے بل بو تے پر اس نے شیر کو پکڑ کر اپنے قدموں میں لا کھڑا کیا جنگل کے بادشاہ کو انسان نے اپنے اشاروں پر چلا کر اپنی بصارت اور بصیرت کا لو ہا منوایا۔ جما دات کواپنی عقل سلیم استعمال کر کے اُن کو ریت بنا دیا۔ بلند و با نگ پہاڑوں کی چوٹیوں پر چڑھ کر اپنی بصارت اور بصیرت کے جھنڈے گا ڑھ دیئے ۔ نباتات کو اپنی ایک انگلی کے اشارہ پر نیچے گرا دیا۔ اور اُنکو ریزہ ریزہ کر کے آگ مین جلا یا مکا نات بنا ئے اور بہت کچھ اپنی زندگی کی سہو لیات میں استعمال کیا ۔انسان نے فضائوں کو مسخر کیا ۔۔۔۔۔۔ہوا ۔۔۔۔۔کے رخ تبدیل کیے سمندروں کو چیرتا ہو اآخری حد تک پہنچ گیا اللہ تبارک تعالیٰ نے حضرت انسان کو کیا کچھ عطانہیں کیا، آج تمام کا ئنا ت عرضی پر اس کی بصارت اور بصیرت کی دھا ک بیٹھی ہو ئی ہے۔ صحرائوں فضائوں ،میدانوں پر حکومت کر رہا ہے۔ مگر پھر بھی انسان کمزور اور نا تواں ہے۔ذرا سا سر میں درد ہو جا ئے تو انسان کی تمام بصارت اور بصیرت کمزور پڑ جا تی ہے۔ دعوے تو بہت ہیں۔ ذرا سا بخار ہو جا ئے تو کا ئنات کی تمام چیزیں ہیچ نظر آتی ہیں۔ انسان کتنا کمزور پیدا کیا گیا پیٹ میں درد ہو جا ئے تو تمام جہان کے ڈاکٹروںکے پاس چلا جا تا ہے۔دعوے بہت ہیں انسان کتنا کمزور ہے ایک ٹھوکر لگے تو تما م بصارت ار بصیرت نا پید ہو جا تی ہے۔ انسان کو اللہ تبارک تعالیٰ نے اس دنیا میں وہ مراتب عطا ئ کیے ۔ جو دوسری مخلو قات کو نہیں دیئے گئے کتنے بڑے مراتب جب انسان کو پیدا کیا گیا تو فرشتوں سے کہا کہ اس کو سجدہ کرو یہ انسان کی اللہ کی طرف سے تما م نو ری اور نا ری مخلو قات میں بلند درجہ عطا کی گئی ہے۔ یہاں پر بس نہیں امت محمد یہ کو تمام سابقہ امتوں پر فضیلت بخشی ۔ یاں پر بس نہیں بنی ص کو اما م الانبیا ئ بنا یا قیات تک جتنی مخلوق آئے گی وہ آپ کی امت ہو گی، میرے نبی کو بصارت اور بصیرت کے ایسے خزانے عطا فرما ئے جو دوسرے نبیوں کو نہیں دیئے گئے یہاں پر بس نہیں یہ امت محمدیہ سب سے آخر میں آئی مگر سب سے پہلے جنت میں جا ئے گی، یہاں پر بس نہیں میرے نبی کو ایسے اوصاف و معجزات سے نوازہ کہ ذی روح عرضی ، ارض وسمائ کی دوسری مخلو ق آپ کی بصارت اور بصیرت سمجھنے سے قاصر ہے یہاں پر بس نہیں اللہ تعالیٰ نے فرمایا کہ جو انسان میرے بھیجے ہو ئے نبی کی بصارت اور بصیرت پر عمل کرے گا میں اُسے دنیا میں بھی سربلندی دونگا اور آخرت میں ہمیشہ ہمیشہ کی کا میا بی عطا کر و نگا۔قارئیں محترم اللہ تعالیٰ نے انسان کو کیسی کیسی نعمتیں عطا فرما ئی مگر انسان نا شکر ا ہو گیا ۔آج سر عام اللہ کے حکموںکو توڑا جا رہا ہے۔بنی کے طریقوں کو چھوڑا جا رہا ہے۔ میرے نبی کی ایک سنت ارض وسما سے قیمتی ہے۔ میرے نبی کی ایک ایک سنت میں حکمت و دا نا ئی ہے۔ مگر ہم نے سنتوں کی بے قدری کی، اپنی نا قص عقل کے گھوڑے دوڑا رہے ہیں۔ اپنی اصل بصارت اور بصیرت کو چھو ڑ کر مغرب کی گندگی عقل سے بصیرت و اپنا لیاہے، مذہب اسلام تما م مذاہب سے بلندو بالا ہے ۔ میری کتا ب قرآن مجید تمام کتا بوں سے افض ہے، میرا نبی تما م نبیوں سیافضل پھر کیوں دردر کی ٹھو کریں کھا رہے ہیں۔ آئیے قارئین محترم آئیے عہد کر تے کہ اپنی تمام بصارت و بصیرت حکام الہیہ کے مطابق گزاریں گے اور اللہ سے وعدہ کرتے ہیں اللہ تو بہ کر تے ہیں کہ اپنی آئندہ زندگی اسلام ارر سنت نبوی کے مطابق بسر کریں گے۔ اپنی بصارت اور بصیرت کو اللہ کے حکموں اور نبی کے طریقوںکے مطابق اپنا ئیں گے۔ آمین ثم آمین ﴿بشکریہ پریس لائن انٹرنیشنل﴾

یہ بھی پڑھیں  کراچی میں فائرنگ، نیوی اہلکار ہلاک

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker