تازہ ترینعلاقائی

حجرہ شاہ مقیم:عطائیوں نےحجرے کھول لئے،نان کوالیفائیڈ پریکٹشنرزکی بھرمار

حجرہ شاہ مقیم ( نامہ نگار) حجرہ شاہ مقیم میں عطائیوں نے حجرے کھول لئے،نان کوالیفائیڈ پریکٹشنرزکی بھرمار نے صحت مندوں کو بھی بیمار کر دیا،جگہ جگہ کھلی نام نہاد ڈاکٹروں کی دوکانیں محکمہ صحت کی آنکھوں سے اوجھل،وزیر اعلیٰ کا خواب صحت مند پنجاب حجرہ شاہ مقیم میں چکنا چور ہو گیا،عطائیوں کی منتھلی نے محکمہ صحت کے حکام کو دفتروں تک محدود کر دیا،میڈیکل سٹورز ہسپتال بن گئے شہریوں کی زندگیاں داؤ پر لگ گئیں،عطائیوں نے اپنے کلینک کے سامنے ایم بی بی ایس ڈاکٹروں کی تختیاں لگا دیں اور بعض نے ہیلتھ آفیسران کے نام آویزاں کر دیئے، دائیوں اور نرسوں نے زچہ وبچہ سنٹر وں کے نام پر حاملہ خواتین کے لئے مذبحہ خا نے قائم کر دیئے ،دوران زچگی اموات کی شرح بڑھ گئی،حجرہ شاہ مقیم ہسپتال میں ناکافی سہولیات نے شہریوں کارخ پرائیویٹ ہسپتالوں اور عطائی سنٹروں کی طرف موڑ دیا،شہریوں کا وزیر اعلیٰ پنجاب سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔تفصیلات کے مطابق حجرہ شاہ مقیم و گردونواح میں دو سو کے قریب دیہاتوں میں عطائی ڈاکٹروں کی بھرمار ہو چکی ہے ،گلی گلی کھلی ’’ڈاکٹروں اور حکیموں ‘‘ کی دوکانوں نے معاشرے کے صحت مند افراد کو بھی بیمار بنا دیا ہے ،معمولی نزلہ زکام یا بخار میں مبتلا سادہ لوح افراد کو سنگین بیماریوں کا جھانسہ دیکر انکا کئی ماہ علاج کیا جاتا ہے اور بعض اوقات غیر ضروری طور پر آپریشن کر کے زندگی بھر کیلئے مفلوج بنا دیا جا تا ہے،جعلی ٹیکے،گولیاں اور خالی کیپسول دینے کے ساتھ ساتھ پانی سے بھری ڈرپ لگا کر ہزاروں روپے کی دیہاڑی لگائی جاتی ہے ،نان کوالیفائیڈ پریکٹشنرز اور عطائی ڈاکٹروں نے جو کہ کسی ایم بی بی ایس ڈاکٹر کے پاس چند روز کام کرنے کے بعد اپنا کلینک کھولنے کی سند حاصل کر لیتے ہیں نے ایم بی بی ایس ڈاکٹروں کی تختیاں لگائی ہوئی ہیں جبکہ بعض نے محکمہ صحت کے افسران کے نام بھی آویزاں کر رکھے ہیں ،علاوہ ازیں کئی میڈیکل سٹور ز ہسپتال کا روپ دھار چکے ہیں جہاں سپیشلسٹ ڈاکٹروں کی ہفتہ وار آمد کے بورڈ لگا کر لوگوں کو متوجہ کیا جا تا ہے،لیبارٹری ٹیکنیشن کی تعلیم سے عاری لڑکوں نے کمپیوٹر رکھ کر بلڈ،شوگر،کینسر، ہیپا ٹائیٹس ،یورین ،ای سی جی و دیگراہم ٹیسٹ کرنا معمول بنالیا جس کے نتائج انسانی علاج معالجہ کیلئے انتہائی خطرناک ثابت ہوئے دوسری طرف انہی عطائیوں کے ہاتھوں خواتین کی عصمت دری بھی کوئی نئی بات نہیں جبکہ ممنوعہ ادویات کی فروخت اور انکے ہاتھوں نوجوان نسل کو نشہ کا عادی بنایاجارہا ہے ان حالات کے پیش نظرعلاقہ کے معتبر حلقے وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہبازشریف کے ان دعوؤں کی طرف دیکھ رہے ہیں جو وہ آئے روز کرتے دیکھا ئی دیتے ہیں ۔

یہ بھی پڑھیں  بھارتی سپریم کورٹ نے سنجے دت کو مزید 4 ہفتوں کی مہلت دے دی

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker