تازہ ترینعلاقائی

حجرہ شاہ مقیم: 25 کروڑ سے جاری ترقیاتی میگاپراجیکٹ بارش میں بہہ گیا

حجرہ شاہ مقیم ( نامہ نگار)حجرہ شاہ مقیم 25 کروڑ سے جاری ترقیاتی میگا پراجیکٹ پہلی ہی موسلادھار بارش میں بہہ گیا۔ مسجد ،گھروں اور کاروباری مراکز میں پانی داخل ، کروڑوں کا نقصان، نکاسی آب کیلئے نو تعمیر شدہ نالہ میں گڑھے پڑ گئے ،ٹف ٹائیل بیٹھ گئی ،مقامی ممبر صوبائی اسمبلی رضاعلی گیلانی کے زیر نگرانی منصوبہ سے متاثر ہ شہری سراپا احتجاج ۔تفصیلات کے مطابق صوبائی حکومت کی 25 کروڑ کی گرانٹ سے حجرہ شاہ مقیم کو ماڈل سٹی بنانے کے منصوبہ پر کام جاری ہے جسکی نگرانی مقامی ممبر صوبائی اسمبلی سید رضاعلی گیلانی کر رہے ہیں جنکی ہدایات پر شہر میں ناجائز تجاوزات گرائی گئیں جنھیں شہر یوں نے غیر منصفانہ قرار دیدیا اور شہریوں نے اعلیٰ عدالتوں سے سٹے آرڈر حاصل کر لئے، دوسری طرف گزشتہ شب بھر جاری رہنے والی پہلی موسلا دھار بارش نے 25 کروڑ کے منصوبہ میں لئے گئے کمیشن اور اس میں استعمال ہونیوالے ناقص میٹر یل کا پول کھول دیا سٹرکوں پر لگائی گئی ٹف ٹائیل جگہ جگہ سے بیٹھ گئی اور نکاسی آب کیلئے دونوں اطراف تعمیر شدہ نالا ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہوگیا جبکہ بارش کا پانی مسجدوں ،گھروں اور کاروباری مراکز میں داخل ہوجانے سے عمارتوں کو شدید نقصاں پہنچااور شہر ی مقامی ایم پی اے کو کمیشن مافیا قرار دیتے ہوئے شدید الفاظ میں انکی اور انکے حواریوں کی مذمت کرتے رہے اس سلسلہ میں متاثرین نے حجرہ پر یس کلب میں پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ 25 کروڑ کے تر قیاتی منصوبہ اور انکروچمنٹ کی آڑ میں سیاسی مخالفین کی قیمتی جائید ادوں کو نشانہ بنایا گیا اور بڑے پیمانے پر کمیشن حاصل کرکے ناقص منصوبہ پر جزوی عمل کروایا گیا جو کہ محض ایک ہی با رش کی نذر ہوگیا، متاثرین نے چیف جسٹس آف پاکستان سے از خود نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔واضع رہے کہ اس میگا پر وجیکٹ میں کریشن کی خبر رکوانے کی خاطر محکمہ پبلک ہیلتھ افسران مقامی صحافیوں پر دباؤڈالتے رہے ۔

یہ بھی پڑھیں  صوابی: تخریب کاری کا ایک بڑا منصوبہ ناکام

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker