پاکستانتازہ ترین

حیدرآباد:13ماہ کی بچی کی تین سالہ بچے سے زبردستی شادی کرانے کی کوشش

hyderabadحیدرآباد(نامہ نگار) سندھ ہائیکورٹ سرکٹ بینچ حیدرآباد نے نواب شاہ کے رہائشی مسماۃ ریشماں اور اس کے شوہر نسیم احمد کی جانب سے ان کی 13ماہ کی بیٹی عائشہ کی تین سال کے لڑکے سے زبردستی شادی کرانے کی کوشش اور دھمکیاں دیئے جانے کے حوالے سے دائرکردہ آئینی درخواست پر 4فروری 2013ء کے جوابدہی کے نوٹس جاری کرکے ایس ایس پی سکھر ، ڈی ایس پی سکھر اے سیکشن، ایس ایچ او اے سیکشن سکھر ، ایس ایچ او ائیرپورٹ نواب شاہ اور شیخ برادری کے محمد مٹھل، غلام قادر اور بادل شیخ سے جواب طلب کرلیا، عدالت عالیہ میں مذکورہ افراد کوفریق بناتے ہوئے اشفاق لنجار ایڈوکیٹ کے توسط سے درخواست گزاروں نے اپنے موقف میں کہا تھا کہ ان کی چار سال قبل والدین کی مرضی سے شادی ہوئی تھی اور ان کی 13ماہ کی بیٹی عائشہ بے بی ہے، اب بچی کا نانا محمدمٹھل اپنے تین سالہ بھتیجے اسلم کے ساتھ بے بی عائشہ کا زبردستی نکاح کرانا چاہتا ہے، انکار کرنے پر شیخ برادری کے مذکورہ افراد ہراساں کررہے ہیں، جان سے مارنے کی دھمکیاں دے رہے ہیں، استدعا ہے کہ انکی معصوم بچی کا زبردستی نکاح کرانے والے مذکورہ افراد کیخلاف قانونی کارروائی کی جائے اور درخواست گزاروں کو تحفظ فراہم کیاجائے۔

یہ بھی پڑھیں  اذلان شاہ ہاکی ٹورنامنٹ:پاکستان اور نیوزی لینڈ کا میچ آج ہوگا

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker