پاکستانتازہ ترین

ملکی سلامتی کیخلاف کسی بات کی اجازت نہیں دی جائیگی، چیف جسٹس

iftikharاسلام آباد(بیورو رپورٹ) چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا ہے کہ ملکی سلامتی کے خلاف کسی بات کی اجازت نہیں دی جائے گی، ہمارا آئین اپنے لوگوں کا دفاع کرتا ہے۔ چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 3 رکنی بینچ نے ایبٹ آباد آپریشن کے دوران میڈیا کے کردار کے بارے میں سردار غازی کی درخواست کی سماعت کی۔ درخواست گزار کے وکیل راجا ارشاد نے کہا کہ وہ حسین حقانی کا ایبٹ آباد کمیشن میں دیا گیا بیان پڑھنا چاہتے ہیں، حسین حقانی کا کہنا تھا کہ وہ واشنگٹن سے لندن پہنچے تو انہیں واپس جانے کا حکم ملا، انہیں کہا گیا کہ وہ اسامہ بن لادن کی پاکستان موجودگی پر حکومت پاکستان، فوج اورانٹیلی جنس اداروں کا دفاع کریں۔ چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری کا کہنا تھا کہ آپ عدالت کو کس طرف لے کر جانا چاہتے ہیں اور ملکی دفاع کے پیچھے کیوں پڑے ہوئے ہیں، آپ کو پتہ ہے کہ اس کے کیا نتائج ہوں گے، بہتر تھا کہ جو معاملہ ختم ہو چکا تھا اسے نہ اٹھاتے، ہمیں نہیں پتہ کہ یہ پٹیشن کن مقاصد کیلئے ہے۔

یہ بھی پڑھیں  بھارت کوسبق سیکھانا پڑے گا!

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker