پاکستانتازہ ترین

عمران اور جاوید ہاشمی جیتی گئی نشستیں چھوڑنے پر تذبذب کا شکار

imran and hashmiاسلام آباد(بیورو رپورٹ)چیئرمین تحریک انصاف عمران خان اور صدر تحریک انصاف جاوید ہاشمی جیتی گئی نشستیں چھوڑنے پر تذبذب کا شکار ، پارٹی رہنماؤں سے مشاورت جاری،راولپنڈی اسلام آباد کی نشستیں چھوڑ دیں تو ن لیگ کیلئے میدان خالی رہ جائیگا، آبائی نشستیں چھوڑنے کی صورت میں سخت تنقید کا سامنا کرنا پڑیگا، پی ٹی آئی قیادت منجھدار میں پھنس گئی۔ ذرائع کے مطابق چیئرمین تحریک انصاف عمران خان اور صدر مخدوم جاوید د ہاشمی کو ایک نشست کا انتخاب کرنا مشکل ہوگیا کیونکہ چیئرمین تحریک انصاف نے عام انتخابات میں قومی اسمبلی کی 3 نشستوں سے کامیابی حاصل کی ۔ انہوں نے راولپنڈی کے حلقہ این اے 56 سے مسلم لیگ ن کے امیدوار حنیف عباسی سے ان کی نشست چھینی جبکہ پشاور ون سے حاجی غلام احمد بلور کو ان کے ہوم گراؤنڈ پر کلین بولڈ کیا اسی طرح عمران خان اپنے آبائی حلقہ سے بھی واضح اکثریت سے جیتے جہاں انہوں نے 60330 ووٹ حاصل کئے جبکہ ان کا مدمقابل ن لیگی امیدوار عبیداللہ شادی خیل صرف 17672 ووٹ حاصل کرسکے۔ الیکشن کمیشن قواعد کے مطابق ایک سے زائد نشستیں جیتنے والے امیدوار کو 3دن میں فیصلہ کرنا ہے کہ وہ کوئی بھی ایک نشست کا فیصلہ کرکے دیگر نشستوں سے مستعفی ہوگا۔ تحریک انصاف چیئرمین کو ڈر ہے کہ اگر انہوں نے راولپنڈی کی نشست کو چھوڑ دیا تو مسلم لیگ ن کامیابی حاصل کرلے گی اور دوسری جانب پشاور 1 کی نشست بلور خان کی آبائی نشست تھی جس کو چھوڑنے کے بعد اے این پی اپنی پوزیشن کو مستحکم کرنے میں کامیاب ہوجائیگی جبکہ حلقہ این اے 71 میانوالی چیئرمین تحریک انصاف کا آبائی حلقہ ہے جسے وہ کھونا نہیں چاہتے اگر انہوں نے آبائی حلقہ کو چھوڑ دیا تو ان کے سیاسی مخالفین پراپیگنڈہ شروع کردینگے کہ چیئرمین تحریک انصاف کواکثریت ملتے ہی اپنے گاؤں کو بھول گئے ہیں کچھ اسی طر ح کی صورتحال تحریک انصاف کے صدر جاوید ہاشمی کو بھی درپیش ہے جنہوں نے وفاقی دارالحکومت کے حلقہ این اے 48 سے مسلم لیگ ن کے امیدوار انجم عقیل خان کو شکست دی جبکہ اپنے آبائی حلقہ ملتان این اے 149 میں بھی انہوں نے کامیابی کے جھنڈے گاڑھے ۔ جاوید ہاشمی کو خدشہ ہے کہ اگرانہوں نے اسلام آباد کی نشست سے استعفیٰ دیدیا تو مسلم لیگ ن کی پوزیشن بہتر ہوجائیگی اور اس کی قومی اسمبلی کی نشست میں اضافہ ہوسکتاہے جبکہ آبائی نشست چھوڑنے کی صورت میں انہیں بھی سخت تنقید کا سامنا کرنا پڑسکتاہے۔ ایسی صورتحال میں چیئرمین تحریک انصاف عمران خان اور صدر جاوید ہاشمی کیلئے فیصلہ کرنا مشکل ہوگیا اس کے حوالے سے ذرائع نے ’’آن لائن‘‘ کو بتایاکہ اہم پارٹی رہنماؤں کی مشاورت جاری ہے اور جلد ہی فیصلہ کرلیا جائیگا کہ کون سی نشستوں سے دستبردار ہونا ہے۔

یہ بھی پڑھیں  عمران خان کو پارٹی کا راولپنڈی کی نشست نہ چھوڑنے کا مشورہ

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker