پاکستانتازہ ترین

پاکستان کی تاریخ میں یہ سب سے زیادہ اندھیرے والا دورہے،عمران خان

کوئٹہ ﴿بیورو رپورٹ﴾ پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے بلوچستان میں ماورائے آئین و قانون گرفتاریوں کو باعث شرم عمل قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ بلوچستان کو یہ احساس دلانے آئے ہیں کہ یہاں جو ظلم و جبر ہورہا ہے اس پر پورے ملک کو تشویش لاحق ہے کوئٹہ پہنچنے کے بعد مقامی ہوٹل میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بلوچستان کے ساتھ ظلم و زیادتی ہوئی ہے لیکن ملک کی کوئی بھی سیاسی جماعت بلوچستان میں آکر جلسہ کرنے کو تیار نہیں سب گھبراتی ہیں یہ چیلنج ہم نے قبول کیا بلوچستان کے لوگوں تک پہنچنا ضروری ہے اور یہاں اہل بلوچستان کو یہ باور کرانے آئے ہیں کہ جو کچھ ان کے ساتھ ہورہا ہے اس پر ہر محب وطن پاکستانی کو فکر لاحق ہے یہاں لوگوں کو ماورائے آئین و قانون گرفتار و لاپتہ کردیا جاتا ہے ان کے لواحقین کو علم نہیں ہوتا ہے کہ وہ کہاں اور کس حال میں ہیں میں سمجھتا ہوں یہ ایک شرمناک عمل ہے تحریک انصاف کے اقتدار میں آنے کے بعد کسی کو بھی ماورائے آئین و قانون گرفتار و لاپتہ کرنے کی اجازت نہیں ہوگی ہم نے سب سے پہلی بار 2003ئ میں لوگوں کو ماورائے آئین و قانون گرفتار و لاپتہ کرنے کی مذمت کرتے ہوئے پارلیمنٹ کے باہر احتجاج کیا اس طرح کے عمل میں جو کوئی بھی ملوث ہو ہم اس کی شدید مذمت کرتے ہیں چیف جسٹس کی جانب سے سماعت کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ چیف جسٹس تواپنی طرف سے کوشش کرسکتے ہیں لیکن انتظامیہ تو حکومت کے پاس ہے صورتحال سب کے سامنے ہے وزیر اعظم تک عدلیہ کے احکامات نہیں مانتے کرپشن لوٹ کھسوٹ کے بڑے بڑے مقدمات ہیں کوئی کارروائی کرنے نہیں دیتے انتظامیہ کے ایماندار افسران کو تبدیل کردیتے ہیں یا گھر بھیج دیتے ہیں اپنے منظور نظر افسران کو ترقی دی جاتی ہے پاکستان کی تاریخ میںیہ سب سے زیادہ اندھیرے والا دور ہے جس میں قانون کی بالادستی نام کی کوئی شے اپنا وجود نہیں رکھتی طاقت ور کیلئے الگ قانون ہے اور غریب آدمی کیلئے الگ قانون ہے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ اصل میں اے پی ڈی ایم کا جو بائیکاٹ ہوا تھا مسلم لیگ ﴿ن﴾ اگر اس کا مکمل بائیکاٹ کرلیتی تو یہ الیکشن مکمل طور پر ناکام ہوجاتے کیونکہ بلوچستان کے قوم پرستوں نے بائیکاٹ کرتے ہوئے انتخابات میں حصہ نہیں لیا تھا اس وقت جو اسمبلی ہے اور اس میں جو نمائندے بیٹھے ہیں وہ بلوچستان کے عوام کے منتخب نمائندے نہیں اس لئے اس کو عوام کا اعتماد حاصل نہیں نہ ہی عوام میں اس کی کوئی ساکھ ہے یہی وجہ ہے کہ موجودہ اسمبلی بلوچستان کے عوام کے مسائل حل کرنے میں کامیاب نہیں ہوسکی لیکن ہم بلوچستان کے ساتھ ہونے والی زیادتیوں نا انصافیوں محرومیوں کا ازالہ کرتے ہوئے بلوچستان کے ساتھ انصاف کریں گے جس سے آج تک اس کو محروم رکھا گیا ہے

یہ بھی پڑھیں  ٹیکسلا: عوامی مینڈیٹ کے تحفظ کے لئے ہر قانونی چار جوئی کریں گے،صدیق خان

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker