پاکستانتازہ ترین

نوازشریف کیخلاف عمران خان پھرسپریم کورٹ پہنچ گئے

اسلام آباد(بیورو رپورٹ) پاکستان تحریک انصاف نے بھی انتخابی اصلاحات ایکٹ کو سپریم کورٹ میں چیلنج کردیا۔ عمران خان کہتے ہیں الیکشن کمیشن کو ٹربیونل کا درجہ نہیں دیا جاسکتا ۔ پی ٹی آئی نے پاناما کیس میں نااہل قرارپانے والے سابق وزیراعظم نواز کو دوبارہ پارٹی صدرمنتخب کرنے کی راہ ہموارکرنے والے ایکٹ کو سپریم کورٹ میں چیلنج کردیا۔ عمران خان کی جانب سے بابراعوان نےدرخواست دائرکی۔ درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ الیکشن ایکٹ کی ترامیم آئین سے متصادم ہیں۔ درخواست میں کہا گیا ہے کہ عوامی عہدے کیلئے نااہل شخص پارٹی سربراہ نہیں بن سکتا۔ عمران خان نے اپنی درخواست میں انتخابی اصلاحات ایکٹ 2017 کی دفعہ 9, 10 اور 203 کو کالعدم قرار دینے کی استدعا کر دی۔ بابر اعوان کے ذریعے دائر درخواست میں چیئرمین پی ٹی آئی نے مؤقف اختیار کیا ہایکٹ کی شق 9 آئین کے آرٹیکل 225 جبکہ شق 10 آئین کے آرٹیکل 204 اور275 کے خلاف ہے۔الیکشن کمیشن ریگولیٹری ادارہ ہے اُسے عدالت قرار نہیں دیا جا سکتا۔۔۔ عوامی مفاد کے آرٹیکل 184/3کے تحت دائر درخواست میں مزید کہا گیا ہے کہ بطور رکن اسمبلی نااہل ہونے والا شخص پارٹی عہدہ نہیں سنبھال سکتا۔۔پانامہ فیصلے تحت نواز اسمبلی رکنیت اور پارٹی صدارت سے دونوں فارغ ہوئے مگر الیکشن ایکٹ میں خصوصی ترامیم کر کے نواز شریف کو دوبارہ پارٹی صدر بنا دیا گیا۔ عمران خان نے اپنی درخواست میں استدعا کی کہ الیکشن ایکٹ کی ترامیم آئین سے متصادم ہیں لہذا کالعدم قرار دی جائیں ۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker