پاکستانتازہ ترین

کمیشن نہ بنا تو 18جنوری کو لائحہ عمل کا اعلان کریں گے، عمران خان

اسلام آباد(بیورو رپورٹ)تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے کہاکہ اٹھارہ جنوری سے پہلےعدالتی کمیشن سے متعلق کوئی حتمی بات نہ کی تو اسلام آباد کے ڈی چوک پرآئندہ کے لائحہ عمل کا اعلان کیا جائے گا۔ پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے اسلام آباد میں اپنی رسائش گاہ بنی گالا میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ سانحہ پشاور کے بعد دھرنا اٹھانے کا خود فیصلہ کیا کوئی ڈکٹیشن نہیں لی ،اس وقت پوری قوم کو متحد ہونے کی ضرورت ہے، سانحہ پشاور کے بعد حکومت کو سپورٹ کرنے کا فیصلہ کیا ہے، پاکستان دہشتگردی سے سب سے زیادہ متاثر ہوا۔ فوجی عدالتوں کے حوالے سے ان کا کہنا تھا ہم نے دوسال کے لیے کڑوی گولی کھانے کی حامی بھری ہے کیونکہ ہم دہشت گردی کے خلاف حکومت کی کوشش میں رکاوٹ نہیں بننا چاہتے ۔عمران خان کا کہنا تھا ہم اس وقت تک قومی اسمبلی میں پیش نہیں ہوں گےجب تک جوڈیشل کمیشن نہیں بن جاتا ۔ ان کا کہنا تھا حکومت مزاکرات کے لیے سنجیدہ نہیں ، ہم نے امید رکھی تھی حکومت آگے بڑھے گی ،حکومت نے فراڈ نہیں کیا تو جوڈیشل کمیشن بنانے میں کیا مسئلہ ہے، پہلے سے شک تھا حکومت بااختیار جوڈیشل کمیشن نہیں بنانا چاہتی ۔ حکومت کا اٹھارہ جنوری تک کا وقت دیا ہے امید ہے امید تھی کہ حکومت جوڈیشنل کمیٹی بنادی گی، ہم جمہوریت پر یقین رکھتے ہیں، کیونکہ مضبوط جمہوریت پاکستان کے بہترمستقبل کے لیے ضروری ہے ۔ شادی کے حوالے سے عمران خان کا کہنا تھا شادی کوئی جرم نہیں سنت رسول ہے ، انشاءاللہ اسی ہفتے آپ کو خوش خبری سناؤں گا۔ میں نے دس سال تک شادی کا نہیں سوچا بچوں پر اثر پڑتا ہے، شادی سے متعلق اپنے بچوں کو اعتماد میں لے لیا ہے، بچوں سے مشاورت کے بغیر شادی کا فیصلہ نہیں کرسکتا۔

یہ بھی پڑھیں  پاکستان تحریک انصاف کا کے پی علاوہ تمام اسمبلیوں سے استعفیٰ کا فیصلہ

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker