پاکستان

اسلام آباد: وزیراعظم گیلانی سے حسین حقانی کی الوداعی ملاقات

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) سپریم کورٹ آف پاکستان کی جانب سے بیرون ملک سفر کی اجازت ملنے کے بعد سابق سفیر حسین حقانی نے وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی سے الوداعی ملاقات کی ہے۔ میڈیا رپوٹس کے مطابق ملاقات میں میمو کیس سے متعلق اہم امور پر تبادلہ خیال کیا گیا، اس موقع پر حسین حقانی نے  سید یوسف رضا گیلانی کی جانب سے مہمان نوازی پر ان کا شکریہ ادا کیا ۔ وزیراعظم سے بات چیت میں حسین حقانی کا کہنا تھا کہ وہ کچھ عرصے کے لیے ملک سے باہر جارہے ہیں۔ ذرائع کے مطابق امریکا میں پاکستان کے سابق سفیر حسین حقانی کے آج رات امریکا روانہ ہونے کا امکان ہے،ان کی اہلیہ فرح ناز اصفہانی کا کہنا ہے کہ سپریم کورٹ کی جانب سے بیرون ملک سفر کی اجازت خوش آئند ہے۔ ذرائع کے مطابق حسین حقانی اسلام آباد سے براستہ ابوظہبی امریکا روانہ ہوسکتے ہیں۔ حسین حقانی نے اسلام آباد میں امریکی سفارتخانے کے قائم مقام ڈپٹی چیف مشن جوناتھن ٹروٹ سے وزیر اعظم ہاؤس میں ملاقات بھی کی۔ دوسری طرف امریکا میں مقیم حسین حقانی کی اہلیہ فرح ناز اصفہانی نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر پیغام میں اللہ تعالی کا شکر ادا کرتے ہوئے کہا کہ ان کے شوہر میمو معاملے میں بری الذمہ ہونے کے لیے پاکستان گئے۔ انہوں نے  پابندی کے خاتمے کا خیر مقدم کیا ہے۔ ادھر چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری نے میمو کمیشن نے دوران سماعت بتایا کہ منصور اعجاز نے 2دن پہلے مجھے خط لکھا ہے جسے جائزہ لینےکے بعد سیل کردیا گیا ہے۔ چیف جسٹس نے بتایا کہ منصور اعجاز نے خط کو خفیہ رکھنے کو کہا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ خط میں چند معلومات فراہم کی گئی ہیں تاہم فراہم کردہ معلومات کتنی مستند اور سچی ہیں کچھ کہہ نہیں سکتے۔ انہوں نے کہا کہ خط کب تک خفیہ رکھنا ہے اس کے بارے میں کچھ نہیں کہہ سکتے۔ان کا کہنا تھا کہ وہ کمیشن کی تحقیقات پر اثر انداز ہونا نہیں چاہتے اور کمیشن مکمل طور پر تحقیقات کرنے کا مجاز ہے۔

یہ بھی پڑھیں  پشاور:قانون کی نظر میں غریب اور امیر سب برابر ہیں، چیف جسٹس آف پاکستان

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker