پاکستانتازہ ترین

راولپنڈی واقعہ حکومت کی انتظامی نااہلی ہے،حاجی عدیل

islamabadاسلام آباد (بیورو چیف) عوامی نیشنل پارٹی کے قائم مقام صدر سینیٹر حاجی عدیل نے کہا ہے کہ ریاست کی جانب سے فرقہ واریت کی حمایت اور دہشت گردوں کی سزاؤں پر عملدرآمد نہ ہونے کی وجہ سے مذہبی فرقہ واریت میں اضافہ ہوا، راولپنڈی واقعہ حکومت کی انتظامی نااہلی ہے اس کے پھیلاؤ کو صرف مجرموں کو سخت سے سخت سزا دے کر اور اس پر عملدرآمد کراکے ہی روکا جاسکتا ہے۔ مذہبی فرقہ واریت کی وجہ سے اعتدال ختم ہوگیا ہے اور لوگ چھوٹی چھوٹی باتوں پر بندوقیں نکال لیتے ہیں۔ اتوار کے روز پاک نیوز لائیو سے گفتگو کرتے ہوئے عوامی نیشنل پارٹی کے سینیئر رہنماء حاجی عدیل نے کہا کہ راولپنڈی واقعہ انتہائی افسوسناک ہے بدقسمتی سے لیاقت علی خان کے دور کے بعد فرقہ واریت کو ریاست نے قبول کیا اور ضیاء الحق نے اپنے غیر قانونی اور غیر آئینی آمرانہ حکومت کو مضبوط کرنے کیلئے فرقہ واریت کو ترویج دی اور سرپرستی بھی دی ایسے ہی واقعات سے دو غیر ممالک نے ملک میں مزہبی گروہ بنا دیئے اور ان کو مالی امداد دینا شروع کردی۔ ایسی تنظیمیں بنائیں جن میں نہ صرف دہشت گردی عناصر موجود تھے ضیاء الحق کے دور میں جہاد کے نام سے دنیا سے دہشت گردوں کو اکٹھا کیا انہیں ڈالر اور اسلحہ دیا ۔ تنظیمیں مضبوط ہوکر دہشت گرد جماعتیں بن گئیں۔ انہوں نے کہا کہ ملک کے قوانین کمزور ہیں عدالتوں کے فیصلوں پر عملدرآمد نہیں ہوتا دہشت گرد جیلوں میں ہیں مگر ان کی سزاؤں پر عملدرآمد نہیں ہورہا جس سے دہشت گردوں کی حوصلہ افزائی ہورہی ہے دہشت گردوں نے سمجھ لیا ہے کہ وہ جتنی مرضی دہشت گردی کرلیں مگر ان کی سزاؤں پر عملدرآمد نہیں ہوگا۔ جیسے ملک میں طالبانائزیشن آئی اور مذہبی گروپوں نے اس کی حمایت شروع کردی جس کا نتیجہ خرابی کی صورت میں نکلا۔ انہوں نے کہا کہ آج اس ملک میں جب مذہبی جلوس نکالے جاتے ہیں تو معاشرتی اور کاروباری زندگی معطل ہو کر رہ جاتی ہے۔ ملک میں فرقہ واریت کی وجہ سے ہی مختلف فرقوں کے لوگ فخر و شان و شوکت سے مذہبی جلوسوں کو بڑھاتے جارہے ہیں جلوسوں کی تعداد میں بہت زیادہ اضافہ ہوگیا ہے ان جلوسوں میں ایسے اقدامات ہوتے ہیں جو ہندوؤں اور غیر مسلموں کی تقریبات میں ہوتے ہیں ملک میں زبردست گروہ بندی پیدا ہوگئی ہے جس کی وجہ سے لوگ اعتدال کا راستہ بھول گئے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ الیکٹرانک میڈیا نے اس میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا اور مذہبی تقریبات کی نمائش کی۔ ملک میں اعتدال اور ہم آہنگی ختم ہونے کی وجہ سے آج معمولی معمولی باتوں پر بندوقیں تان لی جاتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ راولپنڈی واقعہ میں حکومت کی انتظامی نااہلی واضح ہے کیونکہ خدشات ہونے کے باوجود فوج ‘ ایف سی‘ پولیس سب کے باوجود یہ واقعہ ہوا حکومت مجرموں کو سخت سے سخت سزا دے اور اس پر عملدرآمد بھی کرے تو تب ہی ایسے انتشار سے بچا جاسکتا ہے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button