پاکستانتازہ ترین

میاں برادران کی جی ٹی روڈ کی سیاست اب نہیں چلے گی، جمشیددستی

ملتان ﴿بیورو رپورٹ﴾ پیپلز پارٹی کے رکن قومی اسمبلی جمشید دستی نے کہا ہے کہ مسلم لیگ ﴿ن﴾ کے سربراہ میاں نواز شریف اور ان کے بھائی وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف کی اب جی ٹی روڈ کی سیاست نہیں چلے گی اور ہماری پارٹی پنجاب اسمبلی کی جانب جنوبی پنجاب صوبہ بنانے کے لیے قرارداد کی مخالفت کی صورت میں بھی جنوبی پنجاب صوبہ بنا کر رہے گی ۔ یہ بات انہوں نے گزشتہ روز ملتان پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی انہوں نے کہا کہ اٹھارہویں ترمیم کی منظوری کے وقت مسلم لیگ ﴿ن﴾ سے ہماری پارٹی قیادت نے جنوبی پنجاب کو صوبہ بنانے بارے مذاکرات کئے تھے اور اس وقت مسلم لیگ ﴿ن﴾ والوں نے کہا تھا کہ ہم اس معاملہ کو بھی افہام وتفہیم سے حل کرلیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ﴿ن﴾ والوں کو چار سال تک
وزیراعظم گیلانی کے بیٹے کی کرپشن نظر نہیں آئی اور اب وزیراعظم گیلانی نے جنوبی پنجاب کو صوبہ بنانے کا اعلان کیا ہے تب وہ صدر آصف علی زرداری اور وزیراعظم گیلانی کیخلاف بیان بازی کررہے ہیں انہوں نے کہا کہ نواز شریف اور شہباز شریف اس علاقے میں قتل عام کرانے کی سازش کررہے ہیں اور اگر یہ صورتحال بنی تو پھر تخت لاہور میں بھی محفوظ نہیں رہے گا انہوں نے کہا کہ نواز شریف نے اٹھارہویں ترمیم میں تیسری مرتبہ وزیراعظم بننے کیلئے ہمارے ساتھ تعاون کیا جمشید دستی نے مزید کہا کہ پنجاب میں حکمرانوں نے کرپشن کے ریکارڈ توڑ دیئے ہیں اور انہوں نے اسحاق ڈار کے عزیز ڈاکٹر ماجد کو نواز کیلئے چھ ارب روپے کا ٹھیکہ دیا انہوں نے کہا کہ کھر ، لغاری اور کھوسے سب دلال ہیں اور میرے جیسا کارکن انتخابات میں ان کا مقابلہ کریگا ۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف اور شہباز شریف مظفر گڑھ آنے سے ڈرتے ہیں اور نہ انہیں علم ہے یہاں کے عوام انہیں ماریں گے انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت کی آشیر پباد سے کھوسوں نے چالیس ہزار ایکڑ ایریا قبضہ میں لے رکھا ہے انہوں نے کہا کہ نواز شریف ایک بزدل لیڈر ہے جو آمریت کے دو میں اپنے ساتھیوں کی فوج چھوڑ کر ملک سے بھاگ گیا تھا انہوں نے کہا کہ ہم تیرہ مئی کو مظفر گڑھ سے ملتان تک جنوبی پنجاب صوبہ بنانے کیلئے لانگ مارچ کریں گے اور یہ لانگ مارچ تخت لاہور والوں کیلئے پیغام ہے ۔۔

یہ بھی پڑھیں  اوکاڑہ :ڈکیتی یا دشمنی ؟ چونگی نمبر 6کے قریب رات کی تاریکی میں مارے جانے والے تاجر کے قتل کی اصل وجوہات سامنے نہ آ سکیں

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker