پاکستانتازہ ترین

نوازشریف بارے بیان پارٹی اور حلقہ انتخابات کے عوام کے دباؤ پر واپس لیتا ہوں‘ جاوید ہاشمی

javid hashmiملتان (بیورو رپورٹ) پاکستان تحریک انصاف کے صدر مخدوم جاوید ہاشمی نے کہا ہے کہ مسلم لیگ ن کے سربراہ میاں نواز شریف نے جو کابینہ بنائی ہے اس کے ہوتے ہوئے نواز شریف اپنی حکومت کے خاتمے کیلئے ہوا کا ایک جھونکا ہی کافی ہے یہ بات انہوں نے اتوار کی شام اپنی رہائش گاہ پر ایک ہنگامی پریس کانفرنس میں کہی انہوں نے کہا کہ میں نے بغاوت چھوڑ دی ہے اور میں قومی اسمبلی میں اپنا دیا ہوا بیان اپنی پارٹی اور اپنی فیملی اور اپنا حلقہ انتخاب ملتان اسلام آباد سمیت ملک بھر کے عوام کے دباؤ پر واپس لیتاہوں انہوں نے کہا کہ میں نواز شریف کا اب بھی احترام کرتا ہوں اور میں نے نواز شریف کو لیڈر سوچ سمجھ کر کہا تھا عمران خان ایک ویژنری شخص ہیں ۔ عمران خان نے سیاست میں ایک انقلاب برپا کیا ہے انہوں نے کہا کہ کل بھی پاکستان میں ڈرون داغا گیا ہے میں نے اپنی تقریر میں یہ سب باتیں کہی ہیں مگر اسلام آباد میں بیٹھے بعض میڈیا والوں نے میری تقریر پڑھی نہیں میں اب اپنی تقریر فریم میں لگوا کر ان کو پیش کروں گا۔ اسلام آباد میں بیٹھے میڈیا والے اینکرز اپنے سٹودیو کی کھڑکی کھول کر دیکھیں میں سیاستدان ہوں جمہوریت پر یقین رکھتا ہوں اور جمہوریت کیلئے کام کررہا ہوں میں میڈیا کا مشکور بھی ہوں جنہوں نے میری تقریر پر کالم بھی لکھے ہیں انہوں نے کہا کہ میں ہر ایک سے لڑ سکتا ہوں مگر اپنے حلقہ کے عوام سے نہیں لڑ سکتا پاکستان کے عوام کو ناراض نہیں کر سکتا میری تقریر پر میرے حلقہ اور پاکستان کے عوام نے اتفاق نہیں کیا اس لئے میں اپنا بیان واپس لینے کا اعلان کرتا ہوں اور ملتان اور اسلام آباد کے عوام کے سامنے سرتسلیم خم کرتا ہوں انہوں نے کہا کہ میں پرویز مشرف کو بھی مشرف صاحب کہا تھا حالانکہ انہوں نے مجھے اور میری بیٹی کو جیل میں ڈالا تھا انہوں نے کہا کہ مدینہ میں نواز شریف کے نواسے نے مجھ سے پوچھا تھا کہ آپ پرویز مشرف کو صاحب کیوں کہتے ہیں تو میں نے کہا کہ اپنے نانا سے پوچھو ۔ اس پر نواز شریف نے کہا تھا کہ مخدوم صاحب ٹھیک کہتے ہیں انہوں نے کہا کہ میرا آج بھی موقف ہے کہ پرویز مشرف کو آئین و قانون کے مطابق سزا ملنی چاہیے جاوید ہاشمی کو کسی عہدہ کا لالچ نہیں نواز شریف اور عمران خان مجھے کچھ نہیں دے سکتے انہوں نے کہا کہ میڈیا تمام سیاستدانوں کو ایک چھڑی سے نہ ہانکے اور احترام کے رشتوں کو برقرار رہنے دیں انہوں نے کہا کہ عرصہ سے کہہ رہے ہیں دھاندلی ہوئی ہے سونامی آرہی تھی ایم کیو ایم کے مرکز میں ہمارے کارکن نے چالیس ہزار ووٹ لئے نواز شریف کے مقابلے میں ہماری خاتون نے 55 ہزار ووٹ لئے مگر انتخابی نتائج تبدیل کردیئے گئے آج خیبر پختونخواہ میں سرائیکی زبان لازمی قرار دے دی گئی ہے انہوں نے کہا کہ ملک میں مزید صوبے بننے چاہئیں اور ملک کو زیادہ صوبوں میں تقسیم ہونا چاہیے یہ بات صحیح ہے کہ بلوچستان کا سب سے بڑا مسئلہ مسخ شدہ لاشیں ہیں اس بات کی نشاندہی میں نے پہلی تقریر میں کی تھی انہوں نے کہا کہ یہ بدقسمتی ہے کہ خارجہ پالیسی کے مالک ہم نہیں ہیں ہم نے وفاقی خارجہ پالیسی پر تنقید نہیں کر سکتے صوبہ کو اپنی خارجہ پالیسی پر نہیں چلا سکتے بلکہ ہمیں وفاق کی خارجہ پالیسی پر چلنا ہوگا انہوں نے کہا کہ بلوچستان میں اگر چار سو ووٹ لینے والا ایم پی اے اور سات سو ووٹ لینے والا ایم این اے بنکر وفاقی وزیر بن سکتا ہے تو اس پر ہمیں تعجب ہے ہم سمجھتے ہیں کہ دھاندلی ہوئی ہے انہوں نے کہا کہ نواز شریف کی کابینہ میں آٹھ وزیر لاہور پانچ گوجرانوالہ سے لئے گئے ہیں اس میں کوئی پشتون وزیر نہیں ہے لوڈ شیڈبنگ کے حوالے سے میرے حلقے کے عوام کو حکومت ٹارگٹ کررہی ہے اور میرے حلقے میں لوڈ شیڈنگ کے علاوہ تکنیکی مسائل زیادہ ہیں جس میں ٹرانسفارمر کی فراہمی کے باعث عوام کو پریشان کیا جارہا ہے انہوں نے کہ اکہ میں اپنے حلقہ کے عوام کیلئے باہر نکلوں گا پاکستان کے مسائل لوڈ شیڈنگ ‘ بے روزگاری ‘ مہنگائی ہے ان مسائل کو پارلیمنٹ میں اٹھائیں گے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ سپیکر قومی اسمبلی ایاز صادق عمران خان کے مقابلے میں دھاندلی کے ذریعے الیکشن جیتے ہین تاہم پی ٹی آئی چیئرمین ان سے حلف لیں گے۔

یہ بھی پڑھیں  میری سوچ الگ، عمران کی الگ،شاہ محمودکی کوئی سوچ نہیں: جاویدہاشمی

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker