تازہ ترینعلاقائی

جھنگ:سیلابی پانی میں جتنی شدت تھی اس سے زیادہ تیزی اور جذبہ حکومت پنجاب میں ہے، بلال یٰسین

جھنگ(ڈسٹرکٹ رپورٹر)صوبائی وزیر خوراک بلال یٰسین نے کہا ہے کہ سیلابی پانی میں جتنی شدت اور طغیانی تھی اس سے زیادہ تیزی اور جذبہ خدمت کے پنجاب حکومت اور مسلم لیگی قیادت سیلاب متاثرین کیلئے ریلیف کاروائیوں میں مصروفِ عمل ہے ۔وزیر اعلیٰ خود اُن کی کابینہ کے ممبران ، صوبائی سیکرٹری اور ضلعی انتظامیہ کے افسران سیلاب متاثرین کی مدداور ریلیف کیلئے فیلڈ میں کام کر رہے ہیں۔وہ گزشتہ روز سرکٹ ہاؤس جھنگ میں میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کر رہے تھے،اس موقع پر صوبائی وزیر ہاؤسنگ تنویر اسلم اعوان ،سیکرٹری پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ وسیم اجمل اور ڈی سی او راجہ خرم شہزاد بھی موجودتھے۔ صوبائی وزیر بلا ل یٰسین نے کہا کہ حکومت پنجاب عید سے قبل سیلاب سے متاثرہ ہر خاندان کو ابتدائی مالی مدد کے طورپر 25ہزار فی خاندان نقد رقم دینے کا فیصلہ کر چکی ہے تاکہ سیلاب متاثرین کی مشکلا ت میں کمی لائی جا سکے۔انہوں نے بتایا کہ تمام کابینہ کے ممبران اور انتظامی سیکرٹری ضلعی انتظامیہ کی مدد کیلئے 24گھنٹے فیلڈ میں موجود اور مصروف ہیں ۔ اس موقع پر صوبائی سیکرٹری وسیم اجمل نے بتایاکہ حالیہ سیلابی صورتحال کے دوران ریسکیو1122اور پاک آرمی کے جوانوں نے موٹر بوٹس ،کشتیوں اور ہیلی کاپٹروں کے ذریعے ایک ہفتہ کے دوران 32ہزار 262افراد کو سیلابی پانی سے نکال کر محفوظ مقامات اور ریلیف کیمپوں تک پہنچایا ،وسیم اجمل نے بتایا کہ اب تک 10ہزار سے زائد ٹینٹ متاثرین سیلاب کو فوری شیلٹر کیلئے فراہم کئے گئے ہیں جبکہ 20ہزار سے زائد خوراک کے تھیلے متاثرین سیلاب کو مہیا کئے گئے ہیں۔ڈی سی او راجہ خرم شہزاد نے صوبائی وزراء اور میڈیا کے نمائندوں کو بریف کرتے ہوئے بتایا کہ وزیر اعلیٰ پنجاب اور چیف سیکرٹری کی ہدایات کی روشنی میں متاثرین سیلاب کیلئے بہترین کھانا متاثرہ علاقوں میں ہی تیار کر وا کر تقسیم کیا جا رہا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ ٹینٹ اور خوراک کی تقسیم کو یقینی بنانے کیلئے چھ ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں ہر ٹیم روزانہ تین سے چا ریونین کونسل میں اپناکام مکمل کریگی۔بعد ازاں صوبائی وزیر خوراک بلال یٰسین چنڈ بھروانہ اور شاہ جیونہ کے علاقوں میں پہنچے جہاں انہوں نے سیلاب متاثرین سے انکے مسائل دریافت کئے اور ریلیف کیمپوں کا تفصیلی جائزہ لیا۔ انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ پنجاب فوڈ ڈیپارٹمنٹ کے تمام گوداموں گندم کے سٹاک سیلابی پانی سے محفوظ رہے۔ 

یہ بھی پڑھیں  آزاد کشمیر حکومت کا ’’ہتک عزت‘‘ کا متنازعہ قانون!

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker