پاکستانتازہ ترین

رمضان کے پہلے جمعہ کے موقع پرسکیورٹی کےانتہائی سخت انتظامات کئےگئے

اسلا م آباد/لاہور﴿بیورو چیف /نمائندہ خصوصی﴾ ملک بھر میں رمضان المبارک کے پہلے جمعتہ المبارک کے موقع پر سکیورٹی کو انتہائی سخت کرتے ہوئے تمام معروف مساجد، امام بارگاہوں، مزارات اور عبادت گاہوں کے چاروں اطراف سکیورٹی اہلکاروں کی اضافی نفری تعینات کی گئی۔ خصوصاً داتا دربار، بی بی پاک دامن، کربلا گامے شاہ، پر نماز جمعہ کی ادائیگی اور دربار پر حاضری دینے کے لئے آنے والے زائرین کو مکمل چیکنگ کے بعد اندر جانے کی اجازت دی گئی۔ پولیس نے بیرئر لگا کر واک تھروگیٹس کے علاوہ میٹل ڈیٹکٹر کا استعمال کیا۔ خواتین کے بیگز اور سامان کی بھی تلاشی لینے کے بعد داخل ہونے کی اجازت دی گئی۔ برلب سڑک مساجد کی ٹریفک کو یکطرفہ کرکے ایک جانب ٹینٹ لگا کر راستے کو بند کیا گیا۔ اور گاڑیاں پارک کرنے کیلئے مساجد سے کئی گز کے فاصلے پر اجازت دی گئی۔ کیٹل سٹی پولیس آفسیر اسلم ترین خان نے آن لائن سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سکیورٹی کے معاملے میں ہم کسی قسم کا رسک لینے کی پوزیشن میں نہیں ہیں۔ رمضان المبارک کے متبرک مہینے میں سحری و افطاری کے موقع پر مارکیٹوں اور بازاروں میں خصوصاً فروٹ اور پکوڑے سموسے کی شاپس پر لوگوں کا بے پناہ رش ہوتا ہے اپنے گردونواح سے بے خبر گھر پہنچنے کی جلدی میں ہوتے ہیں ایسے موقع پر ہر ممکنہ خدشات کے پیش نظر مارکیٹوں اور بازاروں میں خصوصی نفری تعینات کی گئی ہے۔ جبکہ مارکیٹوں میں لگے سی ٹی وی کیمروں کی سروس کو بھی بہتر بنانے کی کوشش کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ نماز مغرب، نماز تراویح اور نماز فجر کے اوقات میں معمول سے ہٹ کر نمازیوں کی تعداد میں غیر معمولی اضافہ کے تحت مساجد کے باہر اضافی نفری تعینات کی گئی ہے۔ اور مساجد کی کمیٹیوں سے علاقے کے ایس ایچ او کے میٹنگز کے ذریعے ہدایات کی ہیں کہ ون ان تینوں اوقات میں اور خصوصاً نماز جمعہ کے وقت پولیس اہلکاروں کے علاوہ علاقہ کے جوانوں کی فورس تعینات کریں جو مساجد میں آنے والے اجنیوں کی نقل و حرکت پر کڑی نگاہ رکھیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ مساجد کی انتظامیہ کو سختی سے ہدایت کی گئی ہے کہ امام اور خطیب حضرات اپنے زور خطابت میں دیگر مسالک کے خلاف گفتگو سے گریز کریں۔ کسی فرقہ کے خلاف خطاب یا تحریری مواد کی صورت میں ان کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ مساجد کی انتظامیہ کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ نماز کے اوقات میں مساجد کے دیگر تمام دروازے بند کر دیں صرف ایک دروازے کو آمدورفت کے لئے استعمال کیا جائے اور لائوڈ سپیکر بھی صرف اذان کے لئے استعمال کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ سکیورٹی کے حوالے سے فول پروف انتظامات کئے جانے کے باوجود خدا سے رحمت کے طلبگار ہیں۔

یہ بھی پڑھیں  آئی پی ایل کے سابق سربراہ للت مودی کے ناقابل ضمانت وارنٹ جاری

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker