تازہ ترینعلاقائی

کامونکے:تعلیمی ایمر جنسی نافذکر نے والوں کیلئے بڑا چیلنج

kamokeکامونکے(نامہ نگار) تعلیمی ایمر جنسی نافذکر نے والوں کیلئے بڑا چیلنج سرکاری اساتذہ اپنی تر قیا ں اور پرائیویٹ سکول اپنے ساکھ بچا نے کیلئے جماعت ہشتم کے بعد تعلیم میں کمزور اور فیل طلباء کو کلاسوں سے بھگا دینے کا انکشاف ، ایسے طلبا ء کا مستقبل پڑھے لکھے پنجاب پر سو الیہ نشان بن گیا ، وزیر اعلیٰ نو ٹس لیں متا ثرہ والدین کا مطالبہ با خبر ذرائع سے معلوم ہو ا ہے کہ سرکاری سکولوں بیشتر اسا تذہ اپنے پر وفیشنل کیر ئیر کو بچا نے کیلئے جماعت نہم میں فیل ہو نے والے طلبا کو تھریڈ کر کے یا اسے تعلیم میں مایو س کر کے اپنی کلاسو ں سے نکال دیتے ہیں تا کہ وہ جماعت دہم کے بہتر رزلٹ کے ساتھ تر قیاں حاصل ہو سکیں ، اور حکومت کے دباو سے بچے رہیں ، اس طر ح ایسے طلبا ء کا کیر ئیر ہمیشہ کیلئے تا ریکی میں ڈوب جا تا ہے ،مڈل سکو لو ں میں سے ہائی اسکولو ں میں آنے والے طلبا ء کو سرکاری سکولوں میں داخلہ اس کی لیا قت کے حساب سے خود ساختہ بہتر سیکشن میں دیا جا تا ہے نارمل پاس ہو نے والے طلبا ء داخلوں کیلئے سفا رشیں ڈھو نڈ رہے ہو تے ہیں، جبکہ آٹھو یں کلاس میں فیل ہو نے والوں کا مقدرسرخ لیکر کی نظر ہو جا تا ہے ، پڑھا لکھا پنجاب یا تعلیمی ایمر جنسی لگا نے والے ارباب اختیار کو آٹھو یں کلاس سے نہم کلاس تک سکول چھو ڑنے والے ہزاروں طلبا ء کا مستقبل خود غرضی کے نظر ہو رہا ہے ایک ٹیچر نے اس با ت کا انکشاف کر تے ہو ئے بتایا کہ کلاس نہم میں طلبا ء کی تعداد امتحان کے بعد دہم میں کم ہو جا تی ہے اس پر حکو مت پنجاب کو ضرور تحقیق کر نی چا ئیے ،طلبا ء کے ساتھ یہ گھناونا کھیل صرف سرکا ری سکو لو ں میں ہی نہیں بلکہ پر ائیو یٹ سکول بھی بر ابر شریک ہیں ، ایسے پر ائیویٹ سکول جماعت ہشتم تک طلباء سے تعلیم کے نام پر پہلی جماعت سے کلاس ہشتم کے امتحان تک بھا ری فیسوں بٹو رتے رہتے ہیں اور مڈل سیٹنڈرڈ کا داخلہ بھجو اتے وقت 70فیصد طلبا ء کو داخلہ لسٹ سے خارج کر دیتے ہیں جو کہ طلباء کے ساتھ ظلم ہے اور علم کی روشنی فروخت کر نے والوں کے تاریک پہلو کسی اربا ب اختیار کی چشم پو شی کی نظر ہو رہا ہے، جب اس سلسلہ میں ماہر تعلیم گو ر نمنٹ ہائر سکینڈری سکول کے سینئر ٹیچر سے پو چھا گیا تو انہوں نے اس کو افسو س ناک کہا جبکہ ماہر تعلیم محمد اسلام مغل نے کہا ہے کہ تعلیم کے نام کاروبار کیا جا رہا ہے ، اور صرف لائق طلباء پر محنت کر کے اپنے ادارے کا 100%رزلٹ کا لیبل لگانے کا جنون نظر انداز کئے جانے والے طلبا ء کے خوابوں کو روند کر حاصل کیا جارہا ہے، اس سلسلہ میں سماجی تنظیموں نے وزیر اعلیٰ پنجاب سے مطالبہ کیا ہے ڈی سی او اور ای ڈی او ایجو کیشن پر مشتمل کمیٹی بنا کر اس واقعات کی مکمل تحقیق کر کے اصلاح احوال کیا جائے

یہ بھی پڑھیں  عمران خان کا ریڈ زون کی طرف مارچ روانہ

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker