پاکستانتازہ ترین

کامرہ ائیر بیس پرحملہ:ا ایک اور زخمی سپاہی دم توڑ گیا

اٹک (نمائندہ خصوصی) منہاس ایئربیس کامرہ پر حملے کی تحقیقات جاری ہیں۔ حملے کا ایک اور زخمی سپاہی محمد اقبال دم توڑگیا جس کے بعد شہداء کی تعداد دو ہوگئی ہے۔ حساس اداروں کو تلاش ہے حملے کے مرکزی کردار کی۔ اس سلسلے میں ہلاک حملہ آوروں کے سامان سے مدد لی جارہی ہے۔ سیکورٹی فورسز سے جھڑپ کے دوران مارے گئے نو دہشت گردوں کی شناخت کیلئے ڈی این اے ٹیسٹ کرانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ اس سلسلے میں لاشیں حساس اداروں کے سپرد کردی گئی ہیں۔ ایئربیس حملے کے دو مقدمے تھانہ صدر اٹک میں درج کئے گئے ہیں۔ مقدمات میں دہشت گردی، اقدام قتل، دھماکہ خیز مواد کا استعمال اور سرکاری املاک کو نقصان پہنچانے کی دفعات شامل کی گئی ہیں۔ جمعرات کی رات دہشت گردوں کے حملے میں زخمی سپاہی محمد اقبال بھی دم توڑ گئے جس کے بعد شہیدوں کی تعداد دو ہوگئی ہے۔ شہید اقبال نے دہشت گردوں کا جوانمردی سے مقابلہ کرتے ہوئے حملہ ناکام بنانے میں اہم کردار ادا کیا تھا۔دوسری جانب کامرہ ایئر بیس حملے میں شہید ہونیوالے سپاہی محمد آصف کو فوجی اعزاز کے ساتھ آبائی علاقے میں سپردخاک کردیا گیا۔ سپاہی محمد آصف کامرہ ایئر بیس پر حملہ آور دہشت گردوں کا بہادری سے مقابلہ کرتے ہوئے جام شہادت نوش کر گئے تھے۔ شہید کو جہانیاں کے نواح میں آبائی گاوٴں میں مکمل فوجی اعزاز کے ساتھ سپرد خاک کر دیاگیا۔ اْن کی نمازجنازہ میں بریگیڈیئر ارشد، ایئر کمانڈر ارشد ملک ، دیگر فوجی افسران اور اہل علاقہ کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ اس موقع پر ہر آنکھ نم تھی۔ شہید کے عزیز و اقارب وطن عزیز کیلئے سپاہی محمد آصف کی قربانی پر نازاں ہیں۔ پاک فضائیہ کے سربراہ نے شہید آصف کے اہل خانہ کے لئے دس لاکھ روپے کا اعلان کیا ہے۔ شہید نے ایک سال پہلے ہی فوج میں شمولیت اختیار کی تھی۔ کامرہ ایئر بیس پر اْن کی پہلی پوسٹنگ تھی۔

یہ بھی پڑھیں  ڈاکٹروں کي ہڑتال گياريويں روزمیں داخل

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker