پاکستانتازہ ترین

امن فائونڈیشن ، ہارورڈ سائوتھ ایشیاInitiative او" (CERP) کا مشترکہ منصوبے کا اعلان

کراچی﴿نامہ نگار﴾ امن فائونڈیشن ، ہارورڈ سائوتھ ایشیاInitiative اور "سینٹر فار ایکونومک ریسرچ ان پاکستان” (CERP) نے پاکستان میں ایک مشترکہ منصوبے کا اعلان کیا ہے، جس کے ذریعے پاکستانی عوام کے لئے باکفایت اور معیاری تعلیمی سہولیات فراہم کی جائیں گی۔انسٹیٹیوٹ آف بزنس ایڈمنسٹریشن (IBA) کراچی میں منعقد ہ ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پروفیسر عاصم خواجہ نے ایک پروگرام کی تفصیلات پیش کیں، جس کا عنوان تھا ” تعلیمی شعبے میں سرمایہ کاری اور عوام کے لئے نجی اسکولوں کی سہولیات کا استحکام ” ۔ اس تقریب کی ایک نشست کے دوران ایک علمی مباحثے کا بھی اہتمام کیا، جس میں متعلقہ ترقیاتی اداروں کے ساتھ تعاون کوفروغ دینے کے لئے تجاویز پیش کی گئیں۔ ماہرین کے پینل میں؛ تعمیر مائکرو فنانس بینک کے پریذیڈنٹ اور چیف ایگزیکٹیوآفیسر- ندیم حسین ، CERP اور ہارورڈ سائوتھ ایشیا Initiative کے عہدیدار – پروفیسر عاصم خواجہ، سندھ ایجوکیشن فائونڈیشن کے عہدیدار – عزیز کابانی اور امن فائونڈیشن کے چیف ایگزیکٹیو آفیسر – احسن جمیل شامل تھے۔ اس علمی مباحثے کی میزبانی خدیجہ بختیار نے کی ، جن کا تعلق Teach for Pakistan نامی ترقیاتی ادارے سے تھا۔اس وسیع البنیاد تعلیمی پروگرام کے ذریعے چھوٹے نجی اسکولوں کو مالّی اور انتظامی معاونت فراہم کی جائے گی۔ پروگرام کے ابتدائی مرحلے میں 1000 اسکولوں میں زیر تعلیم 200,000 طلبائ کو بہتر تعلیمی سہولیات کی فراہمی کے لئے اقدامات کئے جائیں گے۔اسی طرح نوجوان طالبات میں کاروباری اور انتظامی صلاحیتیں اجاگر کرنے کے لئے بھی معاونت فراہم کی جائے گی۔ یہ منصوبہ LEAPS نامی ادارے کی ایک حالیہ تحقیق پر مبنی ہے، جس کے نتائج کے مطابق ؛ باکفایت نجی اسکولوں نے حکومتی تعلیمی نظام سے بہتر کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے۔ ان ترقیاتی ، تعلیمی اور تحقیقی سرگرمیوں کو مائکروفنانس کے ذریعے کامیاب بنانے کے لئے CERP ، تعمیر بینک اور امن فائونڈیشن جیسے نامور ادارے مشترکہ طور پر کام کریں گے ۔اس تقریب کے دوران امن فائونڈیشن کے چیف ایگزیکٹیو آفیسر، احسن جمیل نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ؛ امن فائونڈیشن کا عزم ہے کہ علمی استعداد پر مبنی معاشرہ تخلیق کیا جائے اور اس حوالے سے باہمی اشتراک کو فروغ دیا جائے۔ہمیں یقین ہے کہ ترقی حاصل کرنے کے لئے خواتین کی صلاحیتوں اور کارکردگی میں اضافہ کرنا انتہائی ضروری ہے۔ ہارورڈ سائوتھ ایشیا Initiative (SAI) کی ایسوسی ایٹ ڈائریکٹر ؛ مینا ہیویٹ اس تقریب میں ایک خصوصی مہمان کے طور پر شریک ہوئیں اور تعلیم کے حوالے سے پاکستان میں جاری SAI کے پروگراموں کی تفصیلات بیان کیں۔ انہوں نے اس خطّے میں آئندہ بھی مشترکہ طور پر ترقیاتی کاوشیں جاری رکھنے کے عزم کا اظہار کیا۔اس منصوبے میں اداروں کے درمیان مزید تعاون کو فروغ دینے کے بے شمار مواقع موجود ہیں، کیونکہ ہر معاون ادارہ اپنے شعبے میں خصوصی مہارت کا حامل ہے۔امن فائونڈیشن ایک مقامی فلاحی ادارہ ہے، جو پاکستان میں عوامی فلاح و بہبود کے لئے اہم ترقیاتی اقدامات کرنے میں مصروف ہے۔ تعلیمی شعبے میں بنیادی ڈھانچے کی ترقی اور نوجوانوں کی استعداد میں اضافہ اس ادارے کے مقاصد میں شامل ہیں۔#

یہ بھی پڑھیں  توہین رسالت کے قانون کوکمزورکرنے کی سازش ناقابل برداشت ہے:علامہ خادم حسین رضوی

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker