پاکستانتازہ ترین

انتظامی مشینری باغی ہوجائے تو عدالتیں کچھ نہیں کر سکتیں, جسٹس مشیر عالم

کراچی:(مانیٹرنگ ڈیسک)چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ جسٹس مشیر عالم نے کہا کہ ہے کہ بارہ مئی کو شہر میں جو کچھ ہوا اسکے گواہ ہیں اس روز کنٹینر لگا کر شہر کے راستے بند کر دئے گئے ھے۔ چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ قانون پر حکمرانی کرنے والی ذہنیت کا قلع قمع کرنا ہوگا۔سندہ ہائی کورٹ میں وکلا سے خطاب میں جسٹس مشیر عالم نے کہا کہ بارہ مئی کو بہت مشکلوں سے ہائی کورٹ پہنچے کراچی بار میں پھنسے وکلا کے لئے جب ایک مقتدر شخصیت سے رابطہ کیا تو انہوں نے کہا کہ ہائی تک وکلا نہیں انکی لاشیں آسکتی ہیں چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ بارہ مئی کو جمہوریت اور قانون کی بالادستی کو جرم بنا دیا گیا تھا۔چیف جسٹس نے کہا کہ انتظامی مشینری باغی ہو جائے تو عدالتیں کچھ نہیں کر سکتیں آئین اور قانون کی بادستی تسلیم نا کرنے والے تاریخ کے کوڑے دانوں میں غائب ہو جاتے ہیں۔ چیف جسٹس نے سوال کیا کہ جمہوریت کا کیا ثمر ملا بہت سے لوگ شاکی ہیں۔اجلاس کے دوران سندہ ہائی کورٹ بار کی جاب سے قرارداد منظور کی گئی جسمیں سابق صدر پرویز مشرف کو سانحہ بارہ مئی کا زمہ دار قرار دیا گیا اور انکے ٹرائل کا مطالبہ کیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں  ”مسافر خانے سے لنگر خانے تک“

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker